مینگلور اور اُڈپی دورہ پر پہنچے وزیر اعلیٰ سدا رامیا نے مورل پولیسنگ کے نام پر ہورہی غندہ گردیوں پر کہا، اسے برداشت نہیں کیا جائے گا

Source: S.O. News Service | Published on 1st August 2023, 5:46 PM | ساحلی خبریں | ریاستی خبریں |

منگلورو یکم / اگست (ایس او نیوز) منگلورو اور اڈپی کے دورے پر آئے ہوئے وزیر اعلیٰ سدا رامیا نے کہا کہ اڈپی کے کالج میں پیش آئے واش روم ویڈیو معاملہ میں اسپیشل انویسٹی گیشن ٹیم (ایس آئی ٹی) کی تشکیل نہیں ہوگی ۔ اس واقعہ کے بعد پولیس نے از خود کیس درج کیا ہے اور اس کی تحقیقات جاری ہے ۔

 وزیر اعلیٰ نے اخبار نویسوں سے بات چیت کرتے ہوئے کہا کہ " ایک ڈی وائی ایس پی درجہ کا افسر اس معاملہ کی تحقیقات کر رہا ہے ۔مزید کہا کہ  نیشنل ویمن کمیشن کے نمائندے نے کہا ہے کہ واش روم میں کوئی  خفیہ کیمرہ موجود نہیں  تھا ۔ پہلے تحقیقات کو مکمل ہونے دیا جائے ، پھر اس کے بعد اس پر بات کریں گے ۔ اس سے پہلے ایس آئی ٹی تشکیل دینے کا مطالبہ کرنے کا سوال ہی پیدا نہیں ہوتا ۔"

 مورل پولیسنگ برداشت نہیں : ضلع جنوبی کینرا میں پیش آنے والے مورل پولیسنگ کے معاملات پر وزیر اعلیٰ نے کہا :" جو کوئی بھی مورل پولیسنگ میں ملوث پایا جائے گا اسے بخشا نہیں جائے گا ۔ کسی کو بھی قانون اپنے ہاتھ میں لینے کی گنجائش نہیں ہے ۔ میں نے محکمہ پولیس کو بتا دیا ہے کہ ایسے معاملے میں کسی بھی قسم کی نرمی نہ برتی جائے ۔"

 سوشیل میڈیا پر افواہیں پھیلانے کے تعلق سے سدا رامیا نے کہا کہ ایسے لوگوں کے خلاف کڑی کارروائی کی جائے گی ۔ کسی پر تنقید کی جائے تو اس کے خلاف کارروائی نہیں ہوگی مگر کسی کے اہل خانہ کو نشانہ بنا کر افواہیں پھیلانے کو تنقید نہیں  کہتے ۔ تنقید اور افواہوں میں فرق ہوتا ہے ۔ جھوٹی خبریں پھیلانے پر کارروائی ہوگی ۔

 قانون ہاتھ میں لینے پر کڑی کارروائی : وزیر اعلیٰ کے ساتھ موجود دکشن کنڑا ضلع انچارج وزیر دنیش گنڈو راو نے ضلع  میں بڑھتے ہوئے مورل پولیسنگ کے معاملوں پر تبصرہ کرتے ہوئے کہا " ان سرگرمیوں کو اممورل پولیسنگ (غیر اخلاقی پولیس گری) کہنا چاہیے ۔ قانون اپنے ہاتھ میں لینا، حملے کرنا، خوف پیدا کرنا اور دوسروں  کو دبانے جیسی غیر قانونی سرگرمیاں برداشت نہیں کی جائیں گی ۔ یہاں طلبہ کے اندر خوف و دہشت کا ماحول ہے وہ مینگلورو میں تعلیم حاصل کرنے سے گھبرا رہے ہیں ۔ فرقہ وارانہ طاقتیں ضلع کو بدنام کرنے کی پوری کوشش کر رہی ہیں ۔ بی جے پی ایسے مجرموں کی حمایت کرتی ہے ۔ وہ جنوبی کینرا میں فرقہ وارانہ ہم آہنگی نہیں چاہتے ۔ میں نے پولیس کو ہدایت دی ہے کہ ایسی سرگرمیوں کے خلاف سخت کارروائی کرے ۔ امن و امان قائم رکھنے میں سب کو تعاون کرنا چاہیے ۔"

 نلین کمار کٹیل جوکر ہے : وزیر اعلیٰ سدا رامیا اپنے دورے کے دوسرے مرحلے میں اڈپی پہنچے اور پڈوبیدری علاقے میں ساحلی کنارے پر سمندری کٹاو کی صورتحال اور موسلا دھار برسات اور طوفان کی وجہ سے اڈپی ضلع میں بڑے پیمانے پر ہوئے نقصانات کا جائزہ لیا ۔ انہوں نے کہا کہ اڈپی ضلع میں برسات سے 35 کروڑ روپیو ں کا نقصان ہوا ہے ۔ اس کی بھرپائی کے لئے فنڈ جاری کیا جائے گا ۔ ضلع میں 98 کلو میٹر ساحلی پٹی ہے ۔ یہاں بار بار سمندری کٹاو ہوتا ہے ۔ اس کے مستقل حل کے لئے تجاویز پر غور کیا جا رہا ہے ۔ 

 وزیر اعلیٰ سے جب بی جے پی کے ریاستی صدر نلین کمار کٹیل کے اس بیان کے بارے میں پوچھا گیا جس میں نلین نے کہا تھا "کانگریسی حکومت جہادی حکومت ہے" تو سدارامیا نے کہا : " نلین کمار ایک جوکر (مسخرہ) ہے ۔ مجھے اس کے بیان پر تبصرہ کرنے کی ضرورت نہیں ہے ۔"

  وزیر اعلیٰ نے دیوراج ارس پسماندہ خواتین کے پوسٹ میٹرک ہاسٹل کا بھی دورہ کیا اور وہاں طالبات کے ساتھ بات چیت کی ۔ اس موقع پراُترکنڑا کے ڈسٹرکٹ انچارج وزیر منکال وئیدیا، اڈپی ضلع انچارج وزیر لکشمی ہیبالکر ،  ڈپٹی کمشنر ودیا کماری، ایم ایل اے گورمے سریش شیٹی اور ونئے کمار سوراکے وغیرہ موجود تھے ۔ 

ایک نظر اس پر بھی

ماہی گیر تنظیموں کا متفقہ فیصلہ - کاسرکوڈ میں تجارتی بندرگاہ کے خلاف ہوگی قانونی جد و جہد

) شہر کے سینٹ جوزیف ہال میں ماہی گیر تنظیموں کی جوائنٹ ایکشن کمیٹی اور کراولی ماہی گیر مزدوروں کی تنظیم کا مشترکہ اجلاس منعقد ہوا جس میں کاسرکوڈ میں مجوزہ نجی تجارتی بندرگاہ کی تعمیر کے خلاف تنظیمی اور قانونی طریقے سے جد وجہد کرنے کا فیصلہ کیا گیا ۔

بھٹکل میں ووٹر بیداری مہم؛ سرکاری افسران نے طلبہ کے ساتھ نکالی ریلی؛ سو فیصد ووٹنگ کویقینی بنانے کی کوششیں

بھٹکل میں  صد فیصد ووٹنگ کا ٹارگٹ لے کر   اُترکنڑاضلعی انتظامیہ،  ضلع پنچایت، بھٹکل تعلقہ انتظامیہ اور تعلقہ پنچایت کے زیراہتمام  بھٹکل کے سرکاری آفسران  نے کالج طلبہ کو ساتھ لے کر  ووٹنگ بیداری مہم  کے تحت شاندار ریلی نکالی اور عوام پر زور دیا کہ وہ  کسی بھی صورت میں اپنی ...

بھٹکل میں مسلم رپورٹروں کی طرف سے غیر مسلم رپورٹروں کوپیش کی گئی عید الفطر کی مٹھائیاں

ورکنگ جرنلسٹ اسوسی ایشن   بھٹکل  کے مسلم رپورٹروں کی طرف سے بھٹکل کے غیر مسلم رپورٹروں کو عید الفطر کی مناسبت سے مٹھائیاں تقسیم کی گئیں اور اُنہیں عید کے تعلق سے  معلومات فراہم کی گئیں۔

بی جے پی نے کانگریس ایم ایل اے کو 50 کروڑ روپے کی پیشکش کی؛ سدارامیا کا الزام

کرناٹک کے وزیر اعلی سدارامیا نے ہفتہ کو بھارتیہ جنتا پارٹی (بی جے پی) پر الزام لگایا کہ وہ کانگریس کے اراکین اسمبلی کو وفاداری تبدیل کرنے کے لیے 50 کروڑ روپے کی پیشکش کرکے 'آپریشن لوٹس' کے ذریعے انکی حکومت کو غیر مستحکم کرنے کی کوششوں میں ملوث ہے۔

لوک سبھا انتخاب 2024: کرناٹک میں کانگریس کو حاصل کرنے کے لیے بہت کچھ ہے

کیا بی جے پی اس مرتبہ اپنی 2019 لوک سبھا انتخاب والی کارکردگی دہرا سکتی ہے؟ لگتا تو نہیں ہے۔ اس کی دو بڑی وجوہات ہیں۔ اول، ریاست میں کانگریس کی حکومت ہے، اور دوئم بی جے پی اندرونی لڑائی سے نبرد آزما ہے۔ اس کے مقابلے میں کانگریس زیادہ متحد اور پرعزم نظر آ رہی ہے اور اسے بھروسہ ہے ...

تعلیمی میدان میں سرفہرست دکشن کنڑا اور اُڈپی ضلع کی کامیابی کا راز کیا ہے؟

ریاست میں جب پی یوسی اور ایس ایس ایل سی کے نتائج کا اعلان کیاجاتا ہے تو ساحلی اضلاع جیسےدکشن کنڑا  اور اُ ڈ پی ضلع سر فہرست ہوتے ہیں۔ کیا وجہ ہے کہ ساحلی ضلع جسے دانشوروں کا ضلع کہا جاتا ہے نے ریاست میں بہترین تعلیمی کارکردگی حاصل کی ہے۔

این ڈی اے کو نہیں ملے گی جیت، انڈیا بلاک کو واضح اکثریت حاصل ہوگی: وزیر اعلیٰ سدارمیا

کرناٹک کے وزیر اعلیٰ سدارمیا نے ہفتہ کے روز اپنے بیان میں کہا کہ لوک سبھا انتخاب میں این ڈی اے کو اکثریت نہیں ملنے والی اور بی جے پی کا ’ابکی بار 400 پار‘ نعرہ صرف سیاسی اسٹریٹجی ہے۔ میسور میں صحافیوں سے بات کرتے ہوئے سدارمیا نے یہ اظہار خیال کیا۔ ساتھ ہی انھوں نے کہا کہ ...