ڈاکٹر کفیل نے پولیس پر لگائے سنگین الزامات ،ماں نے سیکوریٹی فراہم کا کرنے کا مطالبہ کیا

Source: S.O. News Service | By Shahid Mukhtesar | Published on 12th June 2018, 11:41 AM | ملکی خبریں |

گورکھپور،12؍جون(ایس او نیوز؍ایجنسی) ڈاکٹر کفیل نے آج فیس بک لائیوکے ذریعہ پولس کی کارکردگی پر سوالیہ نشان قائم کردیاہے ۔اپنے بھائی ڈاکٹر کاشف جمیل کو گولی مارے جانے کے سلسلے میں انہوں نے کہاکہ بھائی کا آپرین کامیاب رہا، طبیعت اب قدرے بہتر ہے اور اب ہوش بھی آگیاہے ۔انہوں نے واردات کی تفصیل بتاتے ہوئے کہاکہ بائک سوار دو نوجوانوں نے بھائی پر فائرنگ کی اور وہ فرار ہوگئے ۔انہوں نے کہاکہ یہ کس نے کیا ہے اور کس کے اشارے پر ہواہے اس کے بارے میں ابھی کچھ نہیں کہاجاسکتاہے لیکن جہاں پر وزیر اعلی یوگی آدتیہ ناتھ سورہے تھے اس سے پانچ سو میٹر کے فاصلہ پر یہ واقعہ رونما ہواہے ۔خراب لاءاینڈ آڈر کی واضح مثال ہے ۔انہوں نے پولس اور کرائم برانچ کے کردار پر افسوس کا اظہار کرتے ہوئے کہاکہ ہمیں پولیس اہلکاروں نے صدر ہسپتال لیجانے پر مجبور کیا یہ کہتے ہوئے کہ صدر ہسپتال میں میڈیکل انکوائری ہوگی اور اسی بنیاد پر رپوٹ تیار ہوگی ،صدر ہسپتال میں جانچ ہوجانے کے بعد بھی علاج کیلئے ہمیں دوسرے ہسپتال میں لیجانے سے روکا گیا۔ڈاکٹر کفیل خان کے مطابق ڈاکٹر رنوجے دوبے جو ان کے ساتھ تھے، ان کا مشورہ تھا کہ گولی کو جلد نکالی جائے، لیکن پولس والوں نے پہلے میڈیکو لیگل کرانے کے لیے زور دیا جس کی وجہ سے صدر اسپتال جانا پڑا اور وہاں ایک گھنٹہ میں میڈیکو لیگل مل گیا۔ لیکن پولس والوں نے یہ کہنا شروع کر دیا کہ وہ میڈیکل کالج کا میڈیکو لیگل مانیں گے اور وہاں اس کے لیے باضابطہ میڈیکل بورڈ بنے گا۔روکنے کیلئے باہر فورس لگادی گئی ،بڑی مشکل اور جدوجہد سے ہمیں دوسرے ہسپتال میں لیجانے دیاگیا اور اس طرح ہمارا کئی گھنٹہ کا وقت برباد ہوا ۔

ڈاکٹر کفیل خان کے چھوٹے بھائی کاشف جمیل پر گزشتہ رات قاتلانہ حملہ کے بعد ان کی ماں کا درد میڈیا کے سامنے چھلک پڑا۔ انھوں نے اپنے پورے خاندان کو خوف کے سائے میں زندگی بسر کرتا ہوا بتایا اور کہا کہ ”میری فیملی کو پولس سیکورٹی کی ضرورت ہے۔“ کاشف جمیل پر قاتلانہ حملہ کے بعد ان کی ماں اس بات کو لے کر تشویش میں نظر آئیں کہ ان کی فیملی کے دیگر ممبران پر بھی اس طرح کے حملے ہو سکتے ہیں۔

واضح ر ہے کہ جب کاشف جمیل پر غنڈوں نے حملہ کیا اس وقت اتر پردیش کے وزیر اعلیٰ گورکھپور میں ہی موجود تھے جوکہ حملہ کے مقام سے محض 500 میٹر کی دوری پر تھے۔ علاقے میں ان کی موجودگی کے باوجود جرائم پیشہ عناصر کے ذریعہ ڈاکٹر کفیل کے بھائی پر حملہ ریاست میں ’غنڈہ راج‘ کی طرف واضح اشارہ کر رہا ہے

ایک نظر اس پر بھی

مالیگاؤں 2008بم دھماکہ : ملزمین کے خلاف UAPA کے تحت چلےگا مقدمہ

مالیگاؤں 2008 بم دھماکہ کے معاملے میں ایک اسپیشل کورٹ نے کہا کہ اس کیس کے تمام ملزمین، بشمول کرنل پروہت اور سادھوی پرگیہ سنگھ کو دہشت گردی مخالف قانون UAPA کے تحت مقدمہ کا سامنا کرنا پڑےگا۔ ملزمین کی طرف سے دائر درخواست کو مسترد کرتے ہوئے عدالت نے سنیچر کویہ فیصلہ سنایا۔

کشمیر بلدیاتی انتخاب: بائیکاٹ سے بی جے پی کو فائدہ،کشمیر میں اپنی جیت کا کھاتہ کھولنے میں کامیاب

جموں وکشمیر میں رواں ماہ 4 مرحلوں میں ہونے والے بلدیاتی انتخابات سے دو اہم علاقائی جماعتوں نیشنل کانفرنس اور پیپلز ڈیموکریٹک پارٹی (پی ڈی پی) کی دوری وادئ کشمیر میں اب تک ایک جیت کے لئے تشنہ بھارتیہ جنتا پارٹی (بی جے پی) کے لئے بیساکھی ثابت ہوئی ہے۔ بی جے پی ایک طویل انتظار اور ...

اسمبلی انتخابات 2018: بی جے پی کی پہلی فہرست جاری، چھتیس گڑھ میں 77، تلنگانہ میں 38 اورمیزورم کے 13 امیدواروں کا اعلان

پانچ ریاستوں میں ہونے والے اسمبلی انتخابات کے لئے بی جے پی نے چھتیس گڑھ، تلنگانہ اورمیزورم ریاست کے لئے امیدواروں کی پہلی فہرست جاری کردی ہے۔ چھتیس گڑھ کی 90 سیٹوں میں سے 77 سیٹوں پر امیدواروں کے نام کا اعلان کیا گیا ہے۔ وہیں تلنگانہ کی 38 اور میزورم کی 13 سیٹوں پربھی امیدواروں کا ...

مسافروں کوطیاروں میں پروازکے وقت بھی انٹرنیٹ سروس جلد ملے گی

شہری ہوابازی کے وزیرسریش پربھونے کل کہاہے کہ حکومت گھریلو پرواز میں مسافروں کو انٹرنیٹ کی سروس فراہم کرنے کی سمت میں سنجیدگی سے کام کر رہی ہے۔مسٹر پربھو نے ہفتہ کو ٹویٹ کرکے کہا کہ حکومت اس سمت میں کام کر رہی ہے تاکہ مسافروں کوجلدسے جلد یہ سہولت فراہم کرائی جاسکے۔

محبت اورنفرت کے درمیان مقابلہ ،ساورکرنے انگریزوں سے معافی مانگی تھی دلتوں اورمسلمانوں کوڈرایاجارہاہے راہل گاندھی نے اویسی کوبھی نشانہ بنایا،کہا،مجلس مودی کی مددکررہی ہے

صدر کانگریس راہل گاندھی نے کہا ہے کہ ملک میں دو طرح کے نظریات کے درمیان لڑائی ہورہی ہے۔ ایک طرف وہ لوگ ہیں جواس ملک کو باٹنے کا کام کر رہے ہیں تو دوسری طرف وہ لوگ ہیں جو ملک کو جوڑنے کاکام کر رہے ہیں ، ایک نظریہ نفرت پھیلانے کاہے اور دوسرا نظریہ محبت اور امن کا ہے۔

ملک کے مفادمیں متحد رہنے کانگریس جے ڈی ایس قائدین کا فیصلہ،14سال بعد دیوے گوڈا اور سدرامیا کی ایک ساتھ اخباری کانفرنس

آنے والے لوک سبھا انتخابات میں سیکولر سیاسی طاقتوں کو مضبوط کرنے کی غیر معمولی پہل کرتے ہوئے آج کانگریس اور جے ڈی ایس قیادت نے اتحاد کا غیر معمولی پیغام دیا۔