سرکاری ملازمین کی تنخواہوں پر نظر ثانی جنوری کے بعد: سدرامیا

Source: S.O. News Service | By Shahid Mukhtesar | Published on 15th November 2017, 12:09 AM | ریاستی خبریں |

بنگلورو،14؍نومبر(ایس اونیوز؍عبدالحلیم منصور) ریاستی کے سرکاری ملازمین کی تنخواہوں پر نظر ثانی کرنے کیلئے حکومت نے چھٹواں پے کمیشن تشکیل دیا ہے۔کمیشن کی رپورٹ موصول ہونے کے بعد حکومت ملازمین کی تنخواہوں پر نظر ثانی کا فیصلہ کرے گی۔یہ اعلان آج وزیر اعلیٰ سدر امیا نے ریاستی اسمبلی میں کیا۔ مرکزی حکومت اور ریاستی ملازمین کی تنخواہوں میں امتیاز کو دور کرنے کے مقصد کے تحت ہی حکومت نے وظیفہ یاب آئی اے ایس آفیسر سرینواس مورتی کی قیادت میں یکم جون 2017 کو چھٹواں پے کمیشن تشکیل دیاہے۔اس کمیشن نے رپورٹ پیش کرنے کیلئے 31جنوری تک کی مہلت طلب کی ہے، جسے منظور کرتے ہوئے کمیشن کی میعاد بڑھائی گئی ہے۔ وزیر اعلیٰ نے بات بی جے پی کے رکن دریودھن مہالنگپا کے سوال کے جواب میں بتائی۔ انہوں نے کہاکہ چھٹویں پے کمیشن کی رپورٹ پیش ہونے سے قبل ملازمین کوعبوری راحت رسانی کا کوئی منصوبہ حکومت کے سامنے نہیں ہے۔ پولیسوالوں کی تنخواہوں پر نظر ثانی کے متعلق سدرامیا نے کہاکہ اس کیلئے اعلیٰ افسران پر مشتمل کمیٹی قائم کی گئی تھی، اس کمیٹی نے اپنی رپورٹ حکومت کو پیش کردی ہے۔ اور اس کی سفارشات کے مطابق تنخواہوں میں اضافہ بھی ہوچکا ہے، پولیس والوں کوسالانہ 21سو روپیوں کی تنخواہ میں اضافہ منظور کیاگیاہ ے۔ گزشتہ 20 سال سے پولیس جوانوں کو ترقی نہیں دی گئی تھی۔ حکومت نے ہر بارہ سال میں ایک بار پولیس جوانوں کو ترقی دینے کا ضابطہ لاگو کیا ہے اس کے مطابق بارہ سال سے زیادہ کی مدت سے کام کرنے والے ہیڈکانسٹبلوں کواز خود اسسٹنٹ سب انسپکٹر کا درجہ مل جائے گا اور اسسٹنٹ سب انسپکٹرس سب انسپکٹرس بن جائیں گے۔ انہوں نے کہاکہ پولیس نظام کے تحت آرڈرلی کے رواج کو ختم کرنے کا حکم جاری کیاگیاہے، اس حکوم کی روسے کسی بھی اعلیٰ سرکاری آفیسر کے گھر پر کوئی پولیس جوان ملازم بن کر نہیں رہ سکتا۔ 

ایک نظر اس پر بھی

دیہی ترقیات اور پنچایت راج محکموں کے لیے ڈاٹا اینٹری آپریٹرس کے تقررات،کے لیے جاری کردہ نوٹیفیکیشن منسوخ کرنے سابق وزیر ویجناتھ پاٹل کامطالبہ 

دیہی ترقیات اور پپنچایت راج محکموں میں ریاست کرناٹک کے ہر ایک گرام پنچایت میں ایک ڈاٹا انینٹری آپریٹر کی جائیدادیں قائم کرکے اس پر تقررات کئے جارہے ہیں لیکن اس معاملہ میں علاقہ حید رآباد کرناٹک علاقہ کے امیدواروں کو تحفظات دینے کے ضمن میں کوئی واضح ہدایت نہیں دی گئی ہے ۔

مستقبل قریب میں حلقہ اسمبلی گلبرگی کے انتخابات،مسلمانان گلبرگہ کی دانش مندی کا امتحان

ممتازسماجی خدمت گزار اور سیاسی بزرگ شخصیت ڈاکٹر ایم ایچ بگدلی نے اپنے صحافتی بیان میں کہا ہے کہ شہر کرناٹک گلبرگہ محترم جناب الحاج قمرالاسلام صاحب کے سانحہ ارتحال کے بعد شہر یانِ گلبرگہ کے ہر کس وناکس کی زبان پر یہی تذکرہ ہے کہ قمرالاسلام کا سیاسی قاؤئم مقام کون ہوگا؟

ہبلی :مرکزی وزیر اننت کمارہیگڈے معافی مانگے اورعہدے سے استعفیٰ دیں : یوتھ کانگریس کا احتجاج

عوامی اجلاس میں ریاستی وزیر اعلیٰ سدرامیا کے خلاف توہین آمیز بیان دئیے مرکزی وزیر اننت کمار ہیگڈے کی مذمت میں ہبلی دھارواڑ یوتھ کانگریس کی جانب سے تحصیلدار دفتر کےسامنے احتجاج کیا گیا ۔