مودی جی بہت کم وقت بچا ہے۔اب کام شروع کریں کرناٹک کے انتخابی دورے کے دوران راہل کا وزیراعظم پرحملہ۔ماضی پر تقریریں بند کرنے کا مشورہ

Source: S.O. News Service | By Shahid Mukhtesar | Published on 12th February 2018, 12:01 PM | ریاستی خبریں |

بنگلورو،11؍فروری(ایس او نیوز) کانگریس صدر راہل گاندھی نے اپنے کرناٹک کے دورے کے دوران آج یہاں وزیراعظم نریندرمودی پر سخت حملہ کرتے ہوئے ان سے کہا کہ ماضی کا راگ الاپنا چھوڑکرکام شروع کریں کیونکہ میعاد ختم ہونے والی ہے اوربہت کم وقت رہ گیا ہے ۔

جنا آشیرواد یاترے کے دوسرے دن شمالی کرناٹک کے اپنے دورے کے دوران راہل گاندھی نے عوامی اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے مودی سے کہاکہ انتخابات کے دوران آپ کو ملک کے لوگوں کو جواب دینا ہوگا کہ گزشتہ 5برسوں کے دوران آپ نے کیا کیا ہے ۔ انہوں نے کہاکہ 5سال مکمل ہونے والے ہیں ۔ مودی نے ابھی تک اپنا کھاتہ بھی نہیں کھولا ہے ۔ راہل گاندھی نے کہاکہ مودی اپنی کارکردگی پیش کرنے کے بجائے ماضی پر بیانات دے رہے ہیں اور کانگریس پر حملے کرنے میں مصروف ہیں ۔

انہوں نے مزید بتایا کہ روزگار کے مواقع فراہم کرنے کالا دھن واپس لانے اور معیشت کو بہتر بنانے پر توجہ دینے کے بجائے مودی کانگریس پر الزامات لگانے میں اپنا وقت ضائع کررہے ہیں ۔ انہوں نے کہاکہ ملک کے عوام نے مودی کو اس لئے وزیراعظم بنایا کہ وہ نوجوانوں اورکسانوں کو روزگار فراہم کریں گے۔ اسکول اوراسپتال قائم کریں گے ۔ راہل نے دعویٰ کیا کہ کانگریس جو کہتی ہے وہ کرکے دکھاتی ہے اوران کی پارٹی نے ہمیشہ مستقبل کو پیش نظر رکھ کر کام کیا ہے۔ کرپشن کے معاملہ میں بی جے پی پر حملہ کرتے ہوئے راہل نے کہاکہ گزشتہ 5سال کے دوران سدارامیا کی قیادت والی کانگریس حکومت میں ایک بھی گھپلہ نہیں ہوا۔ جبکہ بی جے پی نے بدعنوانی کے معاملہ میں عالمی ریکارڈ توڑ دیا ہے ۔

اے آئی سی سی صدر راہل گاندھی نے کہاکہ کرناٹک میں برسراقتدار رہتے ہوئے ریاست کو بدعنوانی اور رشوت خوری میں نمبر ایک بتانے والی بھارتیہ جنتاپارٹی (بی جے پی) کو اقتدار سے دور کرکے ریاست کو ہمہ جہت ترقیات کی سمت گامزن کرنے کے لئے سدارامیا کی قیادت میں کانگریس پارٹی کو دوبارہ برسراقتدار لانے کے لئے ریاستی عوام سے گزارش کی۔ حیدرآباد کرناٹک علاقے کے اپنے طوفانی دورہ کے دورے دن یلبرگی، کشتگی اور کوپل میں روڈ شو کے بعد کشتگی میں جم غفیر سے خطاب کرتے ہوئے راہل گاندھی نے کہاکہ بی جے پی لیڈرس کرناٹک کو رشوت خوری اوربدعنوانیوں میں ملک میں پہلا مقام دے رہے ہیں لیکن انہیں پتا ہونا چاہئے کہ کرناٹک میں بی جے پی کے اقتدار کے دوران اس وقت کے وزیراعلیٰ بی ایس ایڈی یورپا سمیت 11 وزراء نے رشوت خوری اوربدعنوانیوں میں ملوث پاکر استعفے پیش کئے تھے۔ راہل نے کہاکہ سابقہ بی جے پی حکومت رشوت خوری اور بدعنوانیوں میں ملوث پائی گئی تھی ۔لیکن کانگریس کے سدارامیا کی قیادت والی کرناٹک حکومت نے رشوت خوری اوربدعنوانیوں سے پاک حکومت کی ہے اورریاست کی مجموعی ترقی کو اولین ترجیح دی ہے ۔ راہل گاندھی نے صاف طورپر کہاکہ اگر ریاست کی مزید ترقی ہونی ہے تو وہ صرف کانگریس ہی سے ممکن ہے ۔انہوں نے ریاستی عوام سے گزارش کی کہ وہ آنے والے اسمبلی انتخابات میں دوبارہ کانگریس کو اقتدار پر لائیں ۔

اس موقع پر وزیراعلیٰ سدارامیا،کے سی وینوگوپال، پردیش کانگریس کے صدر ڈاکٹر جی پرمیشور، کانگریس سینئر لیڈر ملیکارجن کھرگے ،راجیہ سبھا رکن وسابق مرکزی وزیر ڈاکٹر کے رحمن خان ، بی کے ہری پرساد، ریاستی وزیر ڈی کے شیوکمار ، دنیش گنڈوراؤ، کے ایچ منی اپاکے علاوہ دیگر کانگریس لیڈرس بڑی تعداد میں موجود تھے ۔

ایک نظر اس پر بھی

بی جے پی کیخلاف کانگریس کا جاری کردہ ٹیپ جعلی، کرناٹک کانگریس رکن اسمبلی کابیان، کانگریس پریشان 

بی جے پی کے خلاف کانگریس کے ایک جاری کردہ ٹیپ سے کانگریس کی ٹکٹ پر جیت درج کرنے والے یلاپور کے رکن اسمبلی شیورام ہیبار نے پارٹی کی جانب سے جاری کردہ ٹیپ کو جعلی قرار دیاہے۔ اور اس بات کو غلط قرار دیا ہے کہ بی جے پی کی طرف سے انہیں رقم کی پیشکش کی گئی تھی اور وزارتی عہدہ دینے کا بھی ...

کرناٹک انتخابات:کانگریس کے ان لیڈروں نے بگاڑ دیا بی جے پی کا کھیل

کانگریس صدر راہل گاندھی کے پارٹی کے اندر نوجوانوں کی حوصلہ افزائی کرنے اور انہیں آگے بڑھانے کی پالیسی اپنانے کے باوجود کرناٹک میں جنتا دل (ایس) کے ساتھ مخلوط حکومت بنانے کے فارمولے کو انجام تک پہنچانے کی حکمت عملی میں پارٹی کے سینئر لیڈر ہی کام آئے۔