فیروز آباد میں دن دہاڑے اغوا;سہارنپوراورمتھرامیں بھی لاء اینڈآرڈربدحال

Source: S.O. News Service | Published on 19th May 2017, 11:30 PM | ملکی خبریں |

فیروزآباد19مئی(ایس او نیوز) وزیراعلیٰ یوگی آدتیہ ناتھ کے  اترپردیش میں قانون بہتر بنانے کے دعوے اور مجرموں کو سدھر جانے کی وارننگ کا کوئی اثر نظر نہیں آرہا ہے۔سہارنپور میں تشدد کے واقعات، متھرا میں  قتل کی واردات کے بعد اب فیروز آباد میں دن دہاڑے ڈاکٹرکا اغوا کئے جانے کی واردات پیش آئی ہے۔

مسلح بدمعاشوں نے یوپی کے بڑے معالج وزیر داخلہ راج ناتھ سنگھ کے قریبی دوست سنجے متل کا گن پوائنٹ پرجمعہ کو فیروز آباد سے اغوا کر لیا۔متھرا میں دو جویلرس کے ساتھ دن دہاڑے لوٹ مار اور قتل کے بعد پریکٹیشنر کے اغوا کی اس واقعہ نے یوپی کے  نظام کوبے نقاب کردیاہے۔حالت یہ ہو گئی ہے کہ یوپی کی یوگی حکومت اور پولیس کو قانون وانتظامات کے معاملے پراپوزیشن کے سوالوں کا جواب دیتے نہیں بن رہاہے۔ایف ایم گلاس انڈسٹری کے مالک سنجے متل فیروز آباد میں نگلا بھاؤ انڈسٹریل علاقے میں اپنی فیکٹری جارہے تھے۔اس دوران متل کی انوواکوپولیس کے بھیس میں دوموٹرسائیکل سواروں نے رکوایا ، کار رکوانے سے پہلے ان پولس نما اغوا کاروں نے سگنل کے دونوں طرف گاڑیوں کو روک دیا تھا، جیسے ہی متل کی کار رُکی، بائک پر سوار لوگوں نے پلک جھپکتے کار کے اندر گھس گئے، ایک شخص اگلی سیٹ پر دو دیگر پچھلی سیٹ پر بیٹھ گئے  اور بندوق کی نوک پر ڈرائیور کو آگرہ کی طرف  بڑھنے کا حکم دیا اور پوری کار کو ہی یرغمال بناکر اغواکر کےلے گئے۔

ذرائع نے بتایا کہ  واقعہ کے وقت 42سالہ سنجے متل دوپہر قریب 12:30 بجے  اپنی  فیکٹری جارہے تھے، جب دن دھاڑے ان کا اغوا کیا گیا تو روڈ پر گذرنے والوں نے پورا تماشہ اپنی انکھوں سے دیکھاجس میں سے کسی نے فوری طور پر پولس کو واقعے کی جانکاری دی۔ اطلاع ملتے ہی پولس حرکت میں آگئی ، اغوا کی کاروائی کو ناکام بنانے کے لئے فوری طور پر  اسپیشل ٹاسک فورس کو اُتارا گیا  اور شہر کے اہم ناکوں پر ناکہ بندی کرادی گئی،  جس کے نتیجے میں اغواکاروں کو زیادہ دور فرار ہونے کا موقع نہ مل سکا اور پولس  قریب ساڑھے چار گھنٹوں کی محنت سے سنجے متل کی کار کو روکنے میں کامیاب ہوگئی۔

خیال رہے کہ یہ واقعہ متھرا سانحہ کے صرف دودن بعد ہوا ہے۔  متھرا میں ڈکیتی کے  ایک واقعہ میں دو جویلرس کا قتل کر دیا گیا تھا۔بتا دیں کہ بیس سال پہلے سنجے متل کے والد ایس پی متل کا بھی اغوا ہوا تھا اور پھر ان کو  چھڑانے کے لئے خاندان کو ایک کروڑکاتاوان دیناپڑاتھا۔

دو جویلرس کے قتل پر جویلرس کمیونٹی میں واقعہ کو لے کر سخت ناراضگی پائی جارہی ہے اور کاروباری کمیونٹی نے واقعہ کو لے کر بڑے سطح پر اپنا احتجاج درج  کیا ہے۔متھرا اسکینڈل کی مخالفت میں تقریباََ 7000سے زیادہ جویلرس نے جمعہ کو اپنی دکانیں بند رکھتے ہوئے اپنے غصے کا اظہار کیا ہے۔ اس بات کا بھی خیال رہے کہ  دو جویلرس کی موت کے بعد یوگی حکومت نے چارپولیس والوں کومعطل کر دیا تھا۔
 

ایک نظر اس پر بھی

لو جہاد ملک کے لئے بڑا خطرہ: وی ایچ پی 

اپنے متانازعہ بیان سے مشہور وشو ہندو پریشد نے آج پھر لوجہاد کا شوشہ چھوڑتے ہوئے کہا کہ لو جہاد ملک کی سلامتی کے سامنے بڑا خطرہ ہے اور سیکولر برادری کو جہادیوں کے اس غلط کارروائیوں پر پردہ نہیں ڈالنا چاہئے۔

سی ایم شیوراج کا اعلان، مدھیہ پردیش میں نہیں دکھائی جائے گی ’پدماوتی‘فلم

سنجے لیلا بھنسالی کی فلم ’پدماوتی‘ کی ریلیز ڈیٹ اگرچہ ٹل گئی ہو لیکن اس فلم کے ساتھ تنازعہ ختم ہونے کا نام نہیں لے رہاہے اب وزیر اعلیٰ شیوراج سنگھ نے اعلان کیا ہے کہ مدھیہ پردیش میں ’پدماوتی‘فلم نہیں دکھائی جائے گی۔

بی جے پی سورج پال امّوکو بھیجا وجہ بتاؤ نوٹس، دیپکا اور بھنسالی کا سر قلم کرنے پر کیا تھا 10کروڑ کا اعلان

بی جے پی نے ہریانہ بی جے پی کے چیف میڈیا کوآرڈنیٹر کنور سورج پال امو کو وجہ بتاو نوٹس جاری کیا ہے۔امّو نے دیپکا پادکون اور سنجے لیلا بھنسالی کا سر کاٹ کر لانے والے کو دس کروڑ کا انعام دینے کا اعلان کیا تھا۔