رافیل ڈیل پرمجھ سے مودی جی آنکھ نہیں ملا پائے، ادھر ادھر دیکھ رہے تھے، رافیل طیارے سودے راہل گاندھی کاحملہ جاری،کہا،ہندوستان کاسب سے بڑادفاعی گھوٹالہ

Source: S.O. News Service | By Jafar Sadique Nooruddin | Published on 11th August 2018, 12:56 AM | ملکی خبریں |

رائے پو:10/ اگست (ایس او نیوز/آئی این ایس انڈیا)کانگریس صدر راہل گاندھی نے جمعہ کو چھتیس گڑھ میں کانگریس کے نئے دفتر کا افتتاح کیاہے۔اس موقع پرانہوں نے پی ایم نریندر مودی پر رافیل طیارے سودے کو لے کر جم کر حملہ بولاہے۔راہل گاندھی نے رافیل طیارے سودے کو ملک کا سب سے بڑا دفاعی گھوٹالہ بتایاہے۔انہوں نے اس کے لیے وزیر اعظم نریندر مودی کو ذمہ دار ٹھہرایا۔راہل گاندھی نے کہاکہ میں نے پارلیمنٹ میں وزیر دفاع سے کہا کہ آپ نے ہندوستان سے جھوٹ کیوں بولا؟ جواب نہیں ملا۔جب میں نے مودی جی کوکہا،وہ اپنی آنکھ میری آنکھ سے نہیں ملا پائے۔اپنی ٹی وی پر دیکھا وہ ادھر ادھر دیکھ رہے تھے، کیوں؟کیونکہ چوکیدارپارٹنربن گیا ہے۔کانگریس صدر راہل گاندھی نے کہاکہ جب پاکستان کے سابق وزیر اعظم نواز شریف کانام پاناماپیپرمیں آیا توانہیں اس معاملے میں سزا ہوئی۔اور چھتیس گڑھ میں جب آپ کے وزیراعلیٰ کے بیٹے کا نام پاناما کاغذات میں آتا ہے تو جانچ تک شروع نہیں ہوتی۔یہی بی جے پی-این ڈی اے کی’’چوکیداری‘‘ہے۔انہوں نے چھتیس گڑھ میں کہاکہ ملک کی خواتین وزیر اعظم مودی سے پوچھ رہی ہیں کہ وہ اتر پردیش، بہار اور راجستھان میں عصمت دری کے واقعات پر کیوں نہیں بول رہے ہیں؟ بھارت میں ایسی صورت حال تین ہزار سالوں میں کبھی نہیں دیکھی گئی۔اس سے پہلے راہل گاندھی کا سوامی وویکانندہوائی اڈے پر کانگریس کے سینئر رہنماؤں اور عہدیداروں نے جم کرخیر مقدم کیاہے۔

ایک نظر اس پر بھی

راجستھان میں اس بار 158 کروڑ پتی ممبر اسمبلی

راجستھان کی 15 ویں اسمبلی کے لئے نو منتخب 199 اراکین اسمبلی میں سے 158 کروڑ پتی ہیں۔ سال 2013 کے گزشتہ اسمبلی انتخابات میں یہ تعداد 145 تھی۔ ایسوسی ایشن آف ڈیموکریٹک ریفارمس (اے ڈی آر) کی رپورٹ کے مطابق کانگریس کے 99 میں سے 82 ممبران اسمبلی، بی جے پی کے 73 میں سے 58 ممبران اسمبلی، بی ایس پی ...

رافیل ڈیل پر فیصلے میں مبنی بر حقائق ’ اصلاح ‘کی مانگ کو لے عدلیہ پہنچی مرکزی حکومت

رافیل ڈیل پر سپریم کورٹ کے فیصلہ اور اس پر مچے سیاسی گھمسان کے درمیان مرکزی حکومت ایک بار پھر عدالت عظمی پہنچی ہے۔حکومت نے عرضی داخل کرکے رافیل ڈیل پر دیئے گئے فیصلے میں مبنی بر حقائق اصلاح کا مطالبہ کیا ہے۔ مرکز نے سپریم کورٹ سے فیصلے کے اس پیراگراف میں ترمیم کا مطالبہ کیا ہے، ...

پلوامہ تصادم: آخر ایک فوجی نے جنگجوئیت کیوں اختیار کی ؟ ظہور ٹھوکرفوجی کیمپ سے فرار ہو کرجنگجوئیت اختیار کی تھی

جنوبی کشمیر کے پلوامہ ضلع میں ہفتہ کو ایک تصادم میں سکیورٹی فورسز نے تین دہشت گردوں کو مار گرایا۔ اس تصادم میں مارے گئے دہشت گردوں میں ظہور احمد ٹھوکر بھی ہے، جو گزشتہ سال جولائی میں فوج کے کیمپ سے فرار ہو کر دہشت گرد تنظیم میں شامل ہو گیا تھا۔بتایا جا رہا ہے کہ مقامی باشندے ...

چھتیس گڑھ میں کون بنے گا وزیر اعلی؟ راہل گاندھی نے کیا اشارہ

پی اور راجستھان میں سی ایم کا اعلان کرنے کے بعد چھتیس گڑھ کے وزیر اعلی کے عہدے پر کانگریس میں پیچ پھنسا ہوا ہے۔ کانگریس صدر راہل گاندھی نے پی اور راجستھان کی طرح آج بھی ٹویٹر پر چھتیس گڑھ کے تمام سی ایم دعویداروں کے ساتھ تصویر تو پوسٹ کر دی ہے لیکن وزیر اعلی کون ہوگا اس پر پارٹی ...