مینگلور: محمد فاضل کے قتل معاملہ میں وی ایچ پی لیڈر شرن پمپ ویل پر مقدمہ درج کرنے مقتول کے والد کا منگلورو پولیس کمشنر سے مطالبہ

Source: S.O. News Service | By I.G. Bhatkali | Published on 31st January 2023, 12:31 AM | ساحلی خبریں | ریاستی خبریں |

منگلورو30 جنوری (ایس او نیوز) وشوا ہندو پریشد کے جنوبی حلقہ کے جوائنٹ سکریٹری شرن پمپویل کے اس بیان کے بعد کہ سورتکل میں محمد فاضل کو بی جے پی لیڈر پروین نیتارو کے قتل کا 'بدلہ' لینے کے لیے مارا گیا تھا، مقتول نوجوان کے والد عمر فاروق نے مینگلور پولیس کمشنر این ششی کمار سے مطالبہ کیا ہے کہ وہ شرن پمپویل کو فوری طور پر گرفتار کرے اور قتل میں اس کے کردار کی جانچ کرے۔

ایم بی اے گریجویٹ 23 سالہ محمد فاضل کو چار نقاب پوش افراد نے گزشتہ سال 28 جولائی کو کرناٹک کے ساحلی شہر منگلور کے قریبی علاقہ سورتکل میں کپڑے کی دکان کے اندر گھس کر مارڈالا تھا۔ اس جرم میں پولس نے آٹھ افراد کو گرفتار کیاتھا جس میں ایک کو ضمانت پر رہا بھی کیا جاچکا ہے۔

لیکن محمد فاضل کے قتل کو لے کر ہفتہ کے روز ٹمکور میں بجرنگ دل کے 'شوریہ یاترا' پروگرام میں شرن پمپ ویل نے خطاب کرتے ہوئے کہا تھا کہ محمد فاضل کا قتل نیتارو کی موت کا بدلہ لینے کے لیے کیا گیا تھا۔ اس نے کہا تھا کہ بی جے پی لیڈر پروین نیتارو کے قتل کا جواب دینے کے لیے، سورتکل کے نوجوانوں نے اسے مار ڈالا۔ اس نے یہ بھی بتایا کہ محمد فاضل کو کسی الگ تھلگ جگہ پرلے جاکر نہیں بلکہ کھلے بازار میں مار ڈالا گیا تاکہ ہندو نوجوان اپنی طاقت کا مظاہرہ کرسکے۔ بتاتے چلیں کہ اس اشتعال انگیز خطاب کی وڈیو اتوار کو جب سوشیل میڈیا پر وائرل ہوئی تو معاملہ کھل کر سامنے آیا۔

پولس کمشنر این ششی کمارکے دفتر پہنچ کر مقتول محمد فاضل کے والد عمر فاروق نے کہا، ''یہ بزدلوں کی کارروائی تھی۔ آٹھ لوگوں نے ایک شخص کا قتل کیا ہے۔ نیز، یہ برادریوں کے درمیان امن اور ہم آہنگی کو تباہ کرنے کی بھی کوشش ہے۔ یہ کام ہندوؤں کا نہیں بلکہ ان کا ہے جو سماج کو تقسیم کرکے ووٹ بینک بنانا چاہتے ہیں۔ میرے بیٹے کے قتل کے دن سے میں کہہ رہا ہوں کہ اس جرم کے پیچھے ایک شخص ہے اور پولیس کو اسے انصاف کے کٹہرے میں لانے کی ضرورت ہے۔ اب میں کہہ رہا ہوں کہ میرے بیٹے کے قتل کے پیچھے یہی شخص ہے یعنی اس قتل میں شرن پمپ ویل کا ہاتھ ہے۔

پتہ چلا ہے کہ پولیس نے ابھی تک پمپ ویل کے خلاف مقدمہ درج نہیں کیا ہے۔ جبکہ اس سے قبل فاضل قتل کیس میں آٹھ افراد کو گرفتار کیا گیا تھا جس میں سے ایک ہرشیتھ راؤ (28) کو گزشتہ سال ستمبر میں ہی ضمانت پر رہا کیا جا چکا ہے۔ جو لوگ عدالتی حراست میں ہے، ان کے نام یہ ہیں: سوہاس شیٹی (29)، ابھیشیک (21)، موہن سنگھ (26)، گریدھر (23)، سری نواس ایچ (23)، دیکشتھ پجاری (21) اور اجیت کراستا (37)۔

 

عمر فاروق نے اب تفتیشی افسر پر زور دیا ہے کہ وہ اپنے بیٹے کے قتل میں ملوث شخص کو کٹہرے میں لائے۔ عمر فاروق کا کہنا ہے انہوں نے اتوار کو یوٹیوب کی ایک ویڈیو دیکھی، جس میں مسٹر پمپویل ٹمکور میں شوریا یاترہ میں تقریر کر رہے تھے۔ مبینہ ویڈیو میں، شرن پمپ ویل نے نہ صرف ان کے بیٹے کو قتل کرنے پرقاتلوں کی تعریف کی بلکہ یہ دعویٰ بھی کیا کہ یہ قتل پروین نیتارو کے قتل کا بدلہ لینے کے لیے کیا گیا تھا۔ لہذا یہ واضح ہے کہ شرن پمپ ویل کومحمد فاضل کے قتل کے بارے میں پیشگی اطلاع تھی اور ممکن ہے کہ یہ قتل ان کے ہی کہنے پرکیا گیا ہو۔ انہوں نے مطالبہ کیا کہ سٹی پولیس شرن پمپ ویل کو گرفتار کرے اور ان کے بیٹے کے قتل کی تحقیقات کو آگے بڑھائے۔

پولیس کمشنر نے صحافیوں کو بتایا کہ انہوں نے اس معاملے پر قانونی رائے طلب کی ہے۔ انہوں نے مزید کہا کہ مزید کارروائی کا انحصار قانونی رائے پر ہے۔

مسٹر پمپ ویل کی رپورٹ شدہ تقریر پر ردعمل ظاہر کرتے ہوئے، دکشن کنڑا یوتھ جے ڈی (ایس) کے صدر اکشتھ سوورنا نے کہا کہ یہ بیان سول سوسائٹی کے لیے صدمہ پہنچانے والا ہے اور اس نے ملک کے قانونی نظام کو چیلنج کیا ہے۔ مسٹر سورنا نے کہا کہ یہ بیان اسمبلی انتخابات کے موقع پر فرقہ وارانہ جھگڑے کو بھڑکا سکتا ہے، انہوں نے پولس سے شرن پمپ ویل کے خلاف فوری کارروائی کا مطالبہ کیا۔

سوشل ڈیموکریٹک پارٹی آف انڈیا (ایس ڈی پی آئی) کے ضلعی جنرل سکریٹری انور سعادت باجتّور نے ایک بیان میں پولیس پر زور دیا کہ وہ سپریم کورٹ کی ہدایات کے مطابق شرن پمپ ویل کے خلاف فوری طور پر از خود مقدمہ درج کرے انہوں نے سوال کیا کہ پمپ ویل کو ابھی تک گرفتار کیوں نہیں کیا گیا؟

صدر اور ایم ایل سی کے ہریش کمار کی قیادت میں دکشن  کنڑا ضلع کانگریس کمیٹی کے ایک وفد نے بھی پیر کو پولس کمشنراین ششی کمار سے ملاقات کی اورشرن پمپ ویل کے خلاف فوری کارروائی کا مطالبہ کیا۔وفد نے کہا کہ شرن پمویل نے جس طرح کا اشتعال انگیز بیان دیا ہے وہ نسل کشی کا باعث بن سکتا ہے اس لئے پولیس کو فوری طور پر کارروائی کرنی چاہیے۔

کانگریس رکن اسمبلی یو ٹی قادر نے شرن پمپویل کوملک مخالف قرار دیا اور کہا کہ یہ وہی ہے جو فرقہ وارانہ منافرت پیدا کرکے سماج کو تقسیم کررہا ہے۔

ایک نظر اس پر بھی

بھٹکل میں نیشنل ہائی وے ادھورے کاموں کو جلد مکمل کرنے کا مطالبہ: پندرہ دن میں کام شروع نہیں ہوا تو شیرور ٹول ناکہ بند کرکے کیا جائے گا احتجاج

قومی شاہراہ کی تعمیر کےد وران ہورہی دیری اور خامیوں کو  لےکر آج بھٹکل تعلقہ ناگریک ہِتا رکشھنا سمیتی کا ایک وفد بھٹکل اسسٹنٹ کمشنر ڈاکٹر نینا سے ملاقات کیا۔ اور  شاہراہ کاتعمیری کام جلد  مکمل کرنے کا مطالبہ کیا۔  وفد نے اسسٹنٹ کمشنر کو منتبہ کیا کہ پندرہ دن کے اندر اگر کام ...

یلاپور ایم ایل اے ہیبار نے دیا بی جے پی کو شاک ؛ کیا ہیبّار کانگریس میں شامل ہوں گے ؟

پچھلے کچھ دنوں سے یلاپور حلقہ کے ایم ایل اے شیو رام ہیبار کے تعلق سے افواہیں چل رہی تھیں کہ وہ بی جے پی سے واپس کانگریس میں لوٹنے کے لئے پر تول رہے ہیں ۔ اب شیورام ہیبار نے راجیہ سبھا کے لئے اراکین کے انتخاب کے موقع پر اسمبلی سے غیر حاضر رہتے ہوئے بی جے پی کو براہ راست شاک دے دیا ہے ...

اُڈپی : پڈوبیدری میں میاں بیوی کی جوڑی نے نقلی سونا گروی رکھتے ہوئے  کوآپریٹیو سوسائٹیوں کو لگایا 33 لاکھ روپے کا چونا !

میاں بیوی کی ایک جوڑی کی طرف سے  اصلی سونے کی جگہ پر نقلی سونا گروی رکھتے ہوئے کوآپریٹیو سوسائٹیوں کو 33 لاکھ روپے سے زائد رقم کا چونا لگانے کا معاملہ سامنے آیا ہے  جس کے بارے میں پڈوبیدری پولیس اسٹیشن میں الگ الگ شکایتیں درج کروائی گئی ہیں ۔

منگلورو: بھارت کو ہندو راشٹر بنانے چلےہیں، اس کے بعد برہمن، چھتری کا معاملہ شروع ہوگا، بچوں کی پڑھائی میں نہیں ہے کوئی  دلچسپی ؛ فلم اداکار پرکاش راج کی مودی پر تنقید

کیمرہ ڈپارٹمنٹ کے ساتھ عوام کے ٹیکس کا پیسہ خرچ کرتےہوئے تفریح کرنا مودی کا پیشہ بن گیا ہے۔  توکوٹو کلاپویونیٹی ہال میں ڈی وائی ایف کی قیادت میں منعقدہ سہ روزہ 12ویں ریاستی اجلاس میں خطاب کرتےہوئےہمہ لسانی فلم اداکار پرکاش راج نے وزیر اعظم نریندر مودی کی کڑی تنقید کی۔ 

کانگریس کارکنوں پرپاکستان زندہ باد کے نعرے لگائے جانےکے الزام کے بعد مینگلور میں بی جےپی یوتھ مورچہ نے کی کانگریس دفترکا گھیراؤ کرنے کی کوشش

راجیہ سبھا انتخابات میں کانگریس کی شاندار جیت درج ہونے کے بعد میڈیا میں دکھایا گیا  تھا کہ  کانگریس کے  ناصر حُسین کے ایک حامی نے دو مرتبہ پاکستان زندہ باد کا نعرہ لگایا ہے۔ اس کی مذمت کرتے ہوئے   بی جےپی  یوتھ مورچہ کارکنان نے منگلورو میں کانگریس دفتر کا گھیراؤ کرنے کی کوشش ...

پاکستان زندہ با د نعرہ کا معاملہ؛ بی جے پی شکست کی مایوسی میں توڑ مروڑ کر پیش کر رہی ہے: ڈی کے شیو کمار

ریاستی نائب وزیر اعلیٰ ڈی کے شیو کمار نے کہا کہ ودھان سودھا میں کسی نے پاکستان زندہ باد کا نعرہ نہیں لگایا۔ اگر وہ پاکستان کی حمایت میں نعرہ بازی کرتے ہوئے چیختے ہیں تو پولیس انہیں لات مار کر اندر ڈال دے گی۔

سائنسی طور پر تصدیق ہوئی تو مجرم کے خلاف قانونی کارروائی کی جائے گی، پاکستان ، یانصیرصاب زندہ باد: ایف ایس ایل سے تحقیق: پرمیشور

ریاستی وزیر داخلہ جی پرمیشور نے کہا کہ ودھان سودھا میں پاکستان زندہ بعد نعرہ بازی کے معاملہ میں پولیس نے از خود شکایت درج کرتے ہوئے کارروائی کی ہے۔ایف ایس ایل کی جانب سے سائنسی بنیاد پر تفتیش کی جارہی ہے۔

ملک کے نازک حالات میں مسلمان پاکستان زندہ کا نعرہ لگانے کی جرأت نہیں کرسکتا!یہ سب گودی میڈیا کی کارستانی ہے،دونوں ایوانوں میں ہنگامے

راجیہ سبھا انتخاب کا نتیجہ ظاہر ہونے کے بعد و دھان سودھا کے لاؤنج میں راجیہ سبھا کے لئے منتخب ہونے والے کانگریس امیدوار ڈاکٹر سید نصیر حسین کے حامیوں نے جشن منایا۔

یلاپور ایم ایل اے ہیبار نے دیا بی جے پی کو شاک ؛ کیا ہیبّار کانگریس میں شامل ہوں گے ؟

پچھلے کچھ دنوں سے یلاپور حلقہ کے ایم ایل اے شیو رام ہیبار کے تعلق سے افواہیں چل رہی تھیں کہ وہ بی جے پی سے واپس کانگریس میں لوٹنے کے لئے پر تول رہے ہیں ۔ اب شیورام ہیبار نے راجیہ سبھا کے لئے اراکین کے انتخاب کے موقع پر اسمبلی سے غیر حاضر رہتے ہوئے بی جے پی کو براہ راست شاک دے دیا ہے ...

ٹمکور ومیں سرجری کے بعد تین خواتین کی موت کا معاملہ ۔ گائنا کالوجسٹ سمیت تین افراد ملازمت سے برطرف

علاج میں کو تاہی کی پاداش میں محکمہ صحت کی کارروائی بروز منگل ایک گائنا کالوجسٹ اور عملے کے دو ارکان کو پاؤ گڑھ ٹاؤن کے ماں اور بچے کے اسپتال میں زیر علاج تین زچہ خواتین کی موت کے معاملہ میں ملازمت سے برخاست کرنے کا حکم دیا گیا۔