بوڈو تنظیموں کا بی جے پی کو انتباہ ، بوڈولینڈبنائیں، ورنہ 2019 میں بوڈو کمیونٹی کی حمایت نہیں 

Source: S.O. News Service | By Jafar Sadique Nooruddin | Published on 3rd December 2018, 2:26 AM | ملکی خبریں |

نئی دہلی: 2/دسمبر (ایس او نیوز/آئی این ایس انڈیا)قیام امن کے عمل میں شامل ہوئے ایک بوڈوطلباء تنظیم اورایک باغی گروپ نے ایک طرح سے بی جے پی کو خبردار کیا ہے کہ اگر مرکزی اور ریاست کی بی جے پی حکومتیں2019 کے لوک سبھا انتخابات سے قبل بوڈو لینڈ بنانے کی سمت میں ٹھوس قدم نہیں اٹھاتا ہے تو اسے بوڈو کمیونٹی کی حمایت گنواناپڑے گی ۔ اگرچہ آسام میں بی جے پی زیر قیادت حکومت کے اتحادی بوڈو لینڈ پیپلز فرنٹ اور ریاستی حکومت نے اس انتباہ کوزیادہ اہمیت نہیں دی ہے ۔ آسام میں 126 اراکین والے اسمبلی میں 60 اراکین بی جے پی کے ہیں۔ بی جے پی یہاں آسام گن پریشد کے 14 ارکان اور بی پی ایف کے 12 ارکان کے ساتھ مل کر حکومت میں ہے۔ بی پی ایف واحدبوڈو سیاسی پارٹی ہے۔ بی پی ایف نے کہا کہ وہ بی جے پی کو حمایت دینا برقرار رکھے گی اور ایک الگ بوڈو لینڈ کا مطالبہ ان کے لیے کوئی مسئلہ نہیں ہے۔ تاہم آل بوڈو اسٹوڈنٹس یونین اور اسلحہ چھوڑ کر امن عمل میں شامل ہونے والے پہلی عسکریت پسند تنظیم ڈیموکریٹک فرنٹ آف بوڈولینڈ (پروگریسو) نے عزم کیا ہے کہ اگر بی جے پی 2019 کے انتخابات سے پہلے علیحدہ ریاست بنانے کے لئے مضبوط قدم نہیں اٹھاتا ہے تو وہ اس پارٹی کو اگلے لوک سبھا انتخابات میں ہرائے گی ۔ اے بی ایس یو اور این ڈی ایف بی (پی) نے بی جے پی پر ’جھوٹی یقین دہانی‘ دینے کا الزام لگاتے ہوئے کہا کہ یہاں تک کہ اب یہ پارٹی بوڈولینڈ کے بارے میں بات کرنے کو بھی تیارنہیں ہے۔اے بی ایس یو کے صدر پرمود بوڈو نے کہا کہ اگر بی جے پی بوڈو کمیونٹی کی حمایت حاصل کرنا چاہتی ہے تو اس کے پاس بوڈو لینڈ کا مسئلہ حل کرنے کے لیے اپریل 2019 تک کا وقت ہے۔ الگ بوڈو لینڈ بنانے کی مانگ 967سے شروع ہوئی تھی۔ 1980 کے آخری دہائی میں بوڈو سیکورٹی فورس کے قیام کے بعد یہ مطالبہ مسلح تصادم میں بدل گیا ۔ یہ ایک انتہاپسند گروپ تھا جو اب این ڈی ایف بی میں بدل گیا ۔آسام کے وزیر خزانہ اور بی جے پی کے سینئر لیڈرنے کہا کہ اے بی ایس یوصرف ایک طالب علم تنظیم ہے اور الگ بوڈو لینڈ پر کوئی بھی بحث صرف بی پی ایف کے ساتھ ہو گی۔ 

ایک نظر اس پر بھی

ریاستیں کشمیری شہریوں کو تحفظ فراہم کرائیں،مرکز نے مشاورت جاری کی

پلوامہ دہشت گردانہ حملے کے پیش نظر ملک کے مختلف حصوں میں جموں کشمیر سے متعلق لوگوں پر حملے کی خبروں کے درمیان مرکزنے جمعہ کی رات تمام ریاستوں کو جموں کشمیر سے متعلق لوگوں کی حفاظت کو یقینی بنانے کی ہدایت دی۔

پی چدمبرم کا طنز، مودی کے رہتے بی جے پی کو کسی کی صلاح کی کیا ضرورت

لیفٹیننٹ جنرل (ریٹائرڈ) ڈی ایس ہڈا کو کانگریس کی جانب سے قومی سلامتی پرمشاورت تیار کرنے کی ذمہ داری دئے جانے کو لے کر وزیر خزانہ ارون جیٹلی کے حملے پر جوابی حملہ کرتے ہوئے کانگریس کے سینئر لیڈر پی چدمبرم نے ہفتہ کو طنز کیا

رابرٹ واڈرا نے عدالت میں عرضی داخل کر معاملے سے منسلک دستاویزات کی کاپیاں مانگی

منی لانڈرنگ کے معاملات میں انفورسمنٹ ڈائریکٹوریٹ (ای ڈی) کی جانچ کا سامنا کر رہے رابرٹ واڈرا نے ہفتہ کو دہلی کی ایک عدالت میں عرضی داخل کر جانچ ایجنسی سے کیس سے منسلک دستاویزات کی کاپیاں مانگی۔

ہماری حکومت بنی تو نیم فوجی دستوں کے جوانوں کو ملے گا شہید کا درجہ: راہل گاندھی

کانگریس صدر راہل گاندھی نے سنیچر کو کہا کہ آئندہ لوک سبھا انتخابات کے بعد ان کی پارٹی کی حکومت بننے پرملک کے لیے جان نچھاور کرنے والے نیم فوجی دستوں کے جوانوں کو بھی ’شہید‘ کا درجہ دینے کا بندوبست کیا جائے گا۔