کونسل کیلئے سی ایم لنگپا کا نام دوبارہ پیش ہوگا

Source: S.O. News Service | By Jafar Sadique Nooruddin | Published on 19th May 2017, 2:13 AM | ریاستی خبریں |

بنگلورو:18/مئی(ایس او نیوز) ریاستی لیجسلیٹیو کونسل کی رکنیت کیلئے رام نگرم کے سابق رکن اسمبلی سی ایم لنگپا کے نام کو منظوری دینے سے گورنر واجو بھائی والا کے انکار کے بعد ریاستی حکومت ایک بار پھر ان کے نام کی سفارش کرنے پر سنجیدگی سے غور کررہی ہے۔کل گورنرنے ریاستی حکومت کی طرف سے تجویز کئے گئے دو ناموں کو منظور کرتے ہوئے سی ایم لنگپا کے نام کو تعلیمی زمرہ کیلئے ناقابل غور قرار دیتے ہوئے مسترد کردیا۔ گورنر کے اس فیصلے کے بعد آج ریاستی حکومت کی طرف سے ایک بار پھر یہ کوشش تیز ہوگئی کہ دوبارہ ایوان بالا کی رکنیت کیلئے سی ایم لنگپا کے نام کی سفارش کی جائے۔ یاد رہے کہ اس پہلے بی جے پی کے دور اقتدار میں اس وقت کے ایچ آر بھردواج نے کونسل کی رکنیت کیلئے تعلیمی زمرے سے وی سومنا کے نام کو مسترد کردیاتھا۔ اسی طریقہئ کار کو اپناتے ہوئے موجودہ گورنر نے رام نگرم کے سابق رکن اسمبلی سی ایم لنگپا کے نام کی سفارش کو ماننے سے انکار کیا ہے۔

ایک نظر اس پر بھی

اسکولی بچوں کے سوشیل میڈیا استعمال کرنے پر پابندی،پابندی پامال کرنے والوں کو اسکول سے نکال دینے کی تاکید

ریاستی محکمۂ تعلیمات نے کمسن ذہنوں پر سوشیل میڈیا کے اثرات کو دیکھتے ہوئے سختی سے یہ فرمان جاری کیا ہے کہ 13سال کی عمر تک کے بچوں کو سوشیل میڈیا کا استعمال کرنے کی اجازت قطعاً نہ دی جائے۔

مودی حکومت کے انسداد گؤ کشی قانون کو کمار سوامی نے قرار دیا خوش آئند: گائیوں کی دیکھ بھال کیلئے مراکز قائم کرنے کا بھی مشورہ

مرکزی حکومت کی طرف سے کل ملک بھر میں لاگو کئے گئے انسداد گؤ کشی قانون کا سابق وزیراعلیٰ اور ریاستی جنتادل(ایس) صدر ایچ ڈی کمار سوامی نے خیر مقدم کیااور کہاکہ مرکزی حکومت کو چاہئے کہ اس قانون کو نافذ کرنے کے ساتھ ملک بھر میں گائیوں کی دیکھ بھال کیلئے مراکز قائم کرے۔

موسلادھار بارش کی وجہ سے شہر میں عام زندگی متاثر،نشیبی علاقے زیر آب ، دوسو سے زائد درخت اور متعدد بجلی کے کھمبے زمین بوس

شہر میں کل رات ہوئی زبردست بارش کے سبب 200 سے زائد مقامات پر درخت اور بجلی کے کھمبے اکھڑگئے اور ساتھ ہی نہ صرف نشیبی علاقے بلکہ چند مشہور ومعروف سرکاری اور دیگر عمارتوں میں بھی بارش کا پانی گھس آیا۔