مسلمانوں کی خوشنودی ،ہندومخالف سیاست کی طرف لوٹ رہی ہے کانگریس:بی جےپی

Source: S.O. News Service | By Shahid Mukhtesar | Published on 13th July 2018, 1:18 AM | ملکی خبریں |

نئی دہلی،12جولائی (ایس او نیوز؍ایجنسی) بھارتیہ جنتاپارٹی (بی جےپی )نے کانگریس رکن پارلیمان اور سابق مرکزی وزیرششی تھرور کے ملک کے ’ہندوپاکستان ‘بننے سے متعلق بیان پر سخت ردعمل ظاہر کرتے ہوئے کہاکہ کانگریس ہندستان اور اسکی جمہوریت کو بدنام کرنے اور ہندؤوں کو دہشت گردی سے جوڑکر خوشنودی حاصل کرنے کی سیاست کی طرف لوٹ رہی ہے ۔

بی جے پی کے ترجمان ڈاکٹر سمبت پاترانے یہاں صحافیوں سے کہاکہ کانگریس صدر راہل گاندھی کی کل مسلم دانشوروں سے ملاقات کے تھوڑی دیر بعد مسٹر تھرورکے اس بیان سے ثابت ہوگیاہے کہ کانگریس صدر راہل گاندھی مندر وں کے درشن اور جنیوپہننے کی فینسی ڈریس مقابلے سے باہر آگئے ہیں اور کانگریس خوشنودی حاصل کرنے کی سیاست کے بغیر اسی طرح سے نہیں رہ سکتی جیسے پانی کے بغیر مچھلی ۔

انھوں نے میڈیا رپورٹوں کا حوالہ دیتے ہوئے کہاکہ ان رپورٹوں میں ذرائع کے حوالہ سے کہاگیاہے کہ مسٹر گاندھی نے مسلم دانشوروں سے مندر کے درشن کی سیاست پر معافی مانگی ہے اور خوشنودی حاصل کرنے کی سیاست کی طرف لوٹنے کا وعدہ کیاہے ۔انھوں نے کہاکہ وہ میڈیاکی رپورٹوں کو سچ مانتے ہیں۔

مسٹر سمبت پاترانے کہاکہ آج کی سب سے اہم خبر یہ آئی ہے کہ ہندستان کی معیشت فرانس کو پیچھے چھوڑ کر دنیاکی چھٹی سب سے بڑی معیشت بن گئی ہے ۔لیکن وزیراعظم نریندرمودی اور بی جے پی سے نفرت کی وجہ سے کانگریس باربار ہندستان اور جمہوریت پر حملہ کرنے سے باز نہیں آرہی ہے ۔

انھوں نے کہاکہ کانگریس پارٹی نے ہندودہشت گردی کا لفظ استعمال کیاتھا اور آج ’ہندوپاکستان ‘کا نیالفظ وضع کیاہے ۔انھوں نے کہاکہ کانگریس پارٹی باربار ہندوؤں پر حملہ کررہی ہے ۔پاکستان دہشت گردی کی حمایت کرنے والا ملک ہے اور ’ہندوپاکستان ‘کہہ کر ہندوؤں پر براہ راست پھر سے دہشت ہونے کا الزام لگایاہے ۔

انھوں نے کہاکہ کانگریس کے لیڈر ہندستان کے آئین کو توڑے جانے کا اندیشہ ظاہر کررہے ہیں لیکن خود کی تاریخ دیکھیں جس میں ایمرجنسی کے سیاہ داغ ہیں جس میں کانگریس نے دوسال تک آئین کو معطل کرکے رکھاتھا۔کانگریس کی حکومت میں ہی ریاستوں کی 88منتخب حکومتوں کو گرایاگیا۔

بی جے پی ترجمان نے کانگریس کو متنبہ کیاکہ وہ ملک میں خوف پیداکرنے کی سیاست نہ کرے ۔

ایک نظر اس پر بھی

مراٹھا ریزرویشن کا راستہ صاف ، منائیں جشن  ،دیویندر فڑنویس کابینہ نے بل کو دی منظوری

مہاراشٹر میں مراٹھا ریزرویشن کو لے کر ریاست کی دیویندر فڑنویس حکومت نے بڑا قدم اٹھایا ہے۔ فڑنویس کابینہ نے مراٹھا ریزرویشن کے لئے بل کو منظوری دے دی ہے۔ اس کے ساتھ ہی ریاست میں مراٹھا ریزرویشن کا راستہ صاف ہو گیا ہے۔ اس سے پہلے وزیر اعلی فڑنویس نے احمد نگر میں مراٹھا ریزرویشن ...

وکاس کے لیے اور وقت کی ضرورت : مزید دس پندرہ سال مل جائیں تو چھتیس گڑھ ہندوستان کی تین پہلی ریاستوں میں شامل ہوگا: مودی

وزیر اعظم نریندر مودی نے نوجوانوں کو ملک کی بڑی طاقت بتاتے ہوئے آج کہا کہ ملک کا نوجوان روزگار دینے کی طاقت کے ساتھ کھڑا ہونا چاہتا ہے اور یہی وجہ ہے کہ وزیر اعظم کرنسی منصوبہ سے ملک میں 14 کروڑ لوگوں کے لئے قرض منظور کئے گئے ہیں۔وزیر اعظم مودی نے چھتیس گڑھ میں دوسرے مرحلے کے ...

نہرو اور امبیڈکر سے بھی بڑے دانشور ہوتے بھگت سنگھ: چمن لال

نجی ٹی وی آج تک ایک پروگرام میں شرکت کرنے پہنچے محب وطن کے مصنف سدھیر ودیارتھی اور کھلے خیالات کے لئے پہچانے جانے والے مصنف پروفیسر چمن لال نے شہید بھگت سنگھ پر ڈھیر سارا کام کیا ہے اور جے این یو میں تعلیم کر چکے ہیں۔بھگت سنگھ کی زندگی پر خطاب کرتے ہوئے چمن لال نے بتایا کہ بھگت ...

دلتوں کے مسائل پرحکومت کوگھیرے گی کانگریس، 26نومبرکو’یوم آئین‘ پروگرام 

ملک کی کئی ریاستوں میں چل رہے اسمبلی انتخابات کے پس منظر میں کانگریس دلتوں کے معاملے پر نریندر مودی حکومت کو گھیرنے کی تیاری میں ہے اور اسی کے تحت وہ آئندہ 26نومبر کو دہلی میں ایک بڑا پروگرام کرنے جا رہی ہے جس میں پارٹی کے سینئر لیڈران کے ساتھ دلت سوسائٹی کے نمائندے اورتجزیہ ...

بی جے پی پچھڑوں کے خلاف ،کشواہا کو الگ ہوجانا چاہئے:بہارکانگریس صدر

لوک سبھا انتخابات میں سیٹوں کی تقسیم کو لے کرراشٹریہ لوک سمتا پارٹی (رالوسپا)کی بی جے پی کے ساتھ کشیدگی بڑھنے کے درمیان کانگریس کے بہار انچارج شکتی سنگھ گوہل نے اتوار کو کہا کہ بی جے پی پچھڑوں اور بہت پچھڑوں کے خلاف ہے اور ایسے میں ایسے فرقوں کی سیاست کرنے والے لیڈر ...

بی جے پی کے لیے کٹھن ہوتی ڈگر : انتخابی ریاستوں کے ووٹروں کو پیغام دے گی اپوزیشن کی آل پارٹی میٹنگ

لوک سبھا انتخابات سے پہلے اپوزیشن اتحاد کو مضبوط بنانے میں مصروف عمل سیاسی پارٹی 22 نومبر کو دارالحکومت میں اہم ملاقات کریں گی ۔ اس اجلاس میں حصہ لینے والے تمام اپوزیشن پارٹی نہ صرف 2019 میں بی جے پی کی قیادت والے این ڈی اے کو اقتدار سے بے دخل کرنے کی حکمت عملی پر بات چیت کریں گے ...