سماج میں مساوات تعلیم سے ہی ممکن،ڈگری کالجوں کے طلبا کو مفت لیاپ ٹاپ کی فراہمی نومبر سے

Source: S.O. News Service | By Shahid Mukhtesar | Published on 22nd September 2017, 11:17 PM | ریاستی خبریں |

بنگلورو، 22ستمبر (ایس او نیوز؍عبدالحلیم منصور) وزیر اعلیٰ سدرامیا نے کہا ہے کہ سماج میں ذات پات کی بنیاد پر جو امتیازات ہیں انہیں تمام طبقات کو تعلیمی مواقع کی فراہمی سے دو ر کیاجاسکتاہے۔ آج بلاری میں ویرا شیوا ودیا وردکاسنگھا کی صد سالہ تقریبات میں حصہ لیتے ہوئے انہوں نے کہاکہ سو سال قبل ہی تعلیم کی اہمیت کو محسوس کرتے ہوئے اس ادارہ کا قیام کیاگیاتھا اور یہاں سے فارغ ہونے والے طلبا نے سماج کی کافی خدمت کی ہے۔آج اس سنگھا کے تحت چلنے والے تعلیمی اداروں میں 22؍ ہزار سے زائد طلبا تعلیم حاصل کررہے ہیں جو کہ خوش آئند بات ہے۔ انہوں نے کہاکہ آج جمہوری نظام کے تحت صرف انہیں ممالک کو پیش رفت حاصل ہوئی ہے جنہوں نے سماج کے تمام طبقات کی یکساں ترقی کیلئے فکر مندی ظاہر کی ہے۔ انہوں نے کہاکہ لنگایت طبقہ کے مذہبی سربراہ بسونا نے مساوات کی بنیاد پر سماج قائم کرنے کی آواز دی تھی۔ آج ضرورت اس بات کی ہے کہ مساوات کے اس پیغام کو عام کیاجائے۔ انہوں نے کہاکہ ذات پات کے نظام کے تحت سماج کے کمزور طبقات کو دانستہ طور پر تعلیم سے محروم رکھا گیا ، خاص طور پر خواتین میں ناخواندگی ایک بہت بڑا چیلنج بن کر سامنے آئی ہے۔ گزرتے وقت کے ساتھ خواتین کو تعلیمی پیش رفت میں آگے بڑھانے کیلئے تعلیمی اداروں کی فکر مندی کو انہوں نے خوش آئند قرار دیا اور کہاکہ تعلیمی میدان میں حاصل نئے نئے مواقع کا استفادہ کرتے ہوئے طلبا اپنے مستقبل کو سنواریں اور ملک کیلئے اپنے آپ کو ایک سود مند شہری میں تبدیل کریں۔ وزیر اعلیٰ نے کہاکہ ریاستی حکومت کا منشاء یہی ہے کہ سماج کے کمزور طبقات بشمول دلت ، پسماندہ طبقات ، اقلیتیں اور خواتین ،کتابوں ، یونیفارم ، فیس وغیرہ نہ ہونے کی وجہ ئے تعلیم سے محروم نہ رہیں ، اسی مقصد کو ذہن میں رکھتے ہوئے حکومت نے پرائمری اسکولوں میں گرم کھانے کی اسکیم رائج کی اور اس کی وجہ سے شرح خواندگی میں اضافہ صد فیصد تک ہوپایا ہے، وزیر اعلیٰ نے اس موقع پر اعلان کیا کہ ریاست کے سبھی سرکاری اور ایڈڈ ڈگری کالجوں میں پہلے سال میں داخلہ لینے والے طلبا کو حکومت کی طرف سے عمدہ معیاری لیاپ ٹاپ مفت فراہم کیاجائے گا۔ نومبر سے یہ اسکیم رائج کی جائے گی، اس سے 1.96لاکھ طلبا استفادہ کرسکیں گے۔ اس موقع پر ویرا شیوا لنگایت مہاسبھا کے صدر الم بسوراج ، سابق وزیر شامنور شیوشنکرپا، کے پی سی سی کارگذار صدر ایس آر پاٹل ، وزیر برائے اعلیٰ تعلیمات بسوراج رایا ریڈی اور دیگر موجود تھے۔

ایک نظر اس پر بھی

پریش میستا قتل معاملہ کی این آئی اے سے تحقیقات کا مطالبہ، منصفانہ جانچ نہیں ہوئی تو ساحلی علاقہ جل اٹھے گا: شو بھا کرند لاجے کا انتباہ

بھارتیہ جنتا پارٹی ( بی جے پی ) کی ریاستی جنرل سکریٹری ورکن پارلیمان شو بھا کرند لاجے نے خبردار کیا ہے کہ اگر ہوناور کے پریش میستا قتل کی تحقیقات ریاستی حکومت مناسب طریقہ سے نہیں کرے گی تو ساحلی علاقہ جل اٹھے گا۔

ہوناور فرقہ وارانہ فسادات اورپریش میستا کی موت کا معاملہ ؛ فورنسک رپورٹ سے بی جے پی اور سنگھ پریوار کو زبردست جھٹکا

ہوناور میں معمولی سڑک حادثے سے شروع ہونے والا جھگڑا باقاعدہ فرقہ وارانہ فساد میں بدلنے اور اطراف کے علاقوں تک تشدد پھیل جانے کے پس منظر میں پریش میستا نامی نوجوان کی ہلاکت کو مسلم دہشت گردی سے جوڑنے کی جو سازش اور کوشش بی جے پی اور سنگھ پریوار کے لیڈروں کی طرف سے کی گئی تھی، اسے ...

خواتین کو اقتصادی اور سیاسی شعبوں میں آگے لانا ضروری۔ نوہیرا مہیلا امپاورمنٹ پارٹی کی کرناٹک یونٹ کے افتتاح کے موقع پر پارٹی صدر کا خطاب

آل انڈیا مہیلا امپاورمنٹ پارٹی (ایم ای پی) کی صدر وہیرا گروپ کی چیف ایکزی کیٹیو افسر ڈاکٹر نوہیرا شیخ نے کہاکہ خواتین میں خود اعتمادی پیدا کرتے ہوئے انہیں سیاسی،معاشی اور اقتصادی شعبوں میں مضبوط اور مستحکم بنانے کی اشد ضرورت ہے۔