مہاراشٹرامیں کسانوں کا احتجاج ختم ، حکومت نے مطالبات تسلیم کیے 

Source: S.O. News Service | By Shahid Mukhtesar | Published on 13th March 2018, 10:55 AM | ملکی خبریں |

ممبئی 12مارچ (ایس او نیوز؍ آئی این ایس انڈیا ) مہاراشٹر میں دیویندر فڑنویس حکومت اپنے مطالبات کو لے کر احتجاج کررہے ہزاروں کسانوں کے مطالبات کو پورا کرنے کے لئے قائل ہو گئی ہے۔ کسانوں کے وفد سے مذاکرات کے بعد پیر کے دوپہر ریاستی حکومت کے وزیر پاٹل نے بتایاہے کہ حکومت نے تحریری طور پر اپنی منظوری دے دی ہے۔ سی ایم فڑنویس نے کہاہے کہ چیف سکریٹری اس میں مزید کارروائی کی نگرانی کریں گے۔غور طلب ہے کہ کسانوں کی ریلی اتوار کو ہی ممبئی کے آزاد میدان تک پہنچ گئی تھی ۔کسانوں کی اہم مطالبات میں قرض معافی اورفصلوں کی صحیح شرح شامل ہے ۔ ذرائع کے مطابق حکومت نے قرض معافی کا مطالبہ مان لیا ہے۔ حکومت کسانوں کے 1.5 لاکھ تک کے قرض کومعاف کرے گی اور اس کی میعاد جون 2017 کی رکھی ہے جو کہ پہلے جون 2016 رکھی گئی تھی۔ حکومت کی یقین دہانی کے بعدکسانوں نے اب اپنا احتجاج واپس لے لیاہے۔ آل انڈیا کسان سبھا کی جانب سے منعقد ہ اس ریلی میں مارکسی کمیونسٹ پارٹی(سی پی ایم)کے کسان دھڑے کے کسان سرخ ٹوپی پہنے، ہاتھوں میں سرخ پرچم لیے ڈرم بجاتے ہوئے ریلی میں شامل ہوئے۔کسانوں نے طالب علموں کے بورڈ امتحانات میں کسی قسم کا خلل پیدا نہ ہو اس بات کو ذہن میں رکھتے ہوئے رات (پیر) کو دو بجے ہی ودیا وہار کے سومیا میدان سے تاریخی آزاد میدان کے لئے روانہ ہو گئے۔ کسانوں کی طرف سے پیر کے دوپہر کو مہاراشٹر اسمبلی کا محاصرہ کرنے کے منصوبہ کو دیکھتے ہوئے حکومت نے کسانوں کے ساتھ تمام معاملات پر بات چیت کرنے کے لئے آنا فانا میں چھ رکنی کابینہ کمیٹی قائم کر دی تھی۔ کسان لیڈر اجیت نوالے نے کہا کہ ہمارے اہم مطالبات میں جون 2017 میں اعلان ہوئے کسان کے قرض معافی کو لاگو کرنا ہے، جس سے کسان مکمل طور پر قرض سے آزادہو سکیں۔ ریلی کے ممبئی پہنچتے ہی کئی سیاسی جماعتوں نے اس کی حمایت بھی کی، اقتدار میں شامل شیوسینا کی جانب سے آدتیہ ٹھاکرے اور ایک ناتھ شندے نے کسانوں سے خطاب کیا۔ممبئی میونسپل نے آزاد میدان میں کسان مورچہ کے لئے خاص انتظامات کیے ہیں۔ 40 سیٹوں والا ٹوالیٹ، پانی کے 4 ٹینکر، اور ایمبولینس کا انتظام کیا گیا ہے۔ آزاد میدان کے ارد گرد کے عوامی بیت الخلاء اگلے دو دن تک مفت سروس دینے کی ہدایات کی گئی ہیں، ساتھ ہی آزاد میدان میں صاف صفائی کے لئے اضافی لوگوں کو بھی مامور کیا گیا ہے۔ مہاراشٹر کانگریس کے صدر اشوک چوہان، رادھا کرشنن وکھے پاٹل، پرتھوی راج چوہان اور نیشنلسٹ کانگریس پارٹی کے صدر شرد پوار، دھنجے منڈے اورجتندریاودسمیت کانگریس لیڈروں نے کسانوں کے مارچ کی حمایت کرنے کا اعلان کیا ہے۔ مہاراشٹر نونرمان سینا کے سربراہ راج ٹھاکرے اوریواسینا کے صدر آدتیہ ادھو ٹھاکرے نے اتوار کی شام ذاتی طور پر حاضر ہو کر کسانوں کا خیر مقدم کیاہے۔

ایک نظر اس پر بھی

سونیا، راہل، مکھرجی، منموہن نے راجیو گاندھی کو خراج عقیدت پیش کیا

سابق وزیر اعظم راجیو گاندھی کی 27 ویں برسی پر سابق صدر پرنب مکھرجی، سابق وزیر اعظم منموہن سنگھ، کانگریس کی سینئر لیڈر سونیا گاندھی، پارٹی صدر راہل گاندھی اور ان کی بہن پرینکا گاندھی نے آج انہیں خراج عقیدت پیش کیا ہے ۔