لوک سبھا انتخاب لڑنے سے چلوورایا سوامی کا انکار

Source: S.O. News Service | By Shahid Mukhtesar | Published on 27th August 2018, 11:29 PM | ریاستی خبریں |

بنگلورو،27؍اگست(ایس او نیوز) سابق ریاستی وزیر اور جنتادل (ایس) چھوڑ کر کانگریس میں شامل ہونے والے چلووارایا سوامی نے لوک سبھا انتخابات لڑنے سے صاف انکار کردیا ہے، اخباری نمائندوں سے بات چیت کرتے ہوئے انہوں نے کہاکہ سابق وزیراعلیٰ سدرامیا سے انہوں نے آج ہی بات چیت کی ہے اس بات چیت کے دوران انہوں نے واضح کردیا ہے کہ وہ آنے والے لوک سبھا انتخابات میں ہرگز حصہ نہیں لیں گے۔

انہوں نے کہاکہ اپنی سیاسی زندگی میں انہوں نے رکن اسمبلی، وزیر اور رکن پارلیمان یہ تینوں رول ادا کرچکے ہیں ، اسی لئے دوبارہ وہ ایسا کوئی فیصلہ نہیں کریں گے جس کے لئے انہیںآنے والے دنوں میں زیادہ قیمت چکانی پڑے۔ سابق وزیر اعلیٰ سدرامیا کی طرف سے دوبارہ ریاست کے وزیر اعلیٰ بننے کی خواہش کے متعلق چلوورایا سوامی نے کہاکہ ایسی خواہش رکھنے میں حرج ہی کیا ہے، پانچ سال ریاست میں بہترین انتظامیہ فراہم کرنے کے بعد اگر سدرامیا یہ توقع کرتے ہیں کہ ریاستی عوام انہیں خدمت کا دوبارہ موقع فراہم کریں گے اس پر کسی کو کوئی اعتراض کیوں کر ہو۔ لوک سبھا انتخابات میں کانگریس اور جنتادل (ایس) کے درمیان مفاہمت کی خبروں پر چلوورایا سوامی نے کہاکہ یہ فیصلہ دونوں پارٹیوں کے مرکزی قائدین کریں گے۔ 

ایک نظر اس پر بھی

سابق وزیراعظم دیوے گوڈا کا بھٹکل دورہ؛ کہا، جمہوریت خطرے میں ہے، اُسے بچانے کے لئے ہر شہری کو آگے آنا ہوگا

اس بار کے انتخابات سب سے زیادہ اہم اس لئے  ہے کہ مودی کے زیر اقتدار ملک کی جمہوریت کو خطرہ لاحق ہوگیا ہے۔جب سے مودی ملک کے وزیراعظم  بنے ہیں ملک کے سرکاری جمہوری اداروں میں  دخل اندازی سے  عدالت تک محفوظ نہیں ہے، ریزروبینک آف انڈیا  ہو ، انفورسمنٹ ڈائرکٹوریٹ ہو، سی بی آئی ...

بنگلور سے شموگہ اور بھدراوتی لے جانے کے دوران دوکروڑ کی رقم ضبط؛ گاڑی کے ایک ٹائر میں چھپا کر رکھی گئی تھی رقم

الیکشن کا ضابطہ اخلاق لاگو ہونے کے بعد انتخابی قوانین کی خلاف ورزیوں پر نظر رکھنے والے دستے نے کرناٹکا میں اب تک غیر محسوب رقم اور دیگر اشیاء جو ضبط کی ہے اس کی مالیت کا اندزاہ 83کروڑ روپے لگایا گیا ہے۔

الیکٹرانک ووٹنگ مشینیں سخت نگرانی میں اسٹرانگ رومس منتقل

جنوبی کرناٹک کے 14 پارلیمانی حلقوں میں کل پہلے مرحلے کی پولنگ کے دوران ڈالے گئے ووٹ الیکٹرانک ووٹنگ مشینوں میں قید ہیں ، اور ان الیکٹرانک ووٹنگ مشینوں کو مرکزی دستوں کی سیکورٹی کے تحت اسٹارنگ رومس میں قید کردیا گیا ہے۔

ملک میں بی جے پی کی لہر اور جال بالکل نہیں ہے مودی انتظامیہ کارپورٹ کارڈ فیل ہوگیا : دنیش گنڈو راؤ

ملک کے کسی بھی علاقہ میں وزیر اعظم نریندر مودی کی کوئی لہر بالکل نہیں ہے ۔مودی لہر کا جھانسہ دے کر عوام کو جال میں پھانسنے کی کوشش بی جے پی کر رہی ہے ۔یہ باتیں کے پی سی سی کے صدر دنیش گنڈو راؤ نے کہی ہیں ۔آ

میں عہدۂ وزیر اعلیٰ کا دعویدار ضرور ہوں ، لیکن اب نہیں : سدرامیا

 سابق وزیر اعلیٰ اور ریاست میں حکمران اتحاد کی رابطہ کمیٹی کے چیرمین سدرامیا نے دوبارہ وزیر اعلیٰ بننے کے متعلق ا پنے بیان کا دفاع کیا اور کہا ہے کہ وہ سرگرم سیاست کا حصہ ہیں کوئی سنیاسی نہیں۔ سیاسی امنگوں کا اظہار کرنے سے انہیں کوئی روک نہیں سکتا۔