مودی کابینہ میں ردوبدل ، گوئل کو وزارت مالیات کا عارضی چارج

Source: S.O. News Service | By Shahid Mukhtesar | Published on 16th May 2018, 12:20 AM | ملکی خبریں |

نئی دہلی،15؍مئی ( ایس او نیوز؍آئی این ایس انڈیا ) ریلوے کے وزیر پیوش گوئل کو خزانہ اور کارپوریٹ امور کے وزارت کا عارضی چارج سونپا گیا ہے جبکہ محترمہ اسمرتی ایرانی سے وزارت اطلاعات و نشریات لے کر کرنل راجیہ وردھن سنگھ راٹھور کو اس کا آزادانہ چارج دیا گیا ہے۔

صدارتی محل سے آج رات یہاں جاری ایک سرکاری ریلیز میں بتایا گیا کہ وزیر خزانہ ارون جیٹلی کے صحت مند نہ ہونے کی وجہ سے ان کی غیر موجودگی میں مسٹر گوئل ریلوے اور کوئلہ کے علاوہ خزانہ اور کارپوریٹ امور کے وزارت کا اضافی کام دیکھیں گے ۔

ریلیز کے مطابق وزارت اطلاعات و نشریات کے وزیر مملکت اور کھیل اور نوجوانوں کے امور کے وزیر مملکت (آزادانہ چارج) کرنل راٹھور کو اطلاع نشریات کی وزارت کا بھی آزادانہ چارج دیا گیا ہے جبکہ محترمہ ایرانی اب صرف کپڑا وزارت کا کام دیکھیں گی۔

پینے کے پانی اور صفائی ستھرائی صحت کی وزارت میں وزیر مملکت ایس ایس آہلووالیہ کے محکمہ کو تبدیل کر کے انہیں الیكٹرانكس اور انفارمیشن ٹیکنالوجی وزیر مملکت بنایا گیا ہے۔ جبکہ مسٹر کے جے الفانسو کو الیكٹرانكس اور انفارمیشن ٹیکنالوجی محکمہ میں وزیر مملکت کی ذمہ داری سے آزاد کرکے صرف سیاحت کے وزیر مملکت (آزادانہ چارج) رکھا گیا ہے

غور طلب ہے کہ مسٹر جیٹلی کا آج یہاں کل آل انڈیا انسٹی ٹیوٹ آف میڈیکل سائنس (ایمس) میں گردے کا ٹرانسپلانٹ کیا گیا جو کامیاب رہا۔ مسٹر جیٹلی کو طویل عرصہ تک کام سے دور رہنا پڑے گا۔

ایک نظر اس پر بھی

مسلم پرسنل لاء بورڈکاوفدلاء کمیشن کے سربراہ سے ملاقات کرے گا

ل انڈیا مسلم پرسنل لا بورڈ کی طرف سے جاری ایک اخباری بیان میں بتایا گیا کہ لا کمیشن آف انڈیا نئی دہلی کے چیرمین جسٹس بلبیر سنگھ چوہان کے مطالبہ پر مسلم پرسنل لا بورڈ کا ایک مؤقر وفد کل مؤرخہ ۲۱؍مئی ۲۰۱۸ء کو دن کے بارہ بجے بورڈ کے نائب صدر حضرت مولانا سید جلال الدین عمری صاحب کی ...

لندن میں سنگاپور کے پاسپورٹ پر رہ رہا نیرو مودی: ای ڈی ذرائع 

ڈائمنڈ کاروباری نیرو مودی اور ان کے خاندان کو کروڑوں روپے کے پنجاب نیشنل بینک فراڈ کیس کی تحقیقات میں شامل ہونے کے لئے نافذ کرنے والے ای ڈی کی طرف سے سمن جاری کئے جانے کے با وجود مافیا مودی نے ہدایات کو نظر انداز کرتے ہوئے بیرون ملک رہنا تو دور وہ تفتیش کاروں کی پہنچ سے بھی دور ...