وزیر نہ بنائے جانے پر کرناٹک بی جے پی کے رکن پارلیمنٹ رمیش جیگاجناگی ناراض، پارٹی کو 'دلت مخالف' قرار دیا

Source: S.O. News Service | Published on 10th July 2024, 5:00 PM | ریاستی خبریں |

بنگلورو، 10/جولائی (ایس او نیوز /ایجنسی) کرناٹک سے بی جے پی کے رکن پارلیمنٹ اور دلت لیڈر رمیش جیگاجناگی نے کھل کر پارٹی کے خلاف اپنی ناراضگی ظاہر کی ہے اور دعویٰ کیا ہے کہ مرکزی وزراء میں سے زیادہ تر اعلیٰ ذات سے ہیں۔ جبکہ دلتوں کو کنارہ کش کر دیا گیا ہے۔ رمیش جیگاجیناگی سات بار ایم پی رہ چکے ہیں اور 2016 سے 2019 تک وزیر مملکت بھی رہ چکے ہیں۔ فی الحال وہ وجے پورہ سیٹ سے الیکشن جیت چکے ہیں۔

منگل کو میڈیا سے بات کرتے ہوئے ایم پی رمیش نے کہا، بہت سے لوگوں نے مجھے بی جے پی میں شامل نہ ہونے کا مشورہ دیا تھا کیونکہ یہ (پارٹی) 'دلت مخالف' ہے۔ ان سے پوچھا گیا کہ کیا وہ کابینہ وزیر بننا چاہتے ہیں؟ اس پر انہوں نے کہا کہ مجھے مرکزی وزیر کے عہدے کا مطالبہ کرنے کی ضرورت نہیں ہے۔ میرے لیے عوام کی حمایت اہم ہے لیکن جب میں (انتخابات کے بعد) واپس آیا تو لوگوں نے مجھے بہت ڈانٹا۔ بہت سے دلتوں نے مجھ سے بحث کی کہ بی جے پی دلت مخالف ہے اور مجھے پارٹی میں شامل ہونے سے پہلے یہ جان لینا چاہیے تھا۔

انہوں نے کہا، مجھ جیسا دلت شخص واحد شخص ہے جس نے جنوبی ہندوستان میں سات انتخابات جیتے ہیں۔ تمام اونچی ذات کے لوگ کابینہ کے عہدوں پر ہیں۔ رمیش نے پوچھا کہ کیا دلتوں نے کبھی بی جے پی کی حمایت نہیں کی؟ ان کا مزید کہنا تھا کہ اس سے مجھے بہت تکلیف ہوئی ہے۔

72 سالہ رمیش جیگاجیناگی پہلی بار 1998 میں لوک سبھا کے لیے منتخب ہوئے تھے اور اس کے بعد سے تمام انتخابات جیت چکے ہیں۔ وہ 2016 اور 2019 میں پینے کے پانی اور صفائی ستھرائی کے وزیر مملکت رہ چکے ہیں۔

کرناٹک میں کل 28 سیٹیں ہیں اور بی جے پی نے اس بار 17 سیٹیں جیتی ہیں۔ این ڈی اے کی حلیف جے ڈی ایس نے 2 سیٹیں جیتی ہیں۔ کانگریس نے 9 سیٹیں جیتی ہیں۔ کرناٹک سے مودی کابینہ میں چار چہرے ہیں۔ ان میں پرہلاد جوشی کے علاوہ جے ڈی ایس کے شوبھا کراندلاجے، وی سومنا اور ایچ ڈی کمارسوامی کے نام شامل ہیں۔ مودی حکومت میں 29 او بی سی، 28 جنرل، 10 ایس سی، 5 ایس ٹی اور 7 خواتین کو وزیر بنایا گیا ہے۔

ایک نظر اس پر بھی

بینگلورو: دھوتی میں ملبوس کسان کو داخلہ نہ دینے کا معاملہ : حکومت نے دیا سات دن کے لئے مال بند کرنے کا حکم 

دو دن قبل بینگلورو کے ایک مال میں ایک عمر رسیدہ کسان اور اس کے اہل خانہ  کو اس وجہ سے داخلہ دینے سے انکار کیا گیا تھا کہ وہ کسان دھوتی میں ملبوس تھا ۔ اس واقعے کی ویڈیو کلپ وائرل ہونے کے بعد اس کے خلاف آوازیں اٹھنے لگی تھیں اور مال کے خلاف کارروائی کا مطالبہ کیا جا رہا تھا ۔ 

کرناٹک پرائیویٹ فرموں میں کناڈیگاس کے لیے 100فیصد کوٹہ لازمی کرنے والا بل منظور

کرناٹک کی کابینہ نے ایک بل کو منظور کیا ہے جس میں کننڈیگاس کو گروپ سی اور ڈی کے عہدوں کے لیے نجی شعبے میں 100 فیصد ریزرویشن لازمی قرار دیا گیا ہے،  وزیر اعلیٰ سدرامیا نے کہا۔یہ فیصلہ پیر کو ہونے والے کابینہ کے اجلاس میں کیا گیا۔

اگر میرے بیٹے نے کوئی جرم کیا ہے تو پھانسی دے دو ؛پرجول ریونا کے والد ایچ ڈی ریونا کا بیان

جے ڈی ایس ایم ایل اے اور سابق وزیر ایچ ڈی۔ ریونا نے کہا ہے کہ ان کے بیٹے پرجول ریوانا، جو کئی خواتین کے ساتھ جنسی زیادتی کے الزامات کا سامنا کر رہے ہیں، اگر اس نے کوئی جرم کیا ہے تو اسے پھانسی دی جانی چاہیے۔