اترکنڑا کے رکن پارلیمان اننت کمار ہیگڈے سمیت بی جےپی کے 13ارکان پارلیمان نالائق ہونےکی تشہیر : کیا انہیں اگلے لوک سبھا انتخابات میں ٹکٹ نہیں دی جائے گی ؟

Source: S.O. News Service | By Abu Aisha | Published on 8th June 2023, 9:56 PM | ساحلی خبریں |

کاروار: 8؍جون(ایس اؤ نیوز ) گذشتہ لوک سبھا انتخابات میں ریاست سے منتخب ہونے والے بی جےپی کے 25 رکن پارلیمان میں سے 13ارکان پارلیمان کو ٹکٹ سے محروم کرنےکی سازش رچی جانے کی خبریں سامنے آرہی ہیں ۔ ان سبھی ارکان پارلیمان کے تعلق سے بات پھیلائی جارہی ہے کہ انہوں نے کوئی کام ہی نہیں کیا ہے، یہ سب  نالائق ہیں  ۔ اسے بی جےپی کے مرکزی لیڈران کی طرف سے رچی گئی سازش کہاجارہاہے۔

13نااہل ارکا ن پارلیمان میں اُترکنڑا  کے رکن پارلیمان اننت کمار ہیگڈے بھی شامل ہیں۔ ان کے ساتھ ایم پی شیو کمار اُداسی اور سدانند گوڈا میں بھی ہیں۔ ان باتوں کو لےکر پچھلے کئی دنوں سے میڈیا میں مسلسل نشر کیا جارہاہےکہ انہیں ٹکٹ نہیں دیاجائے گا۔انہوں نے کوئی کام نہیں کیا ہے۔ اس کے علاوہ  اگلے انتخابات میں بی جے پی ان کے بدلے نئے چہروں کو ٹکٹ دے گی ۔ لیکن ایسا بھی کہا جارہا ہے کہ یہ سب کچھ بی جےپی کے مرکزی لیڈران کی منصوبہ بند تشہیری چال اورسازش ہوسکتی ہے۔ فہرست میں شامل ارکان پارلیمان ہی کہہ رہے ہیں کہ ہمیں سیاست سے دور رکھنے کےلئے بی جےپی کے قومی جنرل سکریٹری بی ایل سنتوش اور مرکزی وزیر پرہلاد جوشی کا یہ منصوبہ ہے۔

اپنے خلاف جتنے بھی ارکان پارلیمان ہیں انہیں ختم کرکے اگلے لوک سبھا انتخابات میں نئے چہروں کو ٹکٹ دینے کےلئے رچی گئی یہ ایک چال ہے۔ اس سے قبل سدانند گوڈا اور اننت کمارہیگڈے کو وزارت سے بے دخل کرنےو الے سنتوش اور جوشی ہی اس چال کے سرغنہ ہیں۔ اب  وہ چاہتے ہیں کہ یہ  دوبارہ سیاسی میدان میں نہ آئیں۔ دراصل میڈیا میں 13ارکان پارلیمان کےمتعلق خبریں نشرکرانے میں انہی کا ہاتھ کہاجارہاہے۔ یہ تو ابتداء ہے۔ میڈیا میں ارکان پارلیمان کو لےکر خبریں شائع ہونے کے بعد بھی ریاستی اور قومی لیڈران نے اف تک نہیں کی۔ اور پارٹی کی طرف سے  کہیں پر بھی ایسا کوئی بیان نہیں دیا گیا ہے کہ ان باتوں میں کتنی سچائی ہے۔

بی جےپی نےجواب کیوں نہیں دیا: ریاست کے 25ارکان پارلیمان میں سے 13ارکان پارلیمان نے اپنے حلقوں میں کوئی کام نہیں کیا ہے ، انہیں اگلے انتخابات میں ٹکٹ دینے کا امکان نہیں ہے ۔ اس طرح کی  خبروں کو پارٹی کے مصدقہ فیصلے کی طرح میڈیا میں نشر کرنےکے باوجود بی جےپی نے اس کی تردید نہیں کی ہے۔ پارٹی کے رویے سے 13ارکان پارلیمان نے عدم اطمینان کا اظہار کیا ہے اور خود سدا نند گوڈا نے بیان دیا ہے کہ یہ سب کچھ پارٹی کے اعلیٰ لیڈران کی سازش  ہے۔

کیا رکن پارلیمان میدان میں نہیں اتریں گے: اترکینرا کے رکن پارلیمان اننت کمارہیگڈے کےخلاف پارٹی کے اندر ہی مخالف ماحول پیدا کیاجارہاہے۔ بی جےپی لیڈران ہی کہہ رہے ہیں کہ وہ اگلے لوک سبھا انتخابات میں مقابلہ نہیں کریں گے۔ لیکن خود اننت کمارہیگڈے نے اس تعلق سےکہیں بھی کوئی بیان نہیں دیا ہے۔ البتہ اسمبلی انتخابات کے دوران انہوں نےصرف اتنا کہاتھا کہ میں سرگرم سیاست میں نہیں ہوں۔ اب لوک سبھا انتخابات کےلئے اننت کمارہیگڈے کو الگ تھلگ کرتےہوئے سابق اسپیکر وسویشورہیگڈے کاگیری یا پھر ایک صحافی کو امیدوار بنائےجانے کی سنتوش اور جوشی گروپ کے ذریعے کوششیں ہونےکی بات کہی جارہی ہے۔

ایک نظر اس پر بھی

بھٹکل میں بارش سے گھروں کو پہنچے نقصانات کا جائزہ لینے تنظیم وفد کا متاثرہ علاقوں کا دورہ

   ہفتہ عشرہ سے  بھٹکل میں جاری زور دار بارش کے نتیجے میں کئی علاقوں میں مکانوں کو نقصان پہنچا ہے، جس کا جائزہ لینے آج پیر کو قومی سماجی ادارہ مجلس اصلاح و تنظیم کے ایک وفد نے   صدیق اسٹریٹ، نستار اور مخدوم کالونی علاقہ کا دورہ کیا اور تنظیم کی جانب سے ہرممکن تعاون کا یقین ...

انکولہ لینڈ سلائیڈ: بھٹکل اسکول ٹیمپو ڈرائیورس یونین نے پہاڑی کا ملبہ ہٹانے والے عملے میں تقسیم کیا کھانا

   انکولہ لینڈ سلائیڈ کے بعد  کیرالہ کے ارجن سمیت تین لاپتہ لوگوں  کی کھوج کرنے والے سو سے زائد  عملہ کو  آج بھٹکل اسکول ٹیمپو ڈرائیورس  یونین کی طرف سے  دوپہر کا کھانا تقسیم کیا گیا اور  کیرالہ سے خصوصی طور پر    ملبہ ہٹانے کے لئے پہنچے لوگوں کی ہمت بندھائی۔

نیشنل ہائی وے کا غیر سائنٹفک کام - این ای سی ایف نے مرکزی وزیر گڈکری کو بھیجا شکایتی مراسلہ

نیشنل ہائی وے کے مختلف مقامات پر چٹانیں اور زمین کھسکنے کے جان لیوا حادثات کے لئے شاہراہوں کے غیر سائنٹفک توسیعی کام کو ذمہ دار قرار دیتے ہوئے نیشنل اینوائرنمنٹ کیئر فیڈریشن (ین ای سی ایف) نے مرکزی وزیر برائے بری نقل و حمل نتین گڈکری کئی اہم سرکاری افسران کو شکایتی مراسلہ بھیجا ...