بس کرایوں میں اضافہ ناگزیر: وزیر ٹرانسپورٹ ڈی سی تمنا

Source: S.O. News Service | By Shahid Mukhtesar | Published on 5th September 2018, 12:21 AM | ریاستی خبریں |

بنگلورو،4؍ستمبر(ایس او نیوز) ڈیزل کی قیمتوں میں مسلسل اضافے کو دیکھتے ہوئے کے ایس آر ٹی سی ، بی ایم ٹی سی اور دیگر ٹرانسپورٹ کارپوریشنوں کی طرف سے بس کرایوں میں اضافے کو وزیر ٹرانسپورٹ ڈی سی تمنا نے ناگزیر قرار دیا۔

اخباری نمائندوں سے بات چیت کرتے ہوئے انہوں نے کہاکہ ایک ہفتے کے اندر وزیراعلیٰ ایچ ڈی کمار سوامی سے بات چیت کرکے بس کرایوں سے متعلق تبادلۂ خیال کریں گے۔ اس کے بعد اضافے کے متعلق قطعی فیصلہ لیا جائے گا۔

اخباری نمائندوں سے بات چیت کرتے ہوئے انہوں نے کہاکہ ٹرانسپورٹ کارپوریشنوں کی طرف سے ریاستی حکومت کو یہ تجویز موصول ہوئی ہے کہ کم از کم 18 فیصد اضافہ کیا جائے۔ انہوں نے کہاکہ ٹرانسپورٹ کارپوریشنوں نے بتایاہے کہ ڈیزل کی قیمتوں میں بے تحاشہ اضافے کے سبب 18 فیصد کرایہ بڑھانے کے بعد بھی ٹرانسپورٹ کارپوریشن کا خسارہ برقرار رہے گا۔

وزیر موصوف نے کہاکہ ڈیزل کی قیمتوں میں روزانہ کی بنیاد پر جو اضافہ ہورہاہے اس سے ٹرانسپورٹ کارپوریشنوں کے اخراجات میں ہونے والا اضافہ برداشت کی حد سے باہر ہے۔انہوں نے کہاکہ اس کے باوجود بھی ریاستی حکومت کی طرف سے اضافے کو اس حد تک ہی محدود رکھا جائے گا کہ وہ عوام پر بوجھ نہ پڑے۔ انہوں نے کہاکہ پچھلے تین ماہ کے دوران کے ایس آر ٹی سی، بی ایم ٹی سی ، شمال مشرقی اور شمال مغربی کے ایس آر ٹی سی ان تمام اداروں کو 186کروڑ روپیوں کا خسارہ اٹھانا پڑ ا ہے۔ اسکولوں اور کالجوں کے طلبا کو مفت بس پاسوں کی فراہمی کا تنازعہ جو مخلوط حکومت سے اب تک نہیں سلجھ پایا ہے اس سلسلے میں مسٹر تمنا نے کہاکہ ایک ہفتے کے اندر اسے سلجھالیا جائے گا۔وزیر اعلیٰ کے ساتھ میٹنگ کے دوران یہ مسئلہ بھی زیر بحث لایا جائے گا۔

وزیر موصوف نے مفت بس پاس فراہم نہ کرنے کا واضح اشارہ دیتے ہوئے کہا کہ ریاستی حکومت کی طرف سے غالباً بس پاس کی شرح مقرر کی جائے گی اور اس میں درج فہرست طبقوں سے وابستہ طلبا کو 50 فیصد رعایت دی جائے گی۔ اگر ان طلبا کو مفت بس پاس فراہم کرنا ہے تو محکمۂ ٹرانسپورٹ کو واجب الادا 50 فیصد رقم محکمۂ سماجی بہبود کو ادا کرنی پڑے گی۔ کے ایس آر ٹی سی کی طرف سے عنقریب سلیپر بس خدمات میں اضافے کااعلان کرتے ہوئے انہوں نے کہاکہ دور دراز مقامات کو جانے والوں کی سہولت کے لئے مانگ کی بنیاد پر40 نئی سلیپر بسیں خریدی جارہی ہیں۔

انہوں نے کہاکہ نجی بسوں کی بھرمار کو مرحلہ وار روکنے کے لئے محکمۂ ٹرانسپورٹ اور کے ایس آر ٹی سی نے طے کیا ہے کہ پرائیویٹ ٹور آپریٹروں کے لئے چند روٹس مختص کردی جائیں ، ان روٹوں سے ہٹ کر انہیں کہیں بھی بسیں دوڑانے نہیں دیا جائے گا۔ ساتھ ہی پرائیویٹ ٹرانسپورٹروں کی طرف سے کرایے کی وصولی کے لئے ایک ضابطہ وضع کیا جائے گا، جس کے تحت ریاستی حکومت کی طرف سے طے شدہ شرحوں کی حدود میں ہی وہ کرایے کا تعین کرسکتے ہیں۔ انہوں نے کہاکہ بنگلور میں پرائیویٹ ٹرانسپورٹروں کے لئے لازمی قرار دیا گیاہے کہ وہ اپنی بسیں کھڑی کرنے اور ان کی مرمت وغیرہ کی دیکھ بھال کے لئے اپناگیریج اور بس اسٹانڈ قائم کرلیں۔

ریاستی حکومت کی طرف سے پرائیویٹ بسوں کے لئے کوئی بس اسٹانڈ مہیا نہیں کرایا جائے گا۔ انہوں نے کہاکہ فی الوقت بنگلور میں جو پرائیویٹ بس اسٹانڈ موجود ہے، اسے ٹمکور روڈ کے بسویشورا بس اسٹانڈ منتقل کیاجائے گا۔ شہر میں جابجا سڑکوں پر جو پرائیویٹ بسیں کھڑی کی جاتی ہیں آئندہ ان کے خلاف کارروائی کی جائے گی اور ٹرانسپورٹروں پر پابندی لگائی جائے گی کہ ان بسوں کی پارکنگ کا انتظام وہ بسویشورا بس اسٹانڈ میں ہی کریں۔

انہوں نے کہاکہ اس بس اسٹانڈ تک مسافروں کو پہنچنے میں آسانی کے لئے شہر سے بی ایم ٹی سی بسوں کا انتظام مختلف مقامات پر کیا جائے گا۔ محکمۂ ٹرانسپورٹ میں عملے کی کمی کے متعلق ایک سوال پر وزیر موصوف نے کہاکہ اسی وجہ سے پرائیویٹ بسوں اور دیگر ٹرانسپورٹ ذرائع پر روک لگانے میں دشواری پیش آرہی ہے۔اگر بی ایم ٹی سی اور کے ایس آر ٹی سی کے پاس جانچ کا مناسب عملہ دستیاب رہا تو پرائیویٹ بسوں پر آسانی نظر رکھی جاسکے گی۔ محکمے میں ریجنل ٹرانسپورٹ آفیسرس(آر ٹی او) انسپکٹرس اور دیگر اسامیاں کافی عرصے سے خالی پڑی ہوئی ہیں۔ محکمہ اس بات کے لئے کوشاں ہے کہ جلد از جلد ان کو پر کیا جائے تاکہ بی ایم ٹی سی اور کے ایس آر ٹی سی کے جانچ نظام کو مستعد کیا جاسکے۔ 

ایک نظر اس پر بھی

سیلاب زدہ کورگ کیلئے اضافی تعاون کا اعلان فی کنبہ 50ہزار روپئے رقم دینے کا فیصلہ

ورگ ضلع میں حال ہی میں ہوئی موسلا دھار بارش اور سیلاب کی وجہ سے کئی گھر تباہ وبرباد ہوگئے ۔ متاثرہ کنبوں کیلئے کپڑے اور روز مرہ کی ضروریات کی خریداری کے مقصد سے وزیر اعلیٰ ریلیف فنڈ کے تحت فی کنبہ 50ہزار روپئے اضافی رقم جاری کرنے کا ریاستی حکومت نے فیصلہ کیا ہے۔

سدارامیا کے دست راست ضمیر احمد خان حکومت کی حفاظت کی خاطر ناراض اراکین اسمبلی کو منانے میں سرگرداں

سابق وزیر اعلیٰ سدارامیا کی ترغیب پر جے ڈی ایس کو خیر باد کہتے ہوئے کانگریس میں شمولیت اختیار کرنے والے بی زیڈ ضمیر احمد خان مخلوط حکومت کی حفاظت پر مامور دکھائی دے رہے ہیں، سدارامیا کے ناراض اراکین اسمبلی کو منانے کی کوشش میں بی زیڈ ضمیر احمد خان سرگرم ہوگئے ہیں، ناراضی کی لہر ...

ریاستی مخلوط حکومت کو گرانے میں بی جے پی بری طرح ناکام لوک سبھا انتخابات پر توجہ مرکوز کرنے کی ہدایت ، آخری دم تک فرقہ پرستی کے خلاف لڑتا رہوں گا:سدارامیا

ریاستی مخلوط حکومت میں ساجھیدار کانگریس اور جے ڈی ایس کے اراکین اسمبلی کے درمیان جن اختلافات کا فائدہ اٹھا کر اپوزیشن بی جے پی نے پچھلے دو ہفتوں سے آپریشن کنول کے ذریعہ مخلوط حکومت کو گرانے کی جو کوشش کی تھی ،اب وہ ناکام ہوچکی ہے۔

ویمن انڈیا موؤمنٹ کی جانب سے 23 ستمبر کو بنگلور سے شروع ہورہی ہے خواتین کے تحفظ کو لے کر ملک گیر مہم

ویمن انڈیا موؤمنٹ (Women India Movement) نے 23ستمبر 2018تا 8 مارچ 2019 " خواتین پر تشدد بند کرو " اور "ّ آئیے ہمارے تحفظ کیلئے لڑائی لڑیں " کے نعروں کے تحت  ایک ملک گیر مہم  شروع  کرنے کا اعلان کیا ہے جس کے لئے  ملک کی خواتین سے اپیل کی گئی  ہے کہ وہ اس ملک گیر تحریک میں شامل ہوکر اپنے حالات ...

جنوبی ہند کے مشہور ومعروف عالم دین حضرت مولانا زکریا والا جاہی کا انتقال

نوبی ہند کے مشہور ومعروف،ممتاز جیدعالم دین زکریا صاحب والا جاہی طویل علالت کے بعد آج صبح 10؍بجے اپنے مالک حقیقی سے جاملے۔ مولانا کو شیواجی نگرکے براڈوے کی ان کی رہائش پر آخری دیدار کے لئے رکھا گیا تھا۔