چاروں برگشتہ اراکین اسمبلی کو منانے میں کمار سوامی اور وینو گوپال کامیاب، رمیش جارکی ہولی کو کابینہ میں بحال کرکے شہری ترقیات کا قلمدان دینے کی پیش کش

Source: S.O. News Service | By Shahid Mukhtesar | Published on 12th February 2019, 9:22 PM | ریاستی خبریں |

بنگلورو،12؍فروری(ایس او نیوز) برگشتہ کانگریس اراکین اسمبلی کو منانے کی آخری کوشش کے طور پر جہاں اے آئی سی سی جنرل سکریٹری وینو گوپال نے چاروں کو بات چیت کے لئے مدعو کیا ہے تو وہیں وزیراعلیٰ ایچ ڈی کمار سوامی نے ان اراکین کے چند مطالبات کو منظور کرنے پر رضامندی بھی ظاہر کردی ہے۔

بتایا جاتا ہے کہ کل رات اے آئی سی سی جنرل سکریٹری کے سی وینو گوپال نے رمیش جارکی ہولی کے بڑے بھائی اور بی جے پی رکن اسمبلی بال چندرا جارکی ہولی سے بات چیت کی اور اس بات چیت کی اطلاع وزیراعلیٰ کمار سوامی کو دینے کے بعد کمار سوامی نے رمیش جارکی ہولی کے چند مطالبات کو ماننے پر اتفاق کرلیاہے۔کہاجاتا ہے کہ کانگریس کی ریاستی قیادت بھی جارکی ہولی سمیت دیگر باغی اراکین کو نااہل قرار دئے جانے کا فیصلہ جلد کرانے کے حق میں نہیں ہے، اور وہ چاہتی ہے کہ ان کو سمجھا بجھا کر پارٹی میں بحال رکھا جائے۔

وزیراعلیٰ کمار سوامی نے بال چندرا جارکی ہولی کے ذریعے رمیش جارکی ہولی کو یقین دلایا ہے کہ ان کے ساتھ جو ناانصافی ہوئی ہے اسے دور کیا جائے گا۔ کہاجاتاہے کہ وینو گوپال نے چاروں اراکین اسمبلی رمیش جارکی ہولی، مہیش کمٹگی، بی ناگیندرا اور امیش جادھو کو ہدایت دی ہے کہ چاروں لیجسلیچر اجلاس کے اختتام سے پہلے اسمبلی میں حاضر ہوں اور کانگریس لیجسلیچر پارٹی میٹنگ کا حصہ بنیں تو ان کے مطالبوں پر بھی غور کیا جائے گا۔ بتایاجاتاہے کہ بال چندرا جارکی ہولی نے وینو گوپال اور کمار سوامی سے اپنی بات چیت کی تفصیلات رمیش جارکی ہولی کو پہنچا دی ہیں، اور انہیں یہ بھی بتایا گیا ہے کہ اگر رمیش جارکی ہولی فوراً واپس آجائیں تو انہیں نہ صرف وزارت پر بحال کیا جائے گا بلکہ یوٹی قادر کا قلمدان شہری ترقیات انہیں سونپا جائے گا۔ بتایا جاتاہے کہ وینو گوپال اور کمارسوامی اس پیش کش پر مثبت ردعمل ظاہر کیا ہے۔

ایک نظر اس پر بھی

کاسرگوڈ میں جانور لے جانے کے الزام میں دو لوگوں پر حملہ؛ بجرنگ دل کارکنوں کے خلاف معاملات درج کرنے پر مینگلور کے قریب وٹلا اور بنٹوال میں بسوں پر پتھراو

پڑوسی ریاست کیرالہ کے  کاسرگوڈ میں جانور لے جانے کے الزام میں دو لوگوں پر حملہ اور لوٹ مار کی وارداتوں کے بعد پولس نے جب  بجرنگ دل کارکنوں کے خلاف معاملات درج کئے  تو  مینگلور کے قریب  وٹلا اور بنٹوال  میں  بسوں پر پتھراو اور توڑ پھوڑ کی واردات پیش آئی ہے۔ پتھراو میں   نو ...