پاکستان میں بارش اور سیلاب سے تباہی، بلوچستان کا رابطہ ملک سے ٹوٹا، 937 افراد ہلاک

Source: S.O. News Service | Published on 26th August 2022, 9:55 PM | عالمی خبریں |

اسلام آباد، 26؍اگست (ایس او نیوز؍ایجنسی) پاکستان میں لگاتار زوردار بارش، سیلاب اور بادل پھٹنے سے زبردست تباہی کا عالم ہے۔ جون سے اب تک ملک میں 937 افراد جاں بحق ہو چکے ہیں۔ ملک کا 70 فیصد سے زیادہ حصہ بری طرح متاثر ہے اور زبردست آبی قہر کے سبب بلوچستان ملک کے باقی حصوں سے کٹ گیا ہے۔ ملک کے حالات کو دیکھتے ہوئے حکومت نے پاکستان میں سیلاب ایمرجنسی کا اعلان کر دیا ہے۔

پاکستان کے نیشنل ڈیزاسٹر مینجمنٹ اتھارٹی کے اعداد و شمار کے مطابق جون سے ملک میں بارش اور سیلاب سے اب تک 343 بچوں سمیت 937 لوگوں کی موت ہو چکی ہے۔ حالات اتنے خراب ہیں کہ تقریباً 3 کروڑ لوگوں کو گھر چھوڑ کر کھلے آسمان کے نیچے زندگی گزارنی پڑ رہی ہے۔ سب سے زیادہ بری حالت سندھ اور بلوچستان علاقہ کی ہوئی ہے۔ اس کے بعد 234 اموات بلوچستان علاقے میں ہوئی ہیں۔ خیبر پختونخواں میں 185 اور پنجاب میں 165 لوگوں کی موت ہوئی ہے۔

بلوچستان کا ملک کے باقی حصوں سے رابطہ پوری طرح ٹوٹ چکا ہے۔ سڑک اور ریلوے ٹریک بری طرح متاثر ہوئے ہیں اور انٹرنیٹ سروسز و ٹیلی مواصلات خدمات کئی علاقوں میں جاری موسلادھار بارش اور اچانک سیلاب سے ہوئے نقصان کے سبب رخنہ انداز ہو گئی ہیں۔ پاکستان ٹیلی مواصلات اتھارٹی (پی ٹی اے) کے مطابق کویٹہ، زیارت، خوزدار، لورلائی، پشن، چمن، پنجگر، جھوب، قلعہ، سیف اللہ اور قلعہ عبداللہ میں آپٹیکل فائبر کیبل متاثر ہونے کے سبب خدمات متاثر ہوئی ہیں۔

پی ٹی اے نے کہا کہ ’’مشکل حالات کا حل تلاش کرنے کی کوششیں ہو رہی ہیں۔ پی ٹی اے حالات کی نگرانی کر رہا ہے اور آگے کے اَپڈیٹ بتائے جائیں گے۔‘‘ سڑک، ہوائی اور ٹرین کے ذریعہ سے بلوچستان کا کنکشن کاٹ دیا گیا ہے، جس سے سیلاب متاثرہ علاقوں تک راحتی سامان کا پہنچنا بھی ناممکن ہو گیا ہے۔

ٹیلی مواصلات اور انٹرنیٹ خدمات کے ڈسکنکشن نے حالات کی سنگینی کو مزید بڑھا دیا ہے کیونکہ ایک ہفتہ سے بھی کم وتق میں یہ تیسری بار ہے جب سیلولر اور انٹرنیٹ کدمات رخنہ انداز ہوئی ہیں۔ پاکستان ٹیلی مواصلات کمپنی لمیٹڈ (پی ٹی سی ایل) نے کہا کہ گھوٹکی، خیرپور اور سکور ضلعوں میں کئی بار کٹوتی کے سبب ٹیلی مواصلات خدمات رخنہ انداز ہو گئی ہیں۔ کیبل کٹنے کی ایک دیگر وجہ سکور اور اس کے آس پاس کے ضلعوں میں کیے جا رہے راحت اور بچاؤ کام کے لیے بھاری مشینری کا استعمال ہونا بھی ہے۔

ایک نظر اس پر بھی

کانگریس کے رہنما ششی تھرور کو فرانس کی جانب سے اعلیٰ ترین شہری ایوارڈ سے نوازا گیا

معروف مصنف اور سفارت کار سے سیاستدان بننے والے ششی تھرور کو منگل (20 فروری) کو فرانس میں اعلیٰ ترین شہری اعزاز سے نوازا گیا۔ تھرور کو فرانسیسی سفارت خانے میں منعقدہ ایک تقریب میں فرانسیسی سینیٹ کے صدر جیرارڈ لارچر نے اپنے باوقار اعزاز ’شیویلئر ڈے لا لیجیئن ڈی آنر‘ سے نوازا۔ ...

غزہ میں جنگ بندی کی قرارداد پھر نامنظور، امریکی ویٹو کی ہیٹ ٹرک مکمل

رہاست ہائے متحدہ امریکہ نے منگل کے روز ایک بار پھر غزہ میں جنگ بندی کی قرارداد کو ویٹو کیا ہے۔ العربیہ کی رپورٹ کے مطابق، جنگ بندی کے لیے پیش کی جانے والی قرارداد میں مطالبہ کیا گیا تھا کہ اسرائیل اور حماس کے درمیان انسانی بنیادوں پر فوری 'سیز فائر' کروایا جائے۔ الجزائر کی طرف ...

اسرائیل کی غزہ پر جارحیت جاری:مرنے والوں کی تعداد 28 ہزارسے بھی کرگئی تجاوز، گزشتہ 24 گھنٹوں میں 117فلسطینی شہید

اسرائیل کی غزہ پرجارحیت جاری ہے جس کے ساتھ ہی مرنے والوں کی تعداد 28 ہزار سے بھی تجاوز کرچکی ہے۔ الجزیرہ نے وزارت صحت کے حوالہ سے خبردی ہے کہ گذشتہ24 گھنٹوں میں  117فلسطینی شہید ہوگئے ہیں جبکہ 152 زخمی ہوئے ہیں۔

عام انتخابات سے پہلے پاکستان کا بلوچستان مہلک دھماکوں سے لرز اٹھا؛دو دھماکوں میں 25 سے زائد لوگوں کی موت؛ کئی زخمی

پاکستان کے  بلوچستان کے اضلاع پشین اور قلعہ سیف اللہ میں انتخابی امیدواروں کے دفاتر کے باہر  ہوئے دھماکوں  میں  27  ا فراد جاں بحق اور 42 زخمی ہوگئے۔ جس میں بعض کی حالت نازک بتائی گئی ہے ۔

عمران خان اور بشریٰ بی بی کی شادی کو عدالت نے ’ناجائز‘ قرار دیا، سنائی 7-7 سال قید کی سزا

پاکستان کے سابق وزیر اعظم عمران خان کو آج پھر ایک بری خبر ملی۔ بشریٰ بی بی کے ساتھ ان کی شادی کو پاکستانی عدالت نے ناجائز یعنی غیر اسلامی قرار دے دیا ہے۔ اس کے ساتھ ہی عدالت نے عمران خان کے ساتھ ساتھ بشریٰ بی بی کو 7-7 سال قید کی سزا سنا دی ہے۔ یہ فیصلہ سینئر سول جج قدرت اللہ نے ...

ناروے: 30 سالہ تاریخ کے شدید ترین طوفان کے بعد چٹان کھسکنے، ژالہ باری اور موسلا دھار بارش کا خطرہ

جنوبی ناروے میں جمعہ کو حکام نے ژالہ باری اور چٹان کھسکنے جیسے واقعات کے متعلق عوام کو خبردار کیا ہے۔ اس خطے کے تمام ممالک میں خراب موسم کا قہر جاری ہے۔ ملک کے شمالی حصے میں حکام نے خدشہ ظاہر کیا کہ سڑکوں کو مختصر انتباہ کے بعد بند کیا جا سکتا ہے۔ واضح رہے کہ ۱۹۹۲ء کے بعد ناروے ...