کرناٹک ووٹر لسٹ گھوٹالہ: ’27 لاکھ لوگوں کے نام ووٹر لسٹ سے غائب کیسے ہو گئے؟‘ ڈی کے شیوکمار کا سوال

Source: S.O. News Service | Published on 23rd November 2022, 11:13 AM | ریاستی خبریں |

بنگلورو، 23؍نومبر (ایس او نیوز؍ایجنسی) کرناٹک میں کانگریس یونٹ نے منگل کے روز ریاست کی برسراقتدار بی جے پی حکومت سے ووٹر لسٹ سے 27 لاکھ نام ہٹائے جانے پر سوال اٹھایا ہے۔ ریاستی کانگریس صدر ڈی کے شیوکمار نے کہا کہ کسی بھی طرح کے جوڑنے اور ہٹانے کے لیے فارم 7 لازمی ہے۔ شیوکمار نے سوال کیا کہ ان فارم کے بغیر نام کیسے ہٹائے گئے؟ نام ہٹائے جانے کی منظوری پر کس نے دستخط کیے؟ انھوں نے کہا کہ انتخابی کمیشن کے افسران سے آج (منگل) ملنے کا وقت مانگا گیا تھا، لیکن بدھ کو ملاقات کے لیے وقت ملا ہے۔ ہم افسران سے ملنے کے بعد شکایت درج کرائیں گے۔

دراصل ووٹر لسٹ گھوٹالے سے متعلق کئی قانونی ایشوز ہیں۔ کسی کے لیے ووٹرس کی تفصیل حاصل کرنے کی کوئی سہولت نہیں ہے۔ ریاست میں 8250 انتخابی بوتھ ہیں۔ جانچ کے لیے ہر بوتھ پر ایک شخص کی تقرری کی جانی ہے۔ انھوں نے کہا کہ چلوم ادارہ کے ملازمین کے ساتھ 7000 سے زیادہ لوگوں کو معاہدہ کی بنیاد پر کام پر رکھا گیا تھا۔ 28 اسمبلی حلقوں کے سبھی انتخابی افسران کے خلاف معاملہ درج کیا جانا چاہیے۔

گھوٹالے کے بارے میں گرفتار اشخاص کے قبول نامے پر رد عمل ظاہر کرتے ہوئے کہا کہ انھوں نے اسے دباؤ میں کیا ہے، انھوں نے کہا کہ وہ اس کے بارے میں کچھ نہیں جانتے ہیں۔ شیوکمار نے زور دیا کہ انھیں سامنے آنا چاہیے اور بتانا چاہیے کہ کس افسر یا سیاسی لیڈر نے ان پر دباؤ ڈالا۔

اہم ملزم چلوم انسٹی ٹیوشن کے بانی روی کمار سے پولیس لگاتار پوچھ تاچھ کر رہی ہے۔ معاملے میں پانچ لوگوں کو گرفتار کیا گیا ہے۔ روی کمار تب لاپتہ ہو گئے تھے، جب پولیس نے اس کے ادارے پر کارروائی شروع کی تھی، جس پر کانگریس نے فہرست میں ترمیم کے بہانے ووٹرس کے ڈاٹا کی چوری کا الزام لگایا تھا۔ بہرحال، کانگریس مہم پینل کے چیف ایم بی پاٹل کا کہنا ہے کہ پارٹی اگلے دو دنوں میں انتخابی کمیشن کے ساتھ گھوٹالے کے سلسلے میں ایک شکایت پیش کرے گی۔

ایک نظر اس پر بھی

گرام پنچایتوں کیلئے آئین کی نقل تقسیم: وزیر اعلیٰ بسواراج بومئی

وزیر اعلیٰ بسواراج بومئی نے کہا کہ ریاست کے تمام گرام پنچایتوں کی لائبریریوں میں آئین کی نقل کے ساتھ گرام پنچایت 73اور 74ویں ترمیم، پنچایت راج قوانین کی نقول بھی روانہ کرکے وہاں بھی آئین پر مبنی انتظامیہ فراہم کرنا حکومت کا مقصد ہے۔

ووٹر ڈاٹا چوری معاملہ: 4 بی بی ایم پی افسروں سمیت اب تک11افراد گرفتار

ووٹرلسٹوں میں مبینہ ہیراپھیری،چھیڑ چھاڑ اور چیلومے نامی ادارے کے کارکنوں کو سرکاری عہدیداروں کا فرضی شناختی کارڈ دینے کے معاملے کی سختی سے جانچ کرتے ہوئے شہر کی پولیس نے اب تک اس کیس میں 11 افراد کو گرفتار کیا ہے -

بنگلورو: بی بی ایم پی بجٹ میں عوام کو شامل کرنے”مائی سٹی۔مائی بجٹ“ مہم

بروہت بنگلور مہا نگر پالیکے(بی بی ایم پی) بجٹ میں عوامی مشوروں کو شامل کرنے کے مقصد سے جنا گراہا نامی رضاکارانہ ادارے کی جانب سے ہر سال ”مائی سٹی۔مائی بجٹ“(اپنا شہر۔اپنا بجٹ) مہم چلائی جاتی ہے جس کے تحت بی بی ایم پی کے تمام وارڈز میں مہم کے دوران مقامی افراد سے مشورے حاصل کر کے ...

بیلگاوی کرناٹک میں رہے یامہاراشٹر میں کیافرق پڑنے والاہے: کمارسوامی

سابق وزیر اعلیٰ ایچ ڈی کمارسوامی نے بی جے پی کوشدیدتنقیدکانشانہ بناتے ہوئے کہاکہ یکساں سیول کوڈ نافذ کرنے جا رہے بی جے پی والو، کیا آپ یہ نہیں کہہ رہے کہ ہم سب ہندوستانی ہیں؟ اگر ایسا ہے تو بیلگام یہاں کرناٹک میں رہے یامہاراشٹر میں کیافرق پڑنے والاہے،ہم سب ہندوستانی ہیں؟

بیلگام: مدرسہ کی 4طالبات سیلفی لینےکے دوران ندی میں غرق؛ ایک کو بچالیا گیا

بیلگام سرحد سے متصل ، مہاراشٹرا کے کتواڑ فالس میں سیلفی لینے کے دوران مدرسہ میں زیر تعلیم  4طالبات توازن کھو کر غرق ہوگئیں  اور اپنی جان سے ہاتھ دھو بیٹھیں۔ واقعہ سنیچر کو پیش آیا۔ حادثے میں ایک طالبہ کو بچالیا گیا ہے، مگر اس کی حالت نازک بتائی گئی ہے۔

پونے : پھر گرم ہوا کرناٹکا - مہاراشٹرا سرحدی تنازعہ - کرناٹکا کی بسوں پر پوتا گیا کالا رنگ - مہاراشٹرا کی حمایت میں لکھے گئے نعرے

کرناٹکا اور مہاراشٹرا کے بیچ جو سرحدی تنازعہ ہے اس پر کرناٹکا کے وزیر اعلیٰ بسوا راج بومئی نے جو بیان دیا تھا اس کے خلاف مہاراشٹرا کے کئی علاقوں میں مراٹھا تنظیموں نے احتجاجی مظاہرے کیے ۔ اسی کے ساتھ  کے ایس آر ٹی سی  کی بین الریاستی بسوں پر بعض جگہ کالا رنگ پوتا گیا اور اس پر ...