15سال کے بعد بیدرکے تین مسلم نوجوان با عزت بری 

Source: S.O. News Service | By Shahid Mukhtesar | Published on 13th August 2017, 1:27 AM | ریاستی خبریں |

بیدر،11/اگست(ایس او نیوز/محمدامین نوازبیدر)جناب سید منصور احمد قادری انجینئر صدر کُل ہند مجلس اتحاد اُلمسلمین بیدر نے ایک صحافتی بیان جاری کرتے ہوئے بیگم پیٹ حیدرآباد کے ٹاسک فورس آفس میں ہوئے بم دھماکہ میں ملوث قرار دیتے ہوئے بیدر سے بھی تین نواجوانوں کو آندھراپردیش پولیس نے گرفتار کیا تھا جنھیں بغیر کسی ٹھوس ثبوت کے نہ صرف گذشتہ15سال محروس رکھا بلکہ اس دوران اُنھیں طرح طرح کی اذیتیں بھی دی گئیں اور حد تو یہ ہوگئی کہ وہاں کی پولیس نے باربار اعتراضات کے ادخال کے ذریعے ان بے گناہ ملزمین کی ضمانت ہونے میں بھی رکاؤٹیں ڈالتی رہی‘ بالآخر کل یعنی 10اگست 2017کو نامپلی کریمنل کورٹ نے ایک تاریخ ساز فیصلہ سناتے ہوئے اس واقعہ میں گرفتار کئے گئے تمام ملزمین کو تمام سنگین الزامات سے مبرا قرار دیتے ہوئے باعزت بری کردیا۔

صدرِ مجلس بیدر نے رہا کئے گئے تمام نوجوانوں میں بیدر سے تعلق رکھنے والے محمد محمود بارود والا‘سید عظمت علی اور اجمل خان کو ان کی باعزت رہائی پر مبارکباد پیش کی اور کہا کہ بے گناہ ہوتے ہوئے ظالموں کے ہاتھوں قید و بند کی صعوبتوں کو برداشت کرنا انبیاء اور اولیاء کرام کی سنت ہے۔اللہ تعالی ان تمام بے گناہ نوجوانوں کو ان گذرے ہوئے قیمتی سالوں کا بہترین بدل عطا فرمائے گا۔ جناب قادری نے حکومت سے ان تمام پولیس اہلکاروں کے خلاف سخت کارروائی کا مطالبہ کیا جو بغیر کسی ابتدائی تحقیقات کے ان معصوم مسلم نوجوانوں کو گرفتار کرلیا جن کے خلاف وہ گذشتہ 15سال میں بھی ثبوت اکٹھا نہیں کرپائے ساتھ ہی ساتھ جناب سید منصور احمد قادری نے کہا کہ وہ اپنے اور اپنی اُمت کے خلاف ہونے والی ہر ناانصافی کے خلاف آواز اُٹھائیں جس کیلئے چاہے کچھ بھی قربان کرنا کیوں نہ پڑے۔

ایک نظر اس پر بھی

چنتامنی میں ریاستی حکومت کے خلاف بی جے پی کارکنان کا احتجاجی مظاہرہ

اینٹی کرپشن بیورو میں ایڈی یورپا کے خلاف شکایت درج ہونے پر جو ایف آئی آر داخل کی گئی ہے اور ایڈی یورپا کو سمن کیا گیا ہے اس پر برہم بی جے پی کارکنان نے ریاستی حکومت و وزیر اعلیٰ سدارامیا کے خلاف احتجاجی مظاہرہ کیا۔

مسلم پرسنل لاء بورڈ کے موقف کی حمایت کرنے رحمن خان کی اپیل، دستورہند میں ہرباشندہ کو اپنے مذہب کے مطابق عمل کی آزادی ہے

ایک وقت میں 3طلاق کو غیر قانونی اور غیر قرآنی قراردینے کے سپریم کورٹ کے فیصلے پر راجیہ سبھا کے رکن اور سابق مرکزی وزیر کے رحمن خان نے کہا ہے کہ اسلام میں ایک وقت میں 3طلاق کو بہت ہی ناپسندیدہ قرار دیا گیا ہے

تہواروں کے دوران تشدد پر سخت کارروائی ہوگی: وزیر اعلیٰ کاگنیش چترتی اور بقرعید کے پیش نظر حفاظتی انتظامات کا جائزہ

آئندہ دنوں میں گنیش تہوار اور بقرعید آرہے ہیں، اس کے پیش نظر محکمۂ پولیس کی جانب سے کئے گئے انتظامات کا وزیر اعلیٰ کے سدارامیا نے جائزہ لیا، انہوں نے دیکھا کہ ان تہواروں کے وقت نظم وضبط، امن اور ہم آہنگی کی برقراری کے لئے کس طرح کے انتظامات کئے جارہے ہیں،

ہبلی:پبلک سیکٹر بینک ملازمین کا ملک بھر میں مرکزی حکومت کے خلاف احتجاج

مرکزی حکومت کے ذریعے نیشنل بینکوں کو ضم کرنے اور خانگیانے کولے کر تمام نیشنل بینک ملازمین نے یونائیٹیڈ فورم آف بینک یونینس (یوایف بی یو) کی سرپرستی میں تجارتی شہرہبلی میں زبردست احتجاج کرتے ہوئے سخت مخالفت کی۔جس کے نتیجے میں شہرکے نیشنل بینکوں میں کام کا ج میں دقت وپریشانی ...