کرناٹکا اسٹیٹ اوپن یونیورسٹی کی ڈگریوں کو باضابطہ منظوری

Source: S.O. News Service | By Shahid Mukhtesar | Published on 10th October 2018, 12:18 AM | ریاستی خبریں |

بنگلورو،9؍اکتوبر(ایس او نیوز) کرناٹکا اسٹیٹ اوپن یونیورسٹی کے کورسوں کو باضابطہ تسلیم شدہ قرار دیا گیا ہے۔ اور یہاں سے حاصل کی گئی کوئی بھی ڈگری دیگر ہمعصر یونیورسٹیوں کی ڈگریوں کے مساوی مانی جائے گی۔ یہ بات آج ایک اخباری کانفرنس میں کرناٹکا اسٹیٹ اوپن یونیورسٹی کے وائس چانسلر پروفیسر ڈی شیولنگیا نے بتائی۔ انہوں نے کہاکہ 2017 میں یونیورسٹی گرانٹ کمیشن کی طرف سے اوپن یونیورسٹی کو منظوری دی گئی تھی، اسی لئے اس یونیورسٹی سے وابستہ طلبا کو کسی طرح کی پریشانی میں مبتلا ہونے کی کوئی ضرورت نہیں ہے بلکہ یونیورسٹیوں میں نئے داخلے بھی جلد ہی باضابطہ شروع کئے جاسکتے ہیں۔ انہوں نے کہاکہ آئندہ خیال رکھا جائے گا کہ یونیورسٹی کی طرف سے مرکزی یا ریاستی حکومتوں کی طرف سے وقتاً فوقتاً لاگو ہونے والے ضوابط کی مکمل پابندی کی جائے۔ انہوں نے کہاکہ یونیورسٹی کی طرف سے جاری کی جانے والی ڈگریوں کو باضابطگی دئے جانے سے اب یونیورسٹی کو نئے کورسوں کی شروعات میں مدد ملے گی۔ان کے مطابق یونیورسٹی میں 8395 طلبا کے داخلوں کی گنجائش ہے، داخلے کے لئے آخری تاریخ20؍ اکتوبر2018 تک بڑھادی گئی ہے۔ پروفیسر شیولنگیا کے مطابق جنوری 2019 سے یونیورسٹی کی طرف سے بی ایڈ اور ایم بی اے کورسوں کی شروعات کی جارہی ہے۔ انہوں نے کہاکہ یونیورسٹی نے 2014میں جو فیس ڈھانچہ وہی اب بھی برقرار رکھا گیا ہے، اس میں کوئی اضافہ نہیں ہوگا۔ یونیورسٹی کی طرف سے بی اے اور ایم اے ڈگری کے لئے نصاب کنڑا زبان میں ہی مرتب کیا گیا ہے۔ یونیورسٹی میں 31اقسام کی ڈگریوں کے ساتھ فروغ ہنر کی تربیت سے جڑے کورس بھی رائج کئے گئے ہیں ان کے علاوہ دوسالہ پوسٹ گریجویشن کورس بھی رکھا گیا ہے۔ بی اے ، بی کام ، بی لب ، بی ایس سی ، ایم اے ، ایم لب ، ایم ایس سی اور دیگر ہنر مندی پر مبنی کورس یونیورسٹی کا حصہ رہیں گے۔ 

ایک نظر اس پر بھی

’ پاکستان زندہ باد‘کے نعرے لگانے پرہاویری میں ایک شخص کو عوام نے پیٹا۔ بیلگاوی میں ٹیچرکا گھر نذرآتش۔ رائچور میں ہنگامہ

کشمیر کے پلوامہ میں دہشت گردانہ حملے میں ہلاک ہونے والے فوجیوں کو خراج عقیدت اور ان کے اہل خانہ کے ساتھ اظہار ہمدردی کے لئے دیوگیری کے عوام نے ایک مشعل بردار جلوس نکالاتھا

رائے دہندگان کی سہولت کیلئے انتخابی کمیشن سے الیکشن ایپ جاری منصفانہ انتخابات کو یقینی بنانے کیلئے تربیت یافتہ خصوصی ٹیمیں تشکیل:منجوناتھ

بنگلورو شہری ضلع کے انتخابی افسر و بروہت بنگلور مہا نگر پالیکے ( بی بی ایم پی) کمشنر منجوناتھ پرساد نے بتایا کہ آنے والے لوک سبھا انتخابات کے دوران ووٹروں کی سہولت کیلئے انتخابی کمیشن نے ’’الیکشن ایپ‘‘ جاری کیا ہے ۔

کانگریس سے کبھی علاحدگی اختیار نہیں کریں گے۔رمیش وناگیندرا

تقریباً 2؍ ماہ تک پارٹی لیڈروں سے رابطہ قائم کئے بغیر دور رہے کانگریس کے برگشتہ اراکین اسمبلی رمیش جارکی ہولی اور بی ۔ناگیندرا واپس آچکے ہیں۔انہوں نے کانگریس لیجسلیٹرز پارٹی لیڈر وریاستی مخلوط حکومت کی کو آرڈنیشن کمیٹی کے چیرمین سدارامیا سے ملاقات کرتے ہوئے پارٹی میں ہی ...