خاکروبوں کو مستقل ملازمت کا فیصلہ عنقریب: میئر سمپت راج 

Source: S.O. News Service | By Shahid Mukhtesar | Published on 2nd September 2018, 12:06 PM | ریاستی خبریں |

بنگلورو2 ؍ستمبر(ایس او نیوز) شہر میں خاکروبوں کو ملازمت دینے کے متعلق جلد منظوری کا مطالبہ کرتے ہوئے عنقریب وزیر اعلیٰ سے تبادلۂ خیال کیا جائے گا۔ یہ بات شہر کے میئر سمپت راج نے کہی۔ آج بی بی ایم پی گلاس ہاؤز میں خاکروبوں کی سالانہ تقریب میں حصہ لیتے ہوئے انہوں نے کہاکہ خاکروبوں کو مستقل ملازمت اور دیگر سہولتوں کی فراہمی کے لئے پہلے ہی ضروری قدم اٹھائے گئے ہیں۔ ریاستی حکومت سے منظوری کے فوراً بعد تقررات کے اجراء کے کارروائی شروع کی جائے گی۔

اس موقع پر بی بی ایم پی کمشنر منجوناتھ پرساد نے کہاکہ فی الوقت برسر ملازمت خاکروبوں کو تمام سہولتیں فراہم کی گئی ہیں۔ انہوں نے کہاکہ رواں سال چار ہزار خاکروبوں کو مستقل ملازمت فراہم کرنے کے لئے فائل ریاستی حکومت کو روانہ کردی گئی ہے۔ منظوری ملتے ہی ان تمام کو شہر کی حدود میں تعینات کردیاجائے گا۔

شہر میں پاکی صفائی یقینی بنانے والے 324خاکروبوں کواس موقع پر خصوصی اعزازسے سرفراز کیا گیا۔ تقریب میں ڈپٹی میئر پدماوتی نرسمہا مورتی ، حکمران پارٹی لیڈر شیوراج ، بی بی ایم پی کے اعلیٰ افسر منوج مینا، جوائنٹ کمشنر سرفراز خان اور دیگر موجود تھے۔

ایک نظر اس پر بھی

منگلورو:آر ایس ایس پرچارک تربیتی کیمپ میں امیت شاہ کی شرکت۔ سرخ دہشت گردی ، رام مندر، سبریملا اور انتخابات پر ہوئی خاص بات چیت

ملک کی مختلف ریاستوں میں اسمبلی انتخابات کی مصروفیت کے باوجود بی جے پی کے صدر امیت شاہ نے منگلورو میں آر ایس ایس ’ پرچارکوں‘ کے لئے منعقدہ 6 روزہ تربیتی کیمپ کے اختتام سے ایک دن پہلے ’سنگھ نکیتن‘ میں پہنچ نے کے لئے وقت نکالااور تربیتی کیمپ کے شرکاء سے خطاب کیا۔

مشاعروں کو با مقصد بنا کر نفرت کے ماحول کو پیار اور محبت میں بدلا جاسکتا ہے : سید شفیع اللہ

مشاعرے اردو زبان اور ادب کی تہذیب کے ساتھ ساتھ امن اور اتحاد کو فروغ دینے کا ذریعہ بھی ہیں۔ ملک اور سماج کے موجودہ حالات کو بہتر بنانے کیلئے زیادہ سے زیادہ مشاعروں کا انعقاد کیا جائے۔ بنگلورو میں بزم شاہین کے کل ہند مشاعرے میں ان خیالات کا اظہار کیا گیا۔

ٹیپوجینتی منسوخ کرنے کی کوئی تجویز نہیں ہے جواہر لال نہروکی جنم دن تقریب سے وزیراعلیٰ کااظہار خیال

کسانوں کی طرف سے حاصل کردہ زرعی قرضہ معاف کئے جانے کے سلسلہ میں شکوک وشبہات کا شکار نہ ہوں۔ قرضہ وصولی کیلئے کسانو ں کوغیر ضروری طور پر اذیت دی گئی تو بینک منیجرکو بھی گرفتار کیا جاسکتا ہے ۔