سرکاری ملازمین کی تنخواہوں پر نظر ثانی پے کمیشن رپورٹ کے بعد: وزیر اعلیٰ سدرامیا

Source: S.O. News Service | By Shahid Mukhtesar | Published on 13th January 2018, 11:02 PM | ریاستی خبریں |

بنگلورو،13؍ جنوری(ایس او نیوز؍عبدالحلیم منصور) وزیر اعلیٰ سدرامیا نے کہاکہ چھٹویں پے کمیشن کی رپورٹ ملنے کے بعد سرکاری ملازمین کی تنخواہوں پر نظر ثانی کا فیصلہ کیا جائے گا۔ آج ملولی میں اخباری نمائندوں سے بات چیت کرتے ہوئے وزیراعلیٰ سدرامیا نے کہاکہ وظیفہ یاب آئی اے ایس آفیسر سرینواس مورتی کی قیادت میں حکومت نے ایک کمیشن بٹھایا ہے جو تمام امور کا جائزہ لے رہا ہے۔ رواں ماہ کے اواخر تک اس کمیٹی کی رپورٹ ملنے کی توقع ہے۔ رپورٹ ملنے کے بعد اس پر مناسب کارروائی بلاتاخیر کی جائے گی۔انہوں نے کہاکہ رپورٹ ملنے کے بعد ریاست کے 5.45 لاکھ سرکاری ملازمین کی تنخواہوں میں جامع پیمانے پر نظر ثانی ممکن ہے۔ وزیر اعلیٰ نے کہاکہ ڈی گروپ میں آنے والے معمولی سرکاری ملازمین کی کم از کم تنخواہ 16؍ ہزار روپے کی جائے گی اور سی گروپ میں آنے والے ملازمین کی تنخواہ کم ا ز کم 19 ہزار روپے رہے گی۔ بی گروپ کے ملازمین کو 39 ہزار روپے اور اے گروپ کے ملازمین کو 48 ہزار روپیوں کی تنخواہ دی جاسکتی ہے۔ اس کے ساتھ ہی ریاستی حکومت اس بات پر بھی غور کررہی ہے کہ سرکاری ملازمین کے ایام کار کے نظام کو بھی بد لاجائے اور ہفتہ میں صرف پانچ دن کام کرنے کا رواج قائم کرتے ہو ئے ہفتہ اور اتوار چھٹی کا دن قرار دیا جائے۔تاہم اس کمیٹی کی رپورٹ ملنے کے بعد حکومت کوئی فیصلہ کرے گی۔ دریائے مہادائی کے تنازعہ کو سلجھانے کے متعلق حکومت کے امیدافزا ہونے کا ادعا کرتے ہوئے سدرامیا نے کہاکہ مہادائی مسئلہ پر ٹریبونل میں سماعت چل رہی ہے۔ حکومت کرناٹک کو یہ توقع ہے کہ ٹریبونل کا فیصلہ کرنا ٹک کے حق میں ہوگا۔اسی لئے حکومت گوا ٹریبونل کے فیصلہ کو ماننے پرراضی نہیں ہے۔ ریاست بھر میں حکومت کی کاررکردگی اور نئے ترقیاتی منصوبوں کی شروعات پر ایک ماہ سے مختلف اضلاع میں منعقد ہورہے سادھانا سماویش کی کامیابی پر اپنی مسرت کا اظہار کرتے ہوئے سدرامیا نے کہاکہ انتخابات اب سرپر ہیں اس کیلئے تیاریاں بڑے پیمانے پر کی جارہی ہیں۔ کانگریس کارکن ہونے کے ناطے ہر ایک کو پارٹی کا ٹکٹ پوچھنے کا اختیار ہے، لیکن امیدوار کون ہوگا اس کیلئے پارٹی اعلیٰ کمان کی طرف سے ہی فیصلہ لیا جائے گا۔ 

ایک نظر اس پر بھی

ساحلی کرناٹک: سمندری لہروں میں اچانک اچھال۔الال اورآس پاس کے علاقے متاثر۔ گھروں میں گھس آیا سمندرکا پانی۔ایک لڑکا ہوگیا غرقاب

پچھلے کچھ دنوں سے بدلتے ہوئے موسم اور بحیرۂ عرب میں ہوا کے گھٹتے ہوئے دباؤ کی وجہ سے 22اپریل کی دوپہر سے ہی سمندر کی لہروں میں اچانک غیر معمولی اچھال پیدا ہوگیا جس سے ساحلی علاقوں میں سُنامی جیسی خوف و دہشت کا عالم دکھائی دیا۔ 

کانگریس کی دوسری فہرست جاری۔بادامی سے بھی سدارامیاامیدوار، رائچور سے سید یاسین اورشانتی نگر سے حارث کی سیٹ محفوظ

ریاست میں اسمبلی انتخابات کے لئے مختلف سیاسی پارٹیوں کی جانب سے پرچۂ نامزدگی داخل کرنے کا سلسلہ جاری ہے ۔کانگریس پارٹی کی جانب سے جاری آخری حتمی فہرست نے جہاں وزیراعلیٰ سدارامیاکو بادامی اسمبلی حلقہ سے بی فارم جاری کیاہے

بنگلور میں اے پی سی آر کی جانب سے قانونی جانکاری کا اہم پروگرام؛ ریاست بھر کے ذمہ داران کی شرکت؛ اے پی سی آر اب لوگوں کی اُمید بن گئی ہے؛ یوسف کنّی کا پرزور خطاب

ریاست کرناٹک میں اسمبلی انتخابات کے پیش نظراسوسی ایشن فار پروٹکشن آف سول رائٹس (اے پی سی آر) کرناٹکا چاپٹر کے زیر اہتمام 22اپریل بروز اتوار کو ضلعی ذمہ داران کا ایک اہم پروگرام بفٹ ہال، دارلسلام بنگلورمیں منعقد کیاگیا جس میں ریاست بھر کے ذمہ داران نے شرکت کرتے ہوئے اپنے اپنے ...