2ہزار کروڑ روپئے امداد کیلئے مرکز سے گزارش :ڈاکٹر جی پرمیشور

Source: S.O. News Service | By Shahid Mukhtesar | Published on 26th August 2018, 12:58 PM | ریاستی خبریں |

بنگلورو،26؍اگست(ایس او نیوز) نائب وزیر اعلیٰ ڈاکٹر جی پرمیشور نے کہا ہے کہ کورگ میں بارش سے ہوئے نقصان سے نپٹنے کیلئے مرکز سے پہلے مرحلے میں 2ہزار کروڑ روپئے مالی امداد دینے کی گزارش کی گئی ہے۔ کیرلا کے متاثرین کیلئے سدھارتھ تعلیمی اداروں کی جانب سے ضروری اشیاء کے ٹرکوں کوبروز ہفتہ سداشیونگر کے بی ڈی اے کوارٹرس سے ڈاکٹر جی پرمیشور کی پتنی کنمنی پرمیشور کے روانہ کرنے کے بعد بات کرتے ہوئے پرمیشور نے کہا کہ مرکزی حکومت نے کورگ سے بے توجہی برتی ہے ۔ این ڈی آر ایف کی جانب سے جو بھیجا گیا ہے اسے چھوڑ کر مرکز کی جانب سے ایک کوڑی کی بھی مدد نہیں ملی ہے ۔

انہوں نے کہا کہ مرکزی وزیر دفاع نرملا سیتا رمن کی جانب سے کورگ کا جائزہ لیتے وقت ضلع نگران کار وزیر پر ان کا برسنا ٹھیک نہیں ۔ اس معاملے میں کوئی بھی سیاست نہ کرے۔ پرمیشور نے کہا کہ نرملا سیتارامن ریاست سے راجیہ سبھا کے لئے منتخب ہوئی ہیں۔ انہیں خود اراکین پارلیمان کے ایک وفد کی قیادت کرتے ہوئے وزیر اعظم سے امداد کی گزارش کرنی چاہئے تھی ۔ لیکن انہوں نے خود اس علاقہ کا دورہ دیر سے کیا اور ساتھ ہی یہاں کے نگران کار وزیر پر برس پڑیں ، یہ انتہائی غیر مناسب عمل ہے۔

انہوں نے کہا کہ کیرلا کے نقصانات کااندازہ لگانے سے پہلے ہی جس طرح وزیر اعظم نے رقم جاری کی تھی اسی طرح ہمیں بھی جاری کرنا چاہئے تھا ۔ لیکن انہوں نے عدم دلچسپی ظاہر کی ہے ۔ انہوں نے کہا کہ کورگ میں ہوئے نقصان کی بھر پائی کیلئے فی الحال 2ہزار کروڑ روپئے جاری کرنے مرکز سے گزارش کی گئی ہے ۔ انہوں نے کہا کہ کیرلا مسلسل بارش سے بہت زیادہ متاثر ہوا ہے ۔ پوری ریاست کی از سر نوتعمیر کی ضرور ت آن پڑی ہے ۔ کیرلا کی صورتحال پر پورا ملک غمگین ہے ۔ امدادکی ایک ندی بہہ رہی ہے۔ عام افراد اپنی حیثیت کے مطابق امداد کررہے ہیں ،مرکزی حکومت اور ریاستی حکومت کے بشمول تمام ریاستوں نے امداد کے لئے ہاتھ بڑھایا ہے ۔ بی بی ایم پی کی جانب سے بھی ایک کروڑ روپئے دےئے گئے ہیں۔ 

ایک نظر اس پر بھی

کرناٹک میں کماراسوامی حکومت اعتماد کا ووٹ حاصل کرنے میں ناکام؛ کرناٹک کا ناٹک بالاخر ہوگیاختم

کرناٹک اسمبلی میں کئی دنوں تک لگاتار پس و پیش کی صورت حال برقرار رہنے کے بعد آج آخر کار فلور ٹیسٹ ہوا اور کماراسوامی کی حکومت اعتماد کا ووٹ حاصل کرنے میں ناکام رہی۔ کرناٹک کی جے ڈی ایس-کانگریس مخلوط حکومت کے حق میں 99 ووٹ ڈالے گئے جبکہ اس کی مخالفت میں 105 ووٹ پڑے۔ واضح رہے کہ ...

منگلورو۔بنگلوروٹریک پرچٹان توڑنے کا کام مسلسل جاری۔ دن کے وقت چلنے والی ریل گاڑیاں 24جولائی تک کے لئے منسوخ

انی بندا کے قریب سبرامنیا سکلیشپور ریلوے ٹریک پر ایک بڑی چٹان لڑھکنے کا خطرہ پیدا ہوگیا تھا۔ اس حادثے کو روکنے کے لئے پہاڑی تودے کو دھماکے سے توڑنے کاکام پچھلے دو تین دن سے جاری ہے جس کے لئے ہیٹاچی مشین کے کامپریسر اور بارود کا استعمال کیا جارہا ہے۔ لیکن تیز برسات کی وجہ سے دن ...

کرناٹک: بی ایس پی ارکان اسمبلی کمارسوامی کے حق میں ووٹ کریں گے:مایاوتی

کرناٹک میں کانگریس اورجے ڈی ایس کی مخلوط حکومت رہے گی یا جائے گی اس کا فیصلہ آج ہو جائے گا ۔ برسر اقتدار اتحاد کے ارکان اسمبلی کو بی جے پی ٹوڑنے کی کوشش کر رہی ہے لیکن اس بیچ بی ایس پی سپریموں نے کہا ہے کہ اس کی پارٹی کے ارکان اسمبلی کمارسوامی حکومت کے حق میں ہی ووٹ ڈالیں گے ۔ یہ ...