بان کی مون نے دہلی کی صحت سہولتوں کی تعریف کی

Source: S.O. News Service | By Shahid Mukhtesar | Published on 7th September 2018, 10:50 PM | ملکی خبریں |

نئی دہلی،07؍ ستمبر (ایس او نیوز؍آئی این ایس انڈیا) دہلی میں صحت کے شعبے میں ہو رہی انقلابی تبدیلی کو دیکھنے کے لئے جمعہ کو اقوام متحدہ کے سابق جنرل سکریٹری بان کی مون اور ناروے کی سابق وزیر اعظم گرو ہارلیم سمیت دنیا کے کئی بڑے لیڈر یہاں پہنچے ۔ دہلی کے وزیر اعلیٰ اروند کیجریوال اور وزیر صحت ستیندر جین نے غیر ملکی وفد کو پیرا گڑی میں واقع دہلی کے پہلے محلہ کلینک اور پولیکلینک کا دورہ کرایا۔ محلہ کلینک دیکھنے کے بعد یہاں صحافیوں سے گفتگو کے دوران بان کی مون نے کہا کہ وہ دنیا کے کئی بڑے ممالک کا دورہ کر چکے ہیں لیکن انہوں نے جو آج یہاں دیکھا وہ حقیقت میں انوکھا ہے ۔ انہوں نے کہا کہ صحت کے شعبے میں دہلی سرکار کا محلہ کلینک ارو پالیکلینک ایک بہتر اور منظم سہولت ہے ۔انہوں نے کہا کہ وزیر اعلیٰ اروندکیجریوال کے پاس ابتدائی صحت کی دیکھ بھال میں بہت اچھا نظریہ ہے ۔ میں اس کی تعریف کرتا ہوں۔گو ہارلیم برندلینڈ نے کاہ کہ یہاں دہلی میں محلہ کلینک کا دورہ کرنا بہت اچھا تجربہ ہے۔وزیر اعلیٰ کیجریوال نے کہا کہ دہلی اور ملک کے لئے فخر کا موقع ہے کہ اقوام متحدہ کے سابق جنرل سکریٹری بان کی مون اور ناروے کی سابق وزیر اعظم گرو ہارلیم بروٹ لینڈ محلہ کلینک دیکھنے پہنچے ہیں۔

ایک نظر اس پر بھی

شارداچٹ فنڈ:سپریم کورٹ میں مغربی بنگال کے تین افسران کی موجودگی پر ہوگی سماعت

سپریم کورٹ نے مغربی بنگال کے چیف سکریٹری، پولیس ڈائریکٹر جنرل اور کولکاتہ کے پولیس کمشنر کو زاردا چٹ فنڈ کیس سے متعلق توہین کے معاملے میں ذاتی طور پر پیش ہونے کے بارے میں منگل کو کوئی حکم جاری نہ کرنے کا فیصلہ کیا۔

ممبرا۔اورنگ آبادداعش معاملہ، چار ریمانڈ مکمل ہوجانے کے باجود اے ٹی ایس ملزمین کے خلاف پختہ ثبوت پیش نہیں کرسکا، ایڈوکیٹ خضر پٹیل

مہاراشٹر کے اورنگ آباد اور ممبئی سے قریب مسلم آبادی والے ممبرا سے گرفتا ۹؍ مسلم نوجوانوں کو گذشتہ کل اورنگ آباد کی خصوصی یو اے پی اے عدالت نے عدالتی تحویل میں دیئے جانے کے احکامات جاری کیئے

محبوبہ مفتی نے عمران خان کو دیا جواب،کہا،پٹھان کوٹ حملے کے مجرموں کو اب تک نہیں دی گئی سزا

جموں و کشمیر کی سابق وزیر اعلی اور پی ڈی پی صدر محبوبہ مفتی نے پاکستان کے وزیر اعظم عمران خان کی طرف سے ہندوستان سے پلوامہ دہشت گردانہ حملے کا ثبوت مانگے جانے پر اپنی نا اتفاقی ظاہر کی ہے۔