کٹھوعہ ریپ معاملہ :عدالت عظمیٰ نے کہا متاثرہ کے خاندان کو تحفظ ملے

Source: S.O. News Service | By Shahid Mukhtesar | Published on 17th April 2018, 12:23 AM | ملکی خبریں |

جموں ،16؍اپریل ( ایس او نیوز؍آئی این ایس انڈیا ) کٹھوعہ ریپ اور قتل معاملہ میں عدالت عظمیٰ نے جموں ۔کشمیر حکومت کو نوٹس جاری کیا ہے۔ اس معاملہ پر سیریم کورٹ نے حکومت سے جواب طلب کیا ہے۔ اس کے ساتھ ہی کورٹ نے سماعت کے درمیان جموں کشمیر حکومت کو متاثرہ خاندان اور وکیل کو تحفظ دینے کا حکم دیا ہے۔عدالت عظمیٰ میں اس پر آندہ سماعت 27اپریل کو ہوگی۔متاثرہ کے خاندان اور وکیل نے سپریم کورٹ میں عرضی داخل کر کے اس کیس کو جموں کشمیر سے باہر ٹرانسفر کرنے کی مانگ کی ہے ۔ متاثرہ کے خاندان کے جانب سے عدالت عظمیٰ کی سیرنئر وکیل اندرا جئے سنگھ نے کہا کہ غیر جانب دارانہ جانچ کے لئے وہاں کا موحول صحیح نہیں ہے۔ اس سے قبل کٹھوعہ قتل کیس میں ضلع اور سیشن کورٹ نے کہا ہے کہ چارج شیٹ کی کاپی تمام ملزمین کو دی جائے ۔ اس معاملہ کی اگلی سماعت اب 28 اپریل کو ہوگی۔اس معالہ میں 8 لوگوں کو ملزمین بنایا گیاہے۔ ان ملزمین میں ایک نابالغ بھی شامل ہے جس کی پیشی 24 اپریل کو تے ہوئی ہے ۔صبح 10 بجے ملزمین کو کورٹ نے پیش کیا جائیگا۔ اس کیس کانڈ کے ملزمین ہیں سانچھی رام ، دیپک کجوریہ ، سریندر ورما، ویشال جنگوترا، تلک راج، آنند دتا اور پرویش کمار۔ انہیں پردھان اور سیشن جج کے سامنے پیش کیاجائیگا۔

ایک نظر اس پر بھی

پروٹوکول توڑنے میں مودی نے عمران سے مقابلہ کیا، سفارتی ناکامی پر جواب دیں: کانگریس

کانگریس نے سعودی عرب کے شہزادہ (ولی عہد) محمد بن سلمان کا پروٹوکول سے الگ جاکرخوش آمدید کئے جانے کو لے کر بدھ کو وزیر اعظم نریندر مودی پر حملہ بولا اور الزام لگایا کہ پروٹوکول توڑنے میں مودی تو گویا پاکستانی وزیر اعظم عمران خان کے ساتھ، جیسے مقابلہ کر رہے ہیں۔

پلوامہ حملہ: اب آندھرا پردیش کے وزیراعلیٰ چندرا بابو نائیڈو نے مودی حکومت کو گھیرا، کہا، قومی سلامتی خطرے میں ہے

پلوامہ دہشت گردانہ حملے کو لے کر پاکستان کے وزیر اعظم عمران خان کے بیان پر رد عمل ظاہر کرتے ہوئے آندھرا پردیش کے وزیراعلیٰ این چندرا بابو نائیڈو نے مرکز کی مودی حکومت پر نشانہ لگایا ہے۔

این سی ڈی آرسی نے آپریشن کے دوران لاپرواہی برتنے والے ڈاکٹر متاثرہ خاندان کو 2.7 لاکھ روپے ادا کرنے کا حکم دیا

قومی صارفین تنازعہ سراغ رساں کمیشن(این سی ڈی آرسی) نے آپریشن کے دوران لاپرواہی کی وجہ سے ایک خاتون کی موت کے معاملے میں تین ڈاکٹروں کو متاثر خاندان کو پر 2.7 لاکھ روپے ادا کرنے کا حکم دیا ہے۔