کرناٹک میں بی جے پی کو 17جے ڈی (ایس) کو دو اور کانگریس کو نو سیٹوں پر ملی کامیابی

Source: S.O. News Service | By I.G. Bhatkali | Published on 4th June 2024, 6:19 PM | ریاستی خبریں |

بھٹکل 4 جون (ایس او نیوز): لوک سبھا  انتخابات  میں کرناٹک کی جملہ 28 سیٹوں میں بی جے پی  نے  17 سیٹوں پر کامیابی حاصل کی اس کی  پارٹنر جے ڈی ایس نے  دو اور کانگریس نے نو سیٹوں پر جیت درج  کرلی ہے۔

اُترکنڑ الوک سبھا حلقہ میں اِس بار بی جے پی نے  اننت کما رہیگڈے کو ٹکٹ نہیں دیا تھا اور اسمبلی الیکشن ہارنے والے ویشویشور ہیگڈے کاگیری کو  میدان میں اُتارا گیا تھا،  اور کاگیری  نے اُترکنڑا میں بی جے پی  کا جیت  کا سلسلہ جاری رکھتے ہوئے   کانگریس کی انجلی نمبالکر کو تین لاکھ سے بھی زائد ووٹوں سے شکست دے دی۔

سابق وزیر اعظم ایچ ڈی دیوے گوڈا کے داماد بی جے پی امیدوار ڈاکٹر سی این منجوناتھ نے بنگلورو دیہی سیٹ پر نائب وزیر اعلیٰ ڈی کے شیوکمار کے بھائی کانگریس اُمیدوار ڈی کے سریش کو زبردست فرق سے شکست دی ۔ بنگلورو کے ایک سرکردہ ماہر امراض قلب ڈاکٹر منجوناتھ سرکاری ملازمت سے ریٹائر ہونے کے بعد انتخابی میدان میں اس وقت کود پڑے تھے  جب بی جے پی نے انہیں تین بار کے ایم پی ڈی کے سریش کے مقابل بنگلورو دیہی سیٹ سے لڑنے کے لئے ٹکٹ کی پیشکش کی تھی۔

 اسی طرح  کرناٹک کے سابق وزیراعلیٰ  اور دیوے گوڈا کے فرزند کماراسوامی نے منڈیا حلقہ سے کانگریس کے امیدوار چندر شیکھر کو جو اسٹار چندرو کے نام سے مشہور ہیں، کو 2.5 لاکھ  ووٹوں سے  شکست دی ۔ اس  خاندان کا ایک اور رکن پرجول ریونا جو دیوے گوڑا کا پوتا ہے اور ایک جنسی ویڈیو گھوٹالے میں پھنس گیا ہے، کانگریس امیدوار شریاس پٹیل سے ہار گیا ہے۔ بی جے پی کے سابق اسپیکر قانون ساز اسمبلی وشویشور ہیگڈے کاگیری جو گزشتہ سال کرناٹک میں اسمبلی انتخابات میں ہار گئے تھے، نے اِس بار  اپنی کانگریس حریف انجلی نمبالکر پر  تین لاکھ سے بھی زائد ووٹوں سے شکست دی۔

اُڈپی-چکمگلور حلقہ   سے بی جے پی کے کوٹا سری نواس پجاری اور بنگلور شمالی سے  بی جے پی کی  فائر برانڈ   شوبھا کرندلاجے نے جیت درج کی۔ اسی کے ساتھ بی جے پی کو دھارواڑ، ہاویری، باگلکوٹ، بینگلور مضافاتی،  بنگلور جنوبی، بینگلور سینٹرل، بیلگاوی، وجئے پور، چکبالاپور، چتردرگہ، دکشن کنڑا، میسور، شموگہ اور ٹمکور میں بھی  کامیابی حاصل  ہوئی۔ دلچسپ بات یہ ہے کہ بی جے پی کے باغی اُمیدوار اور بی جے پی فائر برانڈ لیڈر ایشورپا  جو نے شموگہ میں  آزاد اُمیدوار کی حیثیت سے  میدان میں اُترے تھے، بی جے پی کے   رگھویندرا کے مقابلے میں ہار گئے۔

کانگریس کو جن نو لوک سبھا حلقوں میں کامیابی حاصل ہوئی، اس طرح ہیں:  کلبرگی، ہاسن، کوپّل، بلاری، چامراج نگر، چکوڈی، داونگیرہ، رائچور اور بیدر۔

بتاتے چلیں کہ ہاسن کو  جےڈی ایس کا گڑھ سمجھا جاتا ہے، مگر اس بار ہاسن میں کانگریس نے جیت درج کرلی ہے۔

بینگلور سینٹرل میں ابتدا سے لے کر آخری دو تین  راونڈ سے قبل تک کانگریس کے منصور علی خان کافی آگے چل رہے تھے، لیکن خبر ملی ہے کہ  آخری لمحوں میں  انہیں محض چند ہزار ووٹوں سے شکست ہوگئی ۔

بی جے پی، جس نے 2019 میں 25 سیٹوں پر کامیابی حاصل کی تھی، اِس بار  جے ڈی (ایس) کے ساتھ اتحاد کرنے کے باوجود   17 + 2  یعنی 19 سیٹوں سے آگے نہیں بڑھ پائی۔  تاہم، کانگریس، جو 15 سے 18 سیٹیں حاصل کرنے کی امید کر رہی تھی، نو سیٹوں سے آگے نہیں بڑھ نہیں پائی۔

ایک نظر اس پر بھی

کرناٹک کے سابق وزیر اعلیٰ یڈ یورپا کے خلاف غیر ضمانتی گرفتاری وارنٹ جاری

کرناٹک کی ایک عدالت نے جمعرات کو سابق وزیر اعلی اور سینئر بی جے پی لیڈر بی ایس یڈیورپا کے خلاف POCSO کیس میں ناقابل ضمانت گرفتاری وارنٹ جاری کیا۔ یدی یورپا کے خلاف بچوں کے تحفظ سے متعلق جنسی جرائم ایکٹ (POCSO) کیس کی جانچ کر رہے کرمنل انویسٹی گیشن ڈیپارٹمنٹ (سی آئی ڈی) نے پہلے انہیں ...

کرناٹک کے سابق وزیر اعلیٰ یڈی یورپا کو سی آئی ڈی کا نوٹس، پوسکو معاملے میں تفتیش کے لیے طلب

سی آئی ڈی نے بی جے پی کے سینئر لیڈر اور کرناٹک کے سابق وزیر اعلیٰ بی ایس یڈ ی یورپا کو ان کے خلاف درج پروٹیکشن آف چلڈرن فرام سیکسوئل افینس ایکٹ (پوسکو) کیس میں تفتیش کے لیے طلب کیا ہے۔

سابقہ حکومت کی نجکاری پالیسی پر کانگریس نے وزارتِ اسٹیل کے نئے وزیر ایچ ڈی کمار سوامی سے پوچھے 5 سوالات

نئی تشکیل شدہ این ڈی اے حکومت میں ایچ ڈی کمار سوامی کو اسٹیل کی وزارت دی گئی ہے۔ ان کے اس عہدے پر فائز ہونے کے بعد کانگریس نے ان سے اس وزارت سے متعلق 5 سوالات پوچھے ہیں۔ کانگریس جنرل سکریٹری جے رام رمیش نے سوشل میڈیا پلیٹ فارم ’ایکس‘ کے اپنے اکاؤنٹ پر ایچ ڈی کمار سوامی سے یہ ...

کرناٹک میں کانگریس کی کارکردگی میں مزید بہتری کی ضرورت: ڈی کے شیوکمار

کانگریس کے زیر اقتدار کرناٹک کے نائب وزیر اعلیٰ ڈی کے شیوکمار نے کرناٹک میں کانگریس کی کارکردگی پر عدم اطمینان کا اظہار کیا ہے۔ انہوں نے کہا کہ کرناٹک میں انتخابی نتائج خطرے کی گھنٹی ہیں اور اس میں بہتری کی ضرورت ہے۔ خیال رہے کہ کرناٹک میں کانگریس کو 28 میں سے محض 9 سیٹیں ہی حاصل ...

جنسی استحصال و فحش ویڈیو معاملہ: عدالت نے پرجول ریونا کو 14 دنوں کے لیے عدالتی حراست میں بھیجا

کرناٹک کے فحش ویڈیو معاملے میں پھنسے جنتا دل سیکولر کے معطل لیڈر پرجول ریونا کو 42ویں اے سی ایم ایم کورٹ نے آج 14 دنوں کی عدالتی حراست میں بھیج دیا۔ یعنی اب وہ 24 جون تک جیل میں رہیں گے۔ اس معاملے کی جانچ کر رہی ایس آئی ٹی نے پیر کی صبح پرجول ریوناسے اپنی پوچھ تاچھ مکمل کر لی، اس ...