کارتی چدمبرم کو نہیں ملی بیل، 24مارچ تک کے لئے عدالتی حراست میں بھیجے گئے

Source: S.O. News Service | By Shahid Mukhtesar | Published on 12th March 2018, 9:10 PM | ملکی خبریں |

نئی دہلی،12؍ مارچ (ایس او نیوز؍آئی این ایس انڈیا) دہلی کی ایک عدالت نے کارتی چدمبرم کو آئی این ایکس میڈیا بدعنوانی کیس میں 13دن کی عدالتی حراست میں بھیج دیا۔عدالت نے انہیں خطرے کی وجہ سے تہاڑ جیل میں الگ کمرہ فراہم کرنے کی ان کا درخواست بھی ٹھکرا دی۔عدالت نے ان کی ضمانت کی درخواست پر فوری سماعت کی اپیل اورجیل میں خطرے کی بات بھی مسترد کر دی۔کارتی کا کہنا تھا کہ چونکہ گزشتہ یو پی اے حکومت میں بطور مرکزی وزیر ان کے والد پی چدمبرم بہت حساس مسائل سے نپٹے ہیں، اس لیے انہیں خطرہ ہے۔ کارتی کو تین دن کی پولیس حراست ختم ہونے کے بعد خصوصی جج سنیل رانا کے سامنے پیش کیا گیا جنہوں نے انہیں تہاڑ جیل بھیجا۔سی بی آئی نے عدالت سے کہا کہ کارتی کو حراست میں رکھ کر پوچھ گچھ کرنے کی اب ضرورت نہیں ہے۔چنئی میں 28 فروری کو کارتی کی گرفتار کے بعد سے وہ 12 دن سے سی بی آئی کی حراست میں تھے۔خصوصی جج نے کہاکہ اس حقیقت کو دیکھتے ہوئے کہ سی بی آئی نے ملزم کی اور پولیس حراست نہیں مانگی ہے، ملزم کارتی چدمبرم کو عدالتی حراست میں بھیجا جاتا ہے۔وہ 24 مارچ کو پیش ہوں۔عدالت نے کارتی کو اپنے ساتھ چشمہ اورجیل کے ڈاکٹر کی تحقیقات اور منظوری سے بیماری سے متعلق نسخے پر لکھی ادویات لے جانے کی اجازت دی۔حالانکہ عدالت نے ٹوائلٹ کے سامان، کتابیں، کپڑے اور گھر کے کھانے کی درخواست کو ٹھکرا دیاعدالت نے کہا کہ ان کی ضمانت کی درخواست پر 15مارچ کو سماعت ہوگی۔اس دوران ای ڈی کی طرف سے داخل کئے گئے ایک معاملے میں فی الحال جیل میں موجود کارتی کے چارٹرڈ اکاؤنٹنٹ ایس بھاسکررمن نے سی بی آئی کے میڈیا معاملے میں پیشگی ضمانت کے لئے عدالت کا رخ کیا ہے پچھلے سال 15 مئی کو ریکارڈ ایک ایف آئی آر کے سلسلے میں کارتی کو برطانیہ سے واپس آنے کے دوران گرفتار کیا گیا۔

ایک نظر اس پر بھی

کشمیر 2002 کا گجرات بن سکتا ہے

آخر کشمیر میں گونر راج نافذ ہو ہی گیا۔ کشمیر کے لئے یہ کوئی نئی بات نہیں ہے۔ وہاں اب ساتویں بار گونر راج نافذ ہوا ہے ، ویسے بھی کشمیر کے حالات نا گفتہ بہہ ہیں۔ وادی کشمیر پر جب سے بی جے پی کا سایہ پڑا ہے تب ہی سے وہاں قتل و غارت کا سلسلہ جاری ہے ۔ پہلے تو مفتی سعید اور محبوبہ مفتی نے ...

راجستھان میں ’لو جہاد‘ کے نام پر ماحول خراب کرنے کی کوشش 

راجستھان کے ہنڈون میں لو جہاد کے نام پر بجرنگ دل پر ماحول بگاڑنے کا الزام لگا یا ہے، ہنڈون کے جس کانگریس کونسلر نفیس احمد پر بجرنگ دل نے لو جہاد کا الزام لگایا ہے، ان کا دعویٰ ہے کہ یہ مکمل طور پر ایک من گھڑت کہانی ہے۔

چھتیس گڑھ میں مضبوط طاقت ہے کانگریس، اتحاد کی ضرورت نہیں :پی ایل پنیا

آل انڈیا کانگریس کمیٹی جنرل سیکریٹری اور چھتیس گڑھ کے پارٹی معاملات کے انچارج پی ایل پنیا کا کہنا ہے کہ کانگریس ریاست میں مضبوط قوت ہے اور اس کے اندر کسی اتحاد کے بغیر اسمبلی انتخابات جیتنے کی طاقت ہے۔

ایمرجنسی نے جمہوریت کوقانونی تاناشاہی میں بدل دیا: ارون جیٹلی

مرکزی وزیر اور سینئر بی جے پی لیڈر ارون جیٹلی نے آج یاد کیا کہ کس طرح تقریبا چار دہائی قبل وزیر اعظم اندرا گاندھی کی زیر قیادت حکومت کی طرف سے ایمرجنسی لگائی گئی تھی اور جمہوریت کو آئینی آمریت میں تبدیل کر دیا گیا۔

گنگامیں جمع گندگی کولے کرنتیش کمارکا مرکزی حکومت پرسخت حملہ

بہار کے وزیر اعلی نتیش کماران دنوں ہر روز اپنی بات کوبے باکی سے رکھ رہے ہیں۔ گزشتہ اتوار کو ہوئی نیتی آیوگ کی میٹنگ میں انہوں نے پی ایم نریندر مودی کے سامنے ریاست کے مسائل رکھنے کے بعد انہوں نے مرکزی وزیر ماحولیات ہرش وردھن کو مشورہ دیا کہ دہلی واپس جاکر مرکزی سطح وزیر ...