چار برگشتہ کانگریس اراکین کو نااہل قرار دینے سدرامیا کی عرضی، بی جے پی کی طرف سے اراکین اسمبلی کی خرید وفروخت کو بے اثر کرنے سدرامیا کا حربہ

Source: S.O. News Service | By Shahid Mukhtesar | Published on 12th February 2019, 9:24 AM | ریاستی خبریں |

بنگلورو،11؍جنوری(ایس او نیوز) بی جے پی کی طرف سے اراکین اسمبلی کی وفاداری خریدنے اور ان کو مستعفی کرواکر ریاستی مخلوط حکومت کو اقلیت میں لانے کی کوششوں کو جہاں خود یڈیورپانے مبینہ آڈیو سی ڈی کے منظر عام پر آنے کے بعد بھاری نقصان پہنچایا ہے وہیں بی جے پی کو ہونے والے نقصان کودوگنا کرنے کے لئے آج سابق وزیراعلیٰ اور کانگریس لیجسلیچر پارٹی لیڈر سدرامیا نے چار باغی کانگریس اراکین اسمبلی کو نااہل قرار دینے کے لئے اسپیکر رمیش کمار سے نمائندگی کردی۔

 اسمبلی کی کارروائی ملتوی ہونے کے بعد سدرامیا نے نائب وزیراعلیٰ ڈاکٹر جی پرمیشور اور کے پی سی سی صدر دنیش گنڈو راؤ کے ہمراہ اسپیکر رمیش کمار سے ملاقات کی اور انہیں چار اراکین اسمبلی کے خلاف 82 صفحات پر مشتمل شکایت پیش کی اور کہاکہ انہیں بارہا کانگریس لیجسلیچر پارٹی میٹنگ میں مدعو کیا گیا اور شرکت کے لئے باضابطہ وہپ جاری کیاگیا اس کے باوجود بھی یہ چاروں اراکین سی ایل پی میٹنگوں میں غیر حاضر ی کے ساتھ اسمبلی اجلاس کی کارروائیوں سے بھی خود کو غیر حاضر رکھا۔ پارٹی کو شبہ ہے کہ یہ چاروں پارٹی مخالف سرگرمیوں میں لگے ہوئے ہیں اس لئے کانگریس لیجسلیچر پارٹی سے ان چاروں کو معطل بھی کردیاگیا ہے، اسپیکر سے پارٹی گزارش کرتی ہے کہ انسداد پارٹی بدلی قانون کی دفعات کے مطابق ان چاروں کو نااہل قرار دیا جائے۔

ریاست کے سیاسی حلقوں میں قیاس کیاجارہاتھا کہ آج شام تک یہ چاروں اراکین اسمبلی مستعفی ہوکر بی جے پی کے حق میں حمایت کا اعلان کرسکتے ہیں، لیکن سدرامیا نے اس سلسلے میں چاروں اراکین کو نااہل قرار دینے کی اپیل کرکے ان اراکین کے استعفوں کو بے مقصد بنادیا ہے۔ اسپیکر نے سدرامیا کی شکایت کو حاصل کرکے اس سلسلے میں مناسب جانچ کا تیقن دلایا ہے۔

ایک نظر اس پر بھی

محمد محس کی معطلی کا معاملہ طول پکڑ گیا، الیکشن کمیشن کے سکریٹری کے خلاف شہر میں مجرمانہ شکایت درج

وزیراعظم مودی کے ہیلی کاپٹر کی تلاشی کو لے کر اپنی فرض شناسی کا ثبوت پیش کرنے والے کرناٹک کیڈر کے آئی اے ایس افسر محمد محسن کی غیر ضروری معطلی نے خود الیکشن کمیشن کوگھیرے میں لے لیاہے ۔ محمد محسن پر ہوئی زیادتی کے خلاف آواز اٹھاتے ہوئے بنگلور جنادھیکار سنگھرش پریشد نے الیکشن ...

بھٹکل میں بی کے ہری پرساد کا بی جے پی اور مودی پر راست حملہ، کہا؛ پسماندہ طبقات کومزید کمزور کرنے کی سازش رچی جارہی ہے

بی جے پی بھلے ہی اپنے آپ کو اقلیت مخالف پارٹی کے طور پر پیش کرتی ہو، مگر  دیکھا جائے تو یہ پارٹی حقیقتاً پسماندہ طبقات، دلت اور ادیواسیوں کو  مزید  کمزور کرنے کی سازش میں لگی ہوئی ہے اور صرف ایک طبقہ کو برسراقتدار پر لانے میں کوشاں ہے۔ یہ بات  آل انڈیا کانگریس کمیٹی (اے آئی ...

پارلیمینٹ گلبرگہ کے مسلمانوں سے کھڑگے کے حق میں قیمتی ووٹ دینے ڈاکٹر اصغر چلبل کی اپیل 

ڈاکٹراصغرچلبل سابق صدر گلبرگہ اربن ڈیولوپمینٹ اتھارٹی نے ایک صحافتی بیان میں کہا ہے کہ ملک کے موجودہ پارلیمانی انتخابات نہایت اہمیت کے حامل ہیں ۔2019کے پارلیمانی انتخابات مسلمانوں کے لئے آر پار کی لڑائی کی طرح سمجھے جارہے ہیں ۔پچھلے پانچ سالوں میں بی جے پی سرکار میں دلتوں ، ...

سدارامیا کے دوبارہ وزیراعلیٰ بننے میں غلط کیا ہے؟ کس کے نصیب میں کیا لکھا ہے کوئی نہیں جانتا : کمار سوامی

سدارامیا کے دوبارہ وزیر اعلیٰ بننے میں غلط کیا ہے ؟ اس قسم کا چونکانے والا بیان ریاستی وزیر اعلیٰ کمار سوامی نے دیا ہے ۔ ضلع کے مدے بہال تعلقہ میں اخباری نمائندوں سے انہوں نے کہا کہ کس کے نصیب میں کیا لکھا ہے ، کسی کو معلوم نہیں ہے ۔