گورکھپورسانحہ:جب یوگی نے دورہ کیاتوپھرلاپرواہی کیسے ہوئی،براہِ راست بی جے پی سرکارذمہ دار، اپوزیشن نے سی ایم یوگی سے مانگااستعفیٰ، وزیر موریانے کہا، جلدبازی نہ کریں

Source: S.O. News Service | By Shahid Mukhtesar | Published on 13th August 2017, 11:49 AM | ملکی خبریں |

گورکھپور،12؍اگست(ایس او نیوز؍آئی این ایس انڈیا) اتر پردیش کے وزیر یوگی آدتیہ ناتھ کے ہوم ڈسٹرکٹ گورکھپور کے بی آر ڈی میڈیکل کالج میں محض36 گھنٹے میں30 معصوموں کی موت نے ریاستی حکومت اور ریاستی انتظامیہ پر کئی سوال کھڑے کر دیئے ہیں۔ پچھلی حکومتوں پر لچر طریقہ کار کا الزام لگا کر اقتدار میں آئی میں بی جے پی کے راج میں اتفاق سے اتنی تعداد میں بچوں کی موت کے واقعہ نے اپوزیشن کو بھی حملہ آور ہونے کا موقع دے دیا ہے۔ لیکن حکومت کے رویے سے لگتاہے کہ خودکی ذمہ داری لینے کے بجائے ڈاکٹروں پرہی گاج کراکرغصے کوٹھنڈاکرنے کی کوشش کی جائے گی کیونکہ اگرگیس کی کمی پیسے کے عدم ادائیگی کی وجہ سے ہوئی اورباربارریمانڈرملنے کے باوجودلاپرواہی کی وجہ سے ہوئی توبراہِ راست یوگی سرکارذمہ دارہے نہ کہ ڈاکٹر،لیکن ڈاکٹروں پرہی گاج کراکرمعاملے کوخاموشی کے ساتھ دبادیاجائے گا۔جیساکہ اب بیان آرہاہے کہ گیس کی کمی کے علاوہ اوربھی وجوہات ہوسکتی ہیں۔ریاست میں اہم اپوزیشن ایس پی کے ساتھ بی ایس پی اور کانگریس کے بڑے لیڈروں نے اس واقعہ پر افسوس کا اظہار کرنے کے ساتھ یوگی حکومت کے طریقہ کار پر سوال کھڑے کئے ہیں۔ اپوزیشن کے سارے لیڈر متحد ہوکر پوچھ رہے ہیں کہ جب وزیر اعلی یوگی نے تین دن پہلے ہی بی آر ڈی میڈیکل کالج کا دورہ کیا تھا تو وہاں اتنی بڑی لاپرواہی کیسے ہوئی۔یوپی کے نائب وزیر اعلی کیشو پرساد موریہ نے کہا کہ اپوزیشن جلد بازی میں ہے اور ریاست کی حکومت عوام کی خدمت کے لیے مصروف عمل ہے، قصورواروں کے خلاف یوپی حکومت سخت کارروائی کرے گی۔ یوپی حکومت کے وزیر آشوتوش ٹنڈن نے کہا کہ سی ایم یوگی پورے معاملے پر نظر بنائے ہوئے ہیں۔ انہوں نے مجھ سے اور وزیر صحت سے معلومات بھی مانگی ہے، ہم گورکھپور سے لوٹ کر سی ایم کو پورے معاملے کی اطلاع دیں گے۔ ریاست کے وزیر صحت سدھارتھ ناتھ سنگھ جب واقعہ کی جائزہ میٹنگ میں شامل ہونے نکلے تو انہوں نے کچھ بھی بولنے سے صاف انکار کر دیا۔

ایک نظر اس پر بھی

جموں کشمیر میں بی جے پی۔پی ڈی پی سرکار گرگئی؛ محبوبہ مفتی نے سونپا گورنر کو اپنا استعفیٰ

جموں کشمیر میں بی جے پی نے محبوبہ مفتی سرکار سے اپنی حمایت واپس لے لی ہے جس کے ساتھ ہی ریاست میں تین سالوں سے چلی آرہی گٹھ بندھن سرکار ختم ہوگئی ہے۔ بی جے پی کے سرکار سے  الگ ہونے کی اطلاع کے فوری  فوری بعد محبوبہ نے گورنر این این بوہرا  کو اپنا استعفیٰ سونپ دیا۔

ریاستی کانگریس لیڈروں کو نصیحت کرنے راہل گاندھی سے درخواست بہتر انتظامیہ کو یقینی بنانے دونوں پارٹیوں کے درمیان تال میل ضروری: ایچ ڈی کمار سوامی

ریاستی وزیراعلیٰ ایچ ڈی کمار سوامی نے آج دہلی میں کانگریس صدر راہل گاندھی سے ملاقات کر کے ریاست کی سیاسی صورتحال سے متعلق تبادلہ خیال کیا۔ ا س ملاقات کے دوران راہل گاندھی نے کمار سوامی کو مشورہ دیا کہ کرناٹک میں کانگریس جے ڈی ایس مخلوط حکومت کا یہ ابتدائی دور ہے۔

کسانوں کا قرضہ معاف کرنے مرکزی حکومت سے تعاون کی اپیل 85لاکھ سے زائد کسان مشکلات کا شکار ہیں ، مصیبت کی گھڑی میں ہاتھ تھامنا مرکزی و ریاستی حکومت کاکام ہے: کمار سوامی

قرض کی دلدل میں پھنسے ہوئے کسانوں کو اوپر لانے کی خاطر کئے جارہے قرضہ معاف اسکیم کو مرکزی حکومت 50فی صد امداد فراہم کرے ، اس خیال کااظہار ریاستی وزیر اعلیٰ کمار سوامی نے کیا۔

اتر پردیش میں گئو کشی کی افواہ پر مسلم نوجوان کا پیٹ پیٹ کر قتل

ملک میں گئو کشی روکنے کے نام پر غنڈہ گردی تھمنے کا نام نہیں لے رہی ہے۔ تازہ معاملہ اتر پردیش میں پلکھوا کے بچھیڑا خرد سے سامنے آیا ہے جہاں گوکشی کی افواہ پر کچھ شرپسندوں نے قاسم نامی نوجوان کو بری طرح مارا پیٹا اور قتل کر دیا۔

سکھ زائرین کی کار ٹرک سے جا ٹکرائی ایک بچہ، تین خواتین سمیت 7ہلاک 

پنجاب کے امرتسر کے پاس سموار اسپورٹس یوٹی لیٹی وہیکل کی ٹرک سے تصادم میں سات لوگ لقمہ اجل ہوگئے ۔واضح ہو کہ مہلوکین میں تین عورت سمیت ایک بچہ بھی ہے ۔ یہ تمام افرادامرتسر کے گولڈن ٹمپل کی زیارت اور پوجا ارچنا کرکے دہلی واپس آرہے تھے۔