اڈپی: مفت سہولتوں کے نام پر کانگریس حکومت کو گھیرنے کی کوشش - بی جے پی نے دی یکم جون سے احتجاج کی دھمکی 

Source: S.O. News Service | Published on 29th May 2023, 9:35 PM | ساحلی خبریں |

اڈپی،29/ مئی (ایس او نیوز) کانگریس کے ہاتھوں شرمناک شکست کے بعد بی جے پی والے کھسیانے بلّے بن کر کھمبا نوچنے پر آمادہ ہوگئے ہیں اور کانگریس کی طرف سے انتخابات میں کیے گئے مفت سہولتوں کے اعلان کو فوری طور پر عملاً نافذ کرنے کے لئے حکومت پر دباو بنانے کا سلسلہ چل پڑا ہے ۔  ریاست کے مختلف علاقوں سے بی جے پی کے لیڈران کانگریس حکومت کے خلاف بیان بازی کرنے اور عوام کو اکسانے میں مصروف ہوگئے ہیں۔ 
    
اب بی جے پی اڈپی ڈسٹرکٹ یونٹ  کے صدر کوئلاڈی سریش نائیک نے دھمکی دی ہے کہ اگر ریاستی حکومت وعدے کے مطابق مفت سہولتیں دینے کا آغاز نہیں کرتی تو پھر یکم جون سے احتجاجی مظاہرے شروع کیے جائیں گے۔ 
    
سریش نائیک نے کہا کہ کانگریسی لیڈر سدارامیا، ملیکا ارجن کھرگے ، ڈی کے شیو کمار ، راہل گاندھی او دیگر نے جو مفت سہولتیں دینے کا اعلان کیا تھا اسے کابینہ کی پہلی میٹنگ کے بعد اب تک لاگو ہوجانا چاہیے تھا ۔ لیکن کانگریس پارٹی اپنا وعدہ پورا کرنے میں ناکام ہوگئی ہے۔ 
    
 سریش نائیک نے یہ بھی اعلان کیا کہ جو خواتین یکم جون سے کے ایس آر ٹی سی بس میں سفر کریں گی وہ ٹکٹ نہ دیں اور اگر ٹکٹ طلب کیا جاتا ہے تو براہ راست بی جے پی کے ڈسٹرکٹ آفس سے رابطہ قائم کریں ۔ بی جے پی کارکنا موقع پر پہنچ جائیں گے اور اس بات کو یقینی بنائیں گے کہ خواتین کو ٹکٹ دینا نہ پڑے اور وہ مفت سفر کر سکیں ۔ اسی طرح الیکٹری سٹی استعمال کرنے والوں کو اپنا بل ادا نہ کرنے کی بھی تاکید کرتے ہوئے نائیک نے کہا کہ بی جے پی مہیلا مورچہ اور یووا مورچہ کے کارکنان ضلع کے 1,111 بوتھس لیول پر گھر گھر پہنچ کر بل ادا نہ کرنے کے سلسلے میں مہم چلائیں گے۔ 
    
ظاہر ہے کہ اس کا مقصد پس پردہ عوام کو اکسانا اور کانگریسی حکومت کے خلاف اشتعال دلانا ہی ہو سکتا ہے تاکہ کانگریسی حکومت کو سنبھلنے کا موقع نہ ملے اور چور دروازے سے حکومت کو گرانا آسان ہوجائے ۔ ورنہ بی جے پی خود جانتی ہے کہ اس کی طرف سے ریاستی اور ملکی سطح  پرکیے گئے کتنے ایسے وعدے ہیں جو برسہا برس گزرنے کے باوجود پورے نہیں ہوئے ۔ لیکن وہ کانگریس کو دم لینے کا موقع بھی دینا نہیں چاہتی کیونکہ کانگریس کی مفت سہولتوں والی اسکیمیں اگر کامیابی سے لاگو ہوتی ہیں تو پھر بی جے پی کے لئے  2024 کا سال بھی بڑا مہنگا پڑ سکتا ہے ۔ اس لئے وہ کانگریس پر تابڑ توڑ حملے کرنے کے موڈ میں آ گئی ہے۔
    

ایک نظر اس پر بھی

بھٹکل میں بارش سے گھروں کو پہنچے نقصانات کا جائزہ لینے تنظیم وفد کا متاثرہ علاقوں کا دورہ

   ہفتہ عشرہ سے  بھٹکل میں جاری زور دار بارش کے نتیجے میں کئی علاقوں میں مکانوں کو نقصان پہنچا ہے، جس کا جائزہ لینے آج پیر کو قومی سماجی ادارہ مجلس اصلاح و تنظیم کے ایک وفد نے   صدیق اسٹریٹ، نستار اور مخدوم کالونی علاقہ کا دورہ کیا اور تنظیم کی جانب سے ہرممکن تعاون کا یقین ...

انکولہ لینڈ سلائیڈ: بھٹکل اسکول ٹیمپو ڈرائیورس یونین نے پہاڑی کا ملبہ ہٹانے والے عملے میں تقسیم کیا کھانا

   انکولہ لینڈ سلائیڈ کے بعد  کیرالہ کے ارجن سمیت تین لاپتہ لوگوں  کی کھوج کرنے والے سو سے زائد  عملہ کو  آج بھٹکل اسکول ٹیمپو ڈرائیورس  یونین کی طرف سے  دوپہر کا کھانا تقسیم کیا گیا اور  کیرالہ سے خصوصی طور پر    ملبہ ہٹانے کے لئے پہنچے لوگوں کی ہمت بندھائی۔

نیشنل ہائی وے کا غیر سائنٹفک کام - این ای سی ایف نے مرکزی وزیر گڈکری کو بھیجا شکایتی مراسلہ

نیشنل ہائی وے کے مختلف مقامات پر چٹانیں اور زمین کھسکنے کے جان لیوا حادثات کے لئے شاہراہوں کے غیر سائنٹفک توسیعی کام کو ذمہ دار قرار دیتے ہوئے نیشنل اینوائرنمنٹ کیئر فیڈریشن (ین ای سی ایف) نے مرکزی وزیر برائے بری نقل و حمل نتین گڈکری کئی اہم سرکاری افسران کو شکایتی مراسلہ بھیجا ...