کاروار میں اقلیتی کمیشن چیرمین عبدالعظیم نے کہا :میں نے عہدہ برقرار رکھنے کے لئے کھٹکھٹایا ہے عدالت کا دروازہ

Source: S.O. News Service | By I.G. Bhatkali | Published on 30th November 2023, 12:17 PM | ساحلی خبریں |

کاروار 30 / نومبر (ایس او نیوز) ریاستی اقلیتی کمیشن کے چیرمین ریٹائرڈ پولیس آفیسر عبدالعظیم نے اخبار نویسوں سے بات چیت کے دوران بتایا کہ کانگریسی حکومت کو انہیں اپنے عہدے سے ہٹانے سے روکنے کے لئے انہوں نے عدالت کے دروازہ کھٹکھٹایا ہے ۔
    خیال رہے کہ محکمہ پولیس سے ریٹائر ہونے کے بعد عبدالعظیم نے بی جے پی میں شمولیت اختیار کی تھی جس کی وجہ سے سابقہ بی جے پی حکومت نے انہیں اقلیتی کمیشن کا چیرمین مقرر کیا تھا ۔ پھر2022 ان کی تین سالہ میعاد ختم ہونے کے بعد بی جے پی حکومت نے اپنے اقتدار کے آخری دنوں میں عبدالعظیم کو دوسری میعاد کے لئے چیرمین نامزد کیا تھا ۔
     اب کانگریسی حکومت اقتدار میں آنے کے بعد روایت کے مطابق کمیشن کا چیرمین تبدیل کیا جاتا ہے اور کانگریس پارٹی اپنے پسندیدہ شخص یہ منصب سونپنے کی تیاری کی ہے جسے روکنے کے لئے عبدالعظیم نے عدالت کا سہارا لیا ہے ۔
    انہوں نے بتایا کہ اقلیتی کمیشن چیرمین کی میعاد تین سالہ ہوتی ہے اور قانون کے مطابق میعاد ختم ہونے سے قبل چیرمین کو اپنے عہدے سے ہٹایا نہیں جا سکتا ۔ چونکہ ابھی میری میعاد کے دو سال باقی ہیں ، اس لئے میں نے عدالت کے سامنے مانگ رکھی ہے کہ اس دوران مجھے عہدے سے ہٹانے پر روک لگائی جائے ۔ 


 

ایک نظر اس پر بھی

کاروار کے سمندر میں لگا ہوا 'رڈار' بھی چوروں کے ہاتھ سے بچ نہ سکا !

زمین پر سے قیمتی مشینیں چرانے والوں نے اب سمندر میں اپنے ہاتھ کی صفائی دکھانا شروع کیا ہے جس کی تازہ ترین مثال ماحولیاتی تبدیلیوں کے سگنل فراہم کرنے کے لئے کاروار کے علاقے میں بحیرہ عرب میں لگائے گئے 'رڈار' کی چوری ہے ۔

کمٹہ کے سمندر میں چینی جہاز کا معاملہ - کوسٹ گارڈ نے کہا : ہندوستانی حدود کی خلاف ورزی نہیں ہوئی

دو دن قبل کمٹہ کے قریب ہندوستانی سمندری سرحد میں چینی جہاز کی موجودگی اور اس سے ساحلی سیکیوریٹی کو درپیش خطرے کے تعلق سے جو خبریں عام ہوئی تھیں اس پر کوسٹ گارڈ نے بتایا ہے کہ یہ ایک جھوٹی خبر تھی اور چینی جہاز ہندوستانی سرحد میں داخل نہیں ہوا تھا ۔

ہوناور کاسرکوڈ میں ماہی گیروں پر زیادتیوں کے خلاف حقوق انسانی کمیشن سے کی گئی شکایت

ہوناور کے کاسرکوڈ ٹونکا میں مجوزہ تجارتی بندرگاہ کی تعمیر کے خلاف احتجاج کرنے والے مقامی ماہی گیروں  پر پولیس کی طرف سے لاٹھی، خواتین سمیت کئی لوگوں کی گرفتاریاں ، جھوٹے مقدمات کی شکل میں جو زیادتیاں ہوئی تھیں، اس کے تعلق سے حقوق انسانی کمیشن سے شکایت کی گئی ہے ۔

بھٹکل میں 'ریت مافیا' کا دربار - تعلقہ انتظامیہ خاموش - عوام بے بس اور لاچار

بھٹکل میں تعلقہ انتظامیہ کی خاموشی کی وجہ سے تعلقہ کے گورٹے، بیلکے، جالی، مُنڈلی نستار، بئیلور جیسے علاقوں میں ساحل سے ریت جیسی سمندری دولت لوٹنے کا کام 'ریت مافیا' کی طرف سے بلا روک ٹوک جاری ہے اور مقامی عوام پریشانی اور بے بسی و لاچاری سے یہ سب دیکھنے پر مجبور ہوگئے ہیں ۔