ریاست کے تعلیمی نصاب سے زہریلا مواد ہٹایا جائے گا۔ نفرت، دھمکیاں، ٹرولنگ،کردار کشی اور فرقہ پرستی ہرگزبرداشت نہیں کی جائے گی: سدارامیا

Source: S.O. News Service | Published on 30th May 2023, 12:45 PM | ریاستی خبریں |

بنگلورو، 30/ مئی(ایس او  نیوز/ایجنسی) وزیر اعلیٰ سدارامیا نے اعلان کیا ہے کہ ریاست کے تعلیمی نصاب سے اس مواد کو ہٹا دیا جائے گا جو بچوں کی ذہنیت کو فرقہ واریت سے پراگندہ کرتا ہے۔

پیر کے روز اپنے ہوم آفس کرشنا میں ریاست کے نامور ادیبوں اور مصنفین سے ملاقات کے دوران انہوں نے یقین دلایا کہ کرناٹک میں امن وہم آہنگی برقرار رکھنا ان کی حکومت کی اولین ترجیح ہو گی۔

انہوں نے کہا کہ سکیولرزم کی روایات کی حفاظت کرنے کے موقف پر ان کی حکومت کسی طرح کی مصالحت نہیں کرے گی۔نفرت کی سیاست کو مٹا کر ریاست میں امن وبھائی چارگی کے ماحول کو بڑھاوا دیا جائے گا۔سابقہ بی جے پی حکومت نے سنگھ پریوار کے دباؤ میں آکر کرناٹک کی فرقہ وارانہ ہم آہنگی کونقصان پہنچانے کی جو کوشش کی تھی اس کو کرناٹک کے عوام نے ناکام بنا دیا ہے۔اب کانگریس حکومت کی یہ ذمہ داری ہوگی کہ امن او ر بھائی چارے کو عام کرے اور سماج میں مذہب کے نام پر نفرت کے جس بیج کو بودیا گیا ہے اس کو نکالا جائے۔

وزیر اعلیٰ نے کہا کہ سماجی کارکنوں اور تحریکوں کا حصہ بننے والے جن کارکنوں، کسانوں اور مزدوروں پر بی جے پی حکومت نے جھوٹے مقدمے درج کئے ہیں ان تمام کو واپس لیا جائے گا۔ معصوم ذہنوں میں نفرت بھرنے والوں کو معاف کرنے کا سوال ہی نہیں اٹھتا۔

انہوں نے کہا کہ نئی تعلیمی پالیسی نافذ کرنے کے بہانے تعلیمی نظام کو نقصان پہنچانے اور فرقہ واریت کو عام کرنے کی کوئی کوشش برداشت نہیں کی جائے گی۔ ریاست میں مورل پولیسنگ،نفرت کی سیاست، ٹرولنگ، کردار کشی، ادیبوں مصنفوں اور فنکاروں کو دھمکیاں وغیرہ برداشت نہیں کی جائیں گی اور ایسا کرنے والوں کے خلاف سخت کارروائی کی جائے گی۔

سدارامیا نے کہا کہ اس ضمن میں انہوں نے ریاستی پولیس کے ڈائرکٹر جنرل کو سخت ہدایت دی ہے۔

ایک نظر اس پر بھی

بینگلورو: دھوتی میں ملبوس کسان کو داخلہ نہ دینے کا معاملہ : حکومت نے دیا سات دن کے لئے مال بند کرنے کا حکم 

دو دن قبل بینگلورو کے ایک مال میں ایک عمر رسیدہ کسان اور اس کے اہل خانہ  کو اس وجہ سے داخلہ دینے سے انکار کیا گیا تھا کہ وہ کسان دھوتی میں ملبوس تھا ۔ اس واقعے کی ویڈیو کلپ وائرل ہونے کے بعد اس کے خلاف آوازیں اٹھنے لگی تھیں اور مال کے خلاف کارروائی کا مطالبہ کیا جا رہا تھا ۔ 

کرناٹک پرائیویٹ فرموں میں کناڈیگاس کے لیے 100فیصد کوٹہ لازمی کرنے والا بل منظور

کرناٹک کی کابینہ نے ایک بل کو منظور کیا ہے جس میں کننڈیگاس کو گروپ سی اور ڈی کے عہدوں کے لیے نجی شعبے میں 100 فیصد ریزرویشن لازمی قرار دیا گیا ہے،  وزیر اعلیٰ سدرامیا نے کہا۔یہ فیصلہ پیر کو ہونے والے کابینہ کے اجلاس میں کیا گیا۔