کرناٹک ووٹر لسٹ گھوٹالہ: ’27 لاکھ لوگوں کے نام ووٹر لسٹ سے غائب کیسے ہو گئے؟‘ ڈی کے شیوکمار کا سوال

Source: S.O. News Service | Published on 23rd November 2022, 11:13 AM | ریاستی خبریں |

بنگلورو، 23؍نومبر (ایس او نیوز؍ایجنسی) کرناٹک میں کانگریس یونٹ نے منگل کے روز ریاست کی برسراقتدار بی جے پی حکومت سے ووٹر لسٹ سے 27 لاکھ نام ہٹائے جانے پر سوال اٹھایا ہے۔ ریاستی کانگریس صدر ڈی کے شیوکمار نے کہا کہ کسی بھی طرح کے جوڑنے اور ہٹانے کے لیے فارم 7 لازمی ہے۔ شیوکمار نے سوال کیا کہ ان فارم کے بغیر نام کیسے ہٹائے گئے؟ نام ہٹائے جانے کی منظوری پر کس نے دستخط کیے؟ انھوں نے کہا کہ انتخابی کمیشن کے افسران سے آج (منگل) ملنے کا وقت مانگا گیا تھا، لیکن بدھ کو ملاقات کے لیے وقت ملا ہے۔ ہم افسران سے ملنے کے بعد شکایت درج کرائیں گے۔

دراصل ووٹر لسٹ گھوٹالے سے متعلق کئی قانونی ایشوز ہیں۔ کسی کے لیے ووٹرس کی تفصیل حاصل کرنے کی کوئی سہولت نہیں ہے۔ ریاست میں 8250 انتخابی بوتھ ہیں۔ جانچ کے لیے ہر بوتھ پر ایک شخص کی تقرری کی جانی ہے۔ انھوں نے کہا کہ چلوم ادارہ کے ملازمین کے ساتھ 7000 سے زیادہ لوگوں کو معاہدہ کی بنیاد پر کام پر رکھا گیا تھا۔ 28 اسمبلی حلقوں کے سبھی انتخابی افسران کے خلاف معاملہ درج کیا جانا چاہیے۔

گھوٹالے کے بارے میں گرفتار اشخاص کے قبول نامے پر رد عمل ظاہر کرتے ہوئے کہا کہ انھوں نے اسے دباؤ میں کیا ہے، انھوں نے کہا کہ وہ اس کے بارے میں کچھ نہیں جانتے ہیں۔ شیوکمار نے زور دیا کہ انھیں سامنے آنا چاہیے اور بتانا چاہیے کہ کس افسر یا سیاسی لیڈر نے ان پر دباؤ ڈالا۔

اہم ملزم چلوم انسٹی ٹیوشن کے بانی روی کمار سے پولیس لگاتار پوچھ تاچھ کر رہی ہے۔ معاملے میں پانچ لوگوں کو گرفتار کیا گیا ہے۔ روی کمار تب لاپتہ ہو گئے تھے، جب پولیس نے اس کے ادارے پر کارروائی شروع کی تھی، جس پر کانگریس نے فہرست میں ترمیم کے بہانے ووٹرس کے ڈاٹا کی چوری کا الزام لگایا تھا۔ بہرحال، کانگریس مہم پینل کے چیف ایم بی پاٹل کا کہنا ہے کہ پارٹی اگلے دو دنوں میں انتخابی کمیشن کے ساتھ گھوٹالے کے سلسلے میں ایک شکایت پیش کرے گی۔

ایک نظر اس پر بھی

پاکستان زندہ با د نعرہ کا معاملہ؛ بی جے پی شکست کی مایوسی میں توڑ مروڑ کر پیش کر رہی ہے: ڈی کے شیو کمار

ریاستی نائب وزیر اعلیٰ ڈی کے شیو کمار نے کہا کہ ودھان سودھا میں کسی نے پاکستان زندہ باد کا نعرہ نہیں لگایا۔ اگر وہ پاکستان کی حمایت میں نعرہ بازی کرتے ہوئے چیختے ہیں تو پولیس انہیں لات مار کر اندر ڈال دے گی۔

سائنسی طور پر تصدیق ہوئی تو مجرم کے خلاف قانونی کارروائی کی جائے گی، پاکستان ، یانصیرصاب زندہ باد: ایف ایس ایل سے تحقیق: پرمیشور

ریاستی وزیر داخلہ جی پرمیشور نے کہا کہ ودھان سودھا میں پاکستان زندہ بعد نعرہ بازی کے معاملہ میں پولیس نے از خود شکایت درج کرتے ہوئے کارروائی کی ہے۔ایف ایس ایل کی جانب سے سائنسی بنیاد پر تفتیش کی جارہی ہے۔

ملک کے نازک حالات میں مسلمان پاکستان زندہ کا نعرہ لگانے کی جرأت نہیں کرسکتا!یہ سب گودی میڈیا کی کارستانی ہے،دونوں ایوانوں میں ہنگامے

راجیہ سبھا انتخاب کا نتیجہ ظاہر ہونے کے بعد و دھان سودھا کے لاؤنج میں راجیہ سبھا کے لئے منتخب ہونے والے کانگریس امیدوار ڈاکٹر سید نصیر حسین کے حامیوں نے جشن منایا۔

یلاپور ایم ایل اے ہیبار نے دیا بی جے پی کو شاک ؛ کیا ہیبّار کانگریس میں شامل ہوں گے ؟

پچھلے کچھ دنوں سے یلاپور حلقہ کے ایم ایل اے شیو رام ہیبار کے تعلق سے افواہیں چل رہی تھیں کہ وہ بی جے پی سے واپس کانگریس میں لوٹنے کے لئے پر تول رہے ہیں ۔ اب شیورام ہیبار نے راجیہ سبھا کے لئے اراکین کے انتخاب کے موقع پر اسمبلی سے غیر حاضر رہتے ہوئے بی جے پی کو براہ راست شاک دے دیا ہے ...

ٹمکور ومیں سرجری کے بعد تین خواتین کی موت کا معاملہ ۔ گائنا کالوجسٹ سمیت تین افراد ملازمت سے برطرف

علاج میں کو تاہی کی پاداش میں محکمہ صحت کی کارروائی بروز منگل ایک گائنا کالوجسٹ اور عملے کے دو ارکان کو پاؤ گڑھ ٹاؤن کے ماں اور بچے کے اسپتال میں زیر علاج تین زچہ خواتین کی موت کے معاملہ میں ملازمت سے برخاست کرنے کا حکم دیا گیا۔