295نئے انڈر پاس ؍اوور برج پروجیکٹوں کو مارچ 2019تک مکمل کرلیا جائے گا 

Source: S.O. News Service | By Jafar Sadique Nooruddin | Published on 10th August 2018, 12:48 AM | ملکی خبریں |

نئی دہلی:9/ اگست (ایس او نیوز/آئی این ایس انڈیا)سڑک ٹرانسپورٹ اور شاہراہوں ، جہاز رانی اور کیمیاوی اشیا نیزکیمیاوی کھاد کے وزیر مملکت جناب منسکھ ایل منڈاویا نے آج لوک سبھا میں ایک سوال کے تحریری جواب میں بتایا کہ ملک میں ٹریفک کی بھیڑ بھاڑ سے نمٹنے کے لئے حکومت نے نئے زیر زمین راستوں ،اوور برجوں راستوں نیز سڑکوں کو چوڑا کرنے کا کام شروع کیا ہے۔ وزیر موصوف نے بتایا کہ پورے ملک میں قومی شاہراہوں پر ٹریفک جاموں کے مسئلے کو حل کرنے کے لئے اور ترقی کے لئے 645199 کروڑ روپے کی لاگت سے تقریباً 1837 پروجیکٹوں پرعمل کیا جارہا ہے۔ ان کی لمبائی 61.164 کلو میٹر بنتی ہے ۔ تقریباً 295 بڑیپروجیکٹ جن میں پل اور سڑکیں شامل ہیں ، مارچ 2019 تک مکمل ہوجائیں گے۔ سڑک استعمال کرنے والوں کی حفاظت کے لئے اوور برجوں ، انڈر پاسوں او ر سڑکوں کو چوڑا کرنے کے کام کو ضرورت کے مطابق شاہراہوں کے ترقیاتی پروجیکٹ کا ایک لازمی حصہ بنادیاگیا ہے۔

ایک نظر اس پر بھی

دہلی این سی آر میں فضائی آلودگی سے نمٹنے کے لئے ہنگامی منصوبہ لاگو

دہلی این سی آر میں فضائی آلودگی سے نمٹنے کے لئے ایک ہنگامی منصوبہ پیر کو لاگو کیا گیا ہے جس میں مشینوں سے سڑکوں کی صفائی اور اس علاقے کے بھیڑ بھاڑ والے علاقوں میں گاڑیوں کے ہموار ٹریفک کے لئے ٹریفک پولیس کی تعیناتی جیسے اقدامات شامل ہوں گے۔