چنتامنی دی نیو ہریزن اسکول میں سائنس ایگز بیشن کا کامیاب انعقاد 

Source: S.O. News Service | By Shahid Mukhtesar | Published on 9th January 2017, 3:16 PM | ریاستی خبریں |

چنتامنی:9 /جنوری(محمد اسلم/ایس او نیوز )شہر کے ونائک نگر میں واقع دی نیو ہریزن اسکول میں آج سائنس ایگزبیشن کا انعقاد کیا گیا تھا جسمیں اسکول کے طلباء طالبات نے بڑھ چڑھ کر حصہ لیتے ہوئے بہترین سائنسی نمونوں کو پیش کیا اور ان نمونوں کے تعلق سے سامعین کے سامنے انگریزی میں تشریح کی مہمان خصوصی کے طور پر سابق بلدیہ صدر وینکٹ رونا سوامی کونسلر اللہ بخشء قادری وغیرہ نے شرکت کی ۔

اس موقع پر اسکول میں ہی ایک تقریب منعقد ہوئی جس  سے خطاب کرتے ہوئے اسکول کے سکریٹری عارف اللہ نے کہا کہ تعلیمی و معاشرتی بیداری وقت کا اہم تقاضہ ہے معاشرہ میں بچوں کو بہترین تعلیم سے آراستہ کرنے کیلئے سب سے زیادہ ذمے داری والدین پر ہوتی ہے بچے کا باپ ایک حصے کی ترجمانی کرتا ہے تو دوسرے حصے کی ترجمانی ماں کرتی ہے دونوں ایک گاڑی کے دوپہے ہیں انہوں نے کہا کہ بچے کچی مٹی کی مانند ہوتے ہیں انہیں جس سمت موڑ دیا جائے بڑی آسانی سے مڑجاتے ہیں اس ضمن میں سب سے پہلے گھر اور اساتذہ کو ان کی مثبت رہنمائی کرنی ہوگی وگرنہ معصوم ہونے کے باعث بچوں میں قوت برداشت کا فقدان انہیں بھی منفی قوت کا آلہ کار بنا کر اپنے ساتھ ساتھ سماج کیلئے بھی ناسور بناسکتا ہے قوت برداشت کا فقدان بچوں میں بدرجہ اتم موجود ہوتا ہے اگر صحیح تعلیم اور رہنمائی حاصل نہیں ہوئی تو یہ قوت برداشت انہیں گمراہی کی جانب لے جاتی ہے گیارہ تا تیرہ سال کی عمر وہ عمر ہے جس میں بچے کے اندر بے انتہا صلاحیتیں کروٹ لیتی رہتی ہیں ان کے اندر موجود فنی صلاحیتوں کو پہچاننے میں کامیابی حاصل کرلی تو عین ممکن ہے کہ ان کے مستقبل کا رُخ موڑ دیا جاسکتا ہے اگر انہیں نظر انداز کردیا گیا تو یہ بھی ممکن ہے کہ بچے بری عادتوں کا شکار ہوجائیں۔

بعد ازاں اسکول کی ہیڈ ٹیچر نور صباء میڈم نے بھی خطاب کرتے ہوئے کہا کہ اگر بچوں کو علوم اور فنون کے ڈھانچے میں ڈھالا جائے تو یہ بچے آگے چل کر بہت نام اور ترقی پا سکتے ہیں طلباء و طالبات کے اندر چھپے ہوئے ہنر ،فن اور صلاحیتوں کو اساتذہ علم کے زریعہ نکھار سکتے ہیں ۔سابق بلدیہ صدر وینکٹ رونا سوامی نے بھی اسکول کے تمام کمروں میں رکھے گئے سائنس اینڈ ٹیکنالوجی کے مختلف شعبوں کا معائنہ کرنے کے بعد کہا کہ میں تو یہاں نمائش دیکھنے کو حاضر ہوا تھا لیکن یہاں کے بچوں کی صلاحیتوں کو دیکھ کر میں خود حیرت زدہ رہ گیا۔ ایسے پسماندہ علاقے میں اتنے باصلاحیت بچوں کو دیکھ کر مجھے رشک ہونے لگا غریب علاقوں میں ہی علم و فن کے جوہرنظر آنے لگے ہیں اور بچوں کے اندر قدرت کے بے بہاکرشمہ دیکھنے کو ملتے ہیں۔   سائنس نمائش کو دیکھنے کیلئے کثیر تعدا د میں لوگ آرہے تھے۔اس موقع پر اسکول کے پرنسپال ایوب پاشاہ ہیڈ ٹیچر نور صباء ٹیچرنویدپاشاہ سمیت کئی ٹیچرس اور طلباء کے والدین وغیرہ شریک رہے ۔

ایک نظر اس پر بھی

اسکولی بچوں کے سوشیل میڈیا استعمال کرنے پر پابندی،پابندی پامال کرنے والوں کو اسکول سے نکال دینے کی تاکید

ریاستی محکمۂ تعلیمات نے کمسن ذہنوں پر سوشیل میڈیا کے اثرات کو دیکھتے ہوئے سختی سے یہ فرمان جاری کیا ہے کہ 13سال کی عمر تک کے بچوں کو سوشیل میڈیا کا استعمال کرنے کی اجازت قطعاً نہ دی جائے۔

مودی حکومت کے انسداد گؤ کشی قانون کو کمار سوامی نے قرار دیا خوش آئند: گائیوں کی دیکھ بھال کیلئے مراکز قائم کرنے کا بھی مشورہ

مرکزی حکومت کی طرف سے کل ملک بھر میں لاگو کئے گئے انسداد گؤ کشی قانون کا سابق وزیراعلیٰ اور ریاستی جنتادل(ایس) صدر ایچ ڈی کمار سوامی نے خیر مقدم کیااور کہاکہ مرکزی حکومت کو چاہئے کہ اس قانون کو نافذ کرنے کے ساتھ ملک بھر میں گائیوں کی دیکھ بھال کیلئے مراکز قائم کرے۔

موسلادھار بارش کی وجہ سے شہر میں عام زندگی متاثر،نشیبی علاقے زیر آب ، دوسو سے زائد درخت اور متعدد بجلی کے کھمبے زمین بوس

شہر میں کل رات ہوئی زبردست بارش کے سبب 200 سے زائد مقامات پر درخت اور بجلی کے کھمبے اکھڑگئے اور ساتھ ہی نہ صرف نشیبی علاقے بلکہ چند مشہور ومعروف سرکاری اور دیگر عمارتوں میں بھی بارش کا پانی گھس آیا۔