جنوبی فلپائن میں فوجی کارروائی میں 15 عسکریت پسند ہلاک

Source: S.O. News Service | By Shahid Mukhtesar | Published on 13th June 2018, 12:44 PM | عالمی خبریں |

لندن13جون ( ایس او نیوز؍آئی این ایس انڈیا )فلپائن کے ایک فوجی کمانڈر نے کہا ہے کہ اتوار کے روز باغیوں کی بم بنانے والی ایک فیکٹری پر فضائی اور زمینی حملوں میں داعش کے حامی کم ازکم 15 عسکریت پسند ہلاک ہو گئے ہیں۔بریگیڈیر جنرل سیریلیتو سوبجانا نے میڈیا کو بتایا فلپائن کے علاقے میگوئنداناؤ میں بانگسامورو اسلامک فریڈم فائیٹرز گروپ یعنی پی آئی ایف ایف کے ایک ٹھکانے فضائی اور توپ خانے سے حملہ کیا گیا جہاں وہ دھماکہ خیز بارودی مواد تیا ر کر رہے تھے۔ان کا کہنا تھا کہ حملہ الصباح کیا گیا، اس وقت وہاں 60 سے 100 کے لگ بھگ عسکریت پسند موجود تھے۔فوجی کمانڈر نے بتایا کہ 15 ہلاکتوں کی تصدیق ہو چکی ہے، جب کہ 10 زخمی ہیں اور 2 کو پکڑ لیا گیا ہے۔ان کا کہنا تھا کہ ہم نے لیگوسان کے علاقے میں عسکریت پسندوں کی بارودی مواد تیار کرنے کی مرکزی فیکٹری تباہ کر دی ہے۔فلپائن کی فوج کا کہنا ہے کہ مبینہ عسکری گروپ کے تین سو سے چار سو ارکان موجود ہیں، جب کہ ابو سیاف اور ماؤتی گروپ کے ارکان اس کے علاوہ ہیں۔فلپائن کے جنوبی حصے میں اکھٹے ہوکر پانچ مہینے پیلے ماروئی نامی قصبے پر قبضہ کیا جس کے بعد سے وہ نئے ارکان بھرتی کر رہے ہیں اور انہیں تربیت دے رہے ہیں۔

ایک نظر اس پر بھی

بوئنگ 737 طیاروں کے سافٹ ویئر کو مزید بہتر بنانے کی منظوری

 امریکی فیڈرل ایوی ایشن ایڈمنسٹریشن (ایف اے اے) نے بوئنگ 737 میکس طیاروں کے سافٹ ویئر کو بہتر بنانے اور پائلٹوں کی تربیت میں تبدیلی کی منظوری دے دی ہے۔ یہ رپورٹ مقامی میڈیا نے دی ہے۔ دو بڑے حادثوں کے بعد کئی ممالک نے ان طیاروں کی پرواز پر روک لگا دی ہے۔

مفتی تقی عثمانی پرقاتلانہ حملہ شرمناک، دہشت گردی انتہائی مذم عمل اوربزدلانہ حرکت 

پاکستان کے معروف عالم دین اور نامور محقق مولانا مفتی تقی عثمانی پر ہوئے قاتلانہ حملہ کی سخت مذمت کرتے ہوئے معروف دانشور ڈاکٹر محمد منظورعالم نے کہاکہ یہ حملہ دہشت گردی اور بزدلانہ حرکت ہے جس کی کسی بھی سماج میں کوئی گنجائش نہیں ہے اور ایسے عناصر کے خلاف سخت کاروئی ضروری ہے ...

اﷲ اکبراﷲ اکبرکی صداؤں سے گونج اٹھا نیوزی لینڈ حملے کے بعد پہلی نمازجمعہ کی ادائیگی ۔اجتماع میں وزیراعظم سمیت بڑی تعداد میں غیرمسلموں کی بھی شرکت

نیوزی لینڈ کے شہر کرائسٹ چرچ کی دو مساجد پر گزشتہ جمعہ ہوئے دہشت گردانہ حملے کے بعد وزیر اعظم جیسنڈا آرڈرن کی جانب سے خوفزدہ اور افسردہ مسلمانوں کی حوصلہ افزائی نے انسانیت میں انقلاب برپاکردیا ہے۔