مسعوداظہر پر چین کے ویٹو سے بھڑکے راہل، کہا جن پنگ سے ڈرتے ہیں مودی، خاموش کیوں؟

Source: S.O. News Service | By Shahid Mukhtesar | Published on 14th March 2019, 11:39 PM | ملکی خبریں |

نئی دہلی، 14 مارچ(ایس او نیوز؍آئی این ایس انڈیا) چین کی جانب سے اقوام متحدہ کی سلامتی کونسل (یواین ایس سی) میں مسعود اظہر کوعاملی دہشت گرد قرار دینے کی تجویز پر ویٹو کئے جانے کے بعد ہندوستان میں سیاست تیز ہو گئی ہے۔ہندوستان کو جہاں جھٹکا لگا ہے تو وہیں ملک کی اہم اپوزیشن پارٹی کانگریس نے مودی حکومت پر نشانہ لگایا۔کانگریس صدر راہل گاندھی نے ٹویٹ کر لکھا کہ وزیر اعظم نریندر مودی چین کے صدر شی جن پنگ سے ڈرتے ہیں،جب بھی چین ہندوستان کے خلاف کوئی ایکشن لیتا ہے تو وزیر اعظم نریندر مودی کچھ نہیں بولتے ہیں۔کانگریس صدر نے اس ٹویٹ میں وزیر اعظم نریندر مودی کی چین کی پالیسی پر بھی طنز کسا اور تین پوائنٹ میں بیان کیا۔راہل نے لکھا کہ پی ایم گجرات میں شی جن پنگ کے ساتھ جھولا جھولے ہیں، دہلی میں جن پنگ کو گلے ملتے ہیں، چین میں ان کے سامنے جھک جاتے ہیں۔مسعود اظہر کو عالمی دہشت گرد قرار کرانے کی کوشش میں چین کی جانب سے پیشکش گرائے جانے کے بعد کانگریس نے کہا کہ وزیر اعظم نریندر مودی کی خارجہ پالیسی سفارتی آفات کا سلسلہ ہے۔وہیں شیوسینا کے ایم پی سنجے راوت کا کہنا ہے کہ ہم نے ہمیشہ کہا ہے کہ ہمارا پاکستان دشمن نہیں ہے بلکہ چین سب سے بڑا دشمن ہے۔
کانگریس نے مودی حکومت کے علاوہ اقوام متحدہ میں اس قواعد میں رکاوٹ ڈالنے کو لے کر چین اور پاکستان کی بھی تنقید کی۔کانگریس کے چیف ترجمان رندیپ سرجیوالا نے ٹویٹ کرتے ہوئے کہا کہ دہشت گردی کے خلاف عالمی جنگ میں یہ ایک المناک دن ہے۔انہوں نے آج پھر دہشت گردی کے خلاف جنگ کو چین پاک اتحاد نے صدمہ پہنچایا ہے۔

ایک نظر اس پر بھی

وی وی پیٹ مشین کے تعلق سے عدالت اعلیٰ نے الیکشن کمیشن سے مانگا جواب 

سپریم کورٹ نے آج الیکشن کمیشن کوہدایت دی کہ 28مارچ تک سیمپلس کی تعدا د میں اضافہ کرے بارے میں جواب داخل کیاجائے اور فی اسمبلی حلقہ وی وی پی اے ٹی مشینوں کی تعداد میں اضافہ کے امکانات پر اظہار خیال کیاجائے ۔ چیف جسٹس رنجن گوگوئی اور جسٹس دیپک مشرا پر مشتمل سپریم کورٹد کی بنچ نے ...

الیکشن جیتنے پر کانگریس کا اعلان ، غریب خاندان کو ملے گا سالانہ 72 ہزار روپئے 

ایک زبردست انتخابی تیقن دیتے ہوئے صدر کانگریس راہول گاندھی نے آج اعلان کیاکہ غریب ترین زمرہ سے تعلق رکھنے والوں کو فی کس 72,000روپئے سالانہ اقل ترین أجرت دی جائے گی بشرطیکہ ان کی پارٹی برسراقتدار آجائے ۔ نئی دہلی میں منعقد ہ ایک پریس کانفرنس میں یہ اعلان کرتے ہوئے کہاکہ 5کروڑ ...