”ملک کے بہتر مستقبل کے لیے رائے عامہ میں مثبت تبدیلی کو یقینی بنانا جماعت کا میقاتی مشن ہے“: ۔جناب سید سعادت اللہ حسینی،امیر جماعت اسلامی ہند

Source: S.O. News Service | Published on 2nd August 2023, 9:00 AM | ریاستی خبریں | ملکی خبریں |

بنگلور کے حج بھون میں جماعت اسلامی ہند کرناٹک کے ذمہ داران کادو روزہ تنظیمی اجلاس 

نئی دہلی یکم اگست (ایس او نیوز/پریس ریلیز) ”ملک میں رائے عامہ میں مثبت تبدیلی لانا اور اسلام اور اسلامی تعلیمات کے تئیں برادران وطن میں جو غلط فہمیاں پائی جاتی ہیں،انہیں دور کرنا اور اسلامی تعلیمات کو صحیح طور پر ان تک پہنچانا، سب کو تعلیم کے مساوی مواقع اور انصاف ملے جیسے ایشوز جماعت کی ترجیحات میں شامل ہیں“۔ یہ باتیں امیر جماعت اسلامی ہند سید سعادت اللہ حسینی نے بنگلور کے حج بھون میں 30/29/جولائی 2023ء کو منعقدہ جماعت اسلامی ہند کرناٹک کے مقامی، ضلعی، علاقائی اور ریاستی ذمہ داران کے دو روزہ تنظیمی اجلاس میں کلیدی خطاب کرتے ہوئے کیا۔

یہ اجلاس جماعت کی نئی میقات (اپریل2023ء تا مارچ 2027ء) کے میقامی منصوبہ کی تفہیم کے لیے منعقد کیا گیا تھا جس میں جماعت کے ارکان شوریٰ، ریاستی سکریٹریز و معاونین، نظمائے علاقہ، اضلاع و ضلع، ضلعی ذمہ دار، شعبہئ خواتین، امرائے مقامی، مقامی نظماء اور مدعووین خصوصی نے شرکت کی۔

امیر جماعت نے کہا کہ ”اسلام کی تعلیمات کسی خاص فرقے یا کمیونٹی کے لیے مخصوص نہیں ہیں بلکہ تمام انسانوں کی فلاح و بہبود، دنیوی فلاح اور اخروی نجات ان تعلیمات کی نمایاں خصوصیت ہے۔ جماعت چاہتی ہے کہ ملک کے تمام لوگوں کے سامنے یہ بات واضح ہو اور مختلف مذہبی طبقات کے درمیان تعلقات بہتر ہوں۔ ڈائیلاگ اور گفت و شنید کی فضا پیدا ہو۔ نفرتیں ختم ہوں۔ اس کے لیے ملک گیر سطح پر بھی اور ریاستوں اور یونٹوں کی سطح پر بھی سرگرمیاں انجام دی جائیں گی اور سب کی بھلائی اور عدل و انصاف کے لیے مل جل کر کام کرنے کی فضا پروان چڑھائی جائے گی۔ اس کے علاوہ ملک میں پائی جانے والی عام خرابیوں مثلاً اونچ نیچ، عصبیت، لڑکیوں اورخواتین کی حق تلفی، جنین کشی، جہیز، منشیات، کرپشن وغیرہ کے خلاف مسلسل مہمات چلائی جاتی رہیں گی“'۔

انہوں نے مزید کہا کہ”' ماحولیاتی بحران کے سلسلے میں اسلامی نقطہ نظر واضح کیا جائے گا اورماحولیاتی مسائل کو حل کرنے کے لیے مختلف شہروں میں مختلف النوع خصوصی اقدامات کیے جائیں گے، اورمسلم ملت کے اندر ریفارمس کو بھی خصوصی اہمیت دی جائے گی۔ خاص طور پر نکاح آسان ہو، جہیز وغیرہ کی رسم ختم ہو، وراثت میں خواتین کو حصہ دیا جائے، خواتین کے حقوق ادا کیے جائیں، تجارت اور مالی معاملات میں ایمان داری ہو، صفائی ستھرائی ہو، مسلم و غیر مسلم پڑوسیوں کے ساتھ اچھا سلوک ہو، اس طرح کی اسلامی تعلیمات کو نمایاں کیا جائے گا''۔

انہوں نے کہا کہ”جماعت نے طے کیا ہے کہ تعلیم پر خصوصی توجہ دی جائے گی۔ نظام تعلیم کسی مخصوص تہذیب کے تسلط سے پاک اور شمولیاتی ہو، نظام تعلیم اخلاقی قدروں پر مبنی ہو اور تعلیم عام اور تمام شہریوں کے لیے آسانی سے قابل حصول ہو، یہ تعلیم کے سلسلے میں جماعت کی تین اہم ترجیحات ہیں۔ ان کے مطابق حکومت کو بھی متوجہ کرنے کی مسلسل کوشش ہوتی رہے گی اور ان مقاصد کے لیے جماعت کی شاخیں بھی ممکنہ کوشش کریں گی۔ جماعت کی کوشش ہوگی کہ مسلمانوں اور دیگر پسماندہ گروہوں میں تعلیم کا تناسب بڑھے۔ خواندگی کی شرح اور جی ای آر بڑھے اور ان کے تعلیمی مسائل حل ہوں۔ ملک کے کئی خطوں میں نئے تعلیمی اداروں کا قیام بھی اس منصوبے کا اہم جز ہے۔ مسلم ملت اور دیگر پسماندہ گروہوں کو معاشی میدان اور دیگر میدانوں میں آگے بڑھانا بھی جماعت کے منصوبے کا اہم حصہ ہوگا۔

مائکرو فینانس کو ایک تحریک بنا دینے اور غریب لوگوں کو اپنے پیروں پر کھڑا کرنے کے لیے بغیر سود کے قرضے فراہم کرنا، اس کے لیے ادارے قائم کرنا، یہ بھی منصوبے کا اہم جز ہے۔ یہ بھی طئے کیا گیا ہے کہ خدمت خلق کے مختلف کام جو جماعت کررہی ہے ان کے ساتھ ساتھ اس دفعہ صحت عامہ اور میڈیکل کے میدان مین خصوصی کوششیں کی جائیں گی۔ علاج معالجے کے سلسلے میں بروقت رہنمائی اور علاج کے نام پر استحصال سے لوگوں کو بچانے کے لیے خصوصی سیل تمام بڑے شہروں میں قائم کیے جائیں گے۔اوقافی جائدادوں کی بازیابی، ترقی  اور ان کی آمدنی کے صحیح استعمال کے سلسلے میں حکومت، متولیان  اور عوام کو اپنی ذمہ داریوں کی جانب متوجہ کیا جائے گا اور اس کے لیے بھی خصوصی سیل قائم کیے جائیں گے۔

جماعت کی کوششوں کا ایک اہم ہدف یہ ہوگا کہ ملک کے تمام انصاف پسند افراد اور طبقات کے ساتھ مل کر ملک میں امن و امان اور عدل و انصاف کے لیے کوشش کی جائے اور ہر طرح کے ظلم، ناانصافی، فتنہ و فساد، نفرت و تفریق اور خوف و دہشت کے خلاف اس طرح کی جدوجہد کی جائے کہ ان برائیوں سے ہمارا سماج پاک ہو۔اس اجلاس میں نائب امیر جماعت انجینئر محمد سلیم صاحب نے برادران وطن سے ملت کے وسیع پیمانے پر روابط کو یقینی بنانے پر زور دیتے ہوئے کہا کہ ملک میں فسطائی طاقتیں شہریوں میں تفریق پیدا کرنا چاہتی ہیں اور اکثریت اور اقلیت کے مابین دوریاں پیدا کرنا چاہتی ہیں، ہم اس کے برخلاف انسانی بنیادوں پر اخوت و محبت کے فروغ کی کوششیں کریں گے۔برادران وطن سے ہمارا تعلق غیریت کا نہیں بلکہ اپنائیت کا ہونا چاہیے۔اسی خیرخواہی کی بنیاد پر ملک کو ہم فسطائی اثرات سے محفوظ رکھ سکتے ہیں۔

مولانا محمد اقبال ملا صاحب، رکن مرکزی مجلس شوریٰ نے اجلاس کے آغاز میں ”احساس ذمہ داری“پر مؤثر تذکیر فرمائی۔امیر حلقہ ڈاکٹر محمد سعد بلگامی صاحب نے ”مربی داعی اور رہنما“کے عنوان سے ذمہ داروں کی رہنمائی فرمائی۔جماعت کے ریاستی سکریٹریز نے اپنے اپنے متعلقہ اور مفوظہ منصوبوں کی تفہیم کی۔اجلاس میں شریک ذمہ داران کے لیے تبادلہئ خیال کا بھرپور موقع رہا۔مرکز اور ریاست کے میقاتی منصوبہ کی روشنی میں اب کرناٹک کے تمام مقامات پر منصوبہ سازی ہوگی اور اس پر ریاست بھر میں عمل کا آغاز ہوگا۔دعا پر اجلاس اختتام پذیر ہوا۔

ایک نظر اس پر بھی

بی جے پی نے کانگریس ایم ایل اے کو 50 کروڑ روپے کی پیشکش کی؛ سدارامیا کا الزام

کرناٹک کے وزیر اعلی سدارامیا نے ہفتہ کو بھارتیہ جنتا پارٹی (بی جے پی) پر الزام لگایا کہ وہ کانگریس کے اراکین اسمبلی کو وفاداری تبدیل کرنے کے لیے 50 کروڑ روپے کی پیشکش کرکے 'آپریشن لوٹس' کے ذریعے انکی حکومت کو غیر مستحکم کرنے کی کوششوں میں ملوث ہے۔

لوک سبھا انتخاب 2024: کرناٹک میں کانگریس کو حاصل کرنے کے لیے بہت کچھ ہے

کیا بی جے پی اس مرتبہ اپنی 2019 لوک سبھا انتخاب والی کارکردگی دہرا سکتی ہے؟ لگتا تو نہیں ہے۔ اس کی دو بڑی وجوہات ہیں۔ اول، ریاست میں کانگریس کی حکومت ہے، اور دوئم بی جے پی اندرونی لڑائی سے نبرد آزما ہے۔ اس کے مقابلے میں کانگریس زیادہ متحد اور پرعزم نظر آ رہی ہے اور اسے بھروسہ ہے ...

تعلیمی میدان میں سرفہرست دکشن کنڑا اور اُڈپی ضلع کی کامیابی کا راز کیا ہے؟

ریاست میں جب پی یوسی اور ایس ایس ایل سی کے نتائج کا اعلان کیاجاتا ہے تو ساحلی اضلاع جیسےدکشن کنڑا  اور اُ ڈ پی ضلع سر فہرست ہوتے ہیں۔ کیا وجہ ہے کہ ساحلی ضلع جسے دانشوروں کا ضلع کہا جاتا ہے نے ریاست میں بہترین تعلیمی کارکردگی حاصل کی ہے۔

این ڈی اے کو نہیں ملے گی جیت، انڈیا بلاک کو واضح اکثریت حاصل ہوگی: وزیر اعلیٰ سدارمیا

کرناٹک کے وزیر اعلیٰ سدارمیا نے ہفتہ کے روز اپنے بیان میں کہا کہ لوک سبھا انتخاب میں این ڈی اے کو اکثریت نہیں ملنے والی اور بی جے پی کا ’ابکی بار 400 پار‘ نعرہ صرف سیاسی اسٹریٹجی ہے۔ میسور میں صحافیوں سے بات کرتے ہوئے سدارمیا نے یہ اظہار خیال کیا۔ ساتھ ہی انھوں نے کہا کہ ...

بی جے پی نے الیکٹورل بانڈ کے ذریعے دنیا کا سب سے بڑا گھوٹالہ کیا، وزیر اعظم بدعنوانی کے چیمپین ہیں! راہل گاندھی

راہل گاندھی نے کانگریس اور سماجوادی پارٹی کی مشترکہ پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے وزیر اعظم نریندر مودی کو بدعنوانی کا چیمپین قرار دیا۔ انہوں نے کہا کہ بی جے پی نے الیکٹورل بانڈ کے ذریعے بھتہ خوری کی اور دنیا کا سب سے بڑا گھوٹالہ انجام دیا۔ راہل گاندھی نے سوال کیا کہ اگر ...

بی جے پی اپنی ناکامیوں سے توجہ بھٹکانے کے لیے مذہب کی سیاست کر رہی، سچن پائلٹ نے الیکشن کمیشن پر بھی اٹھائے سوال

کانگریس لیڈر سچن پائلٹ نے جموں و کشمیر میں آج انتخابی تشہیر کے دوران بی جے پی حکومت کو تو تنقید کا نشانہ بنایا ہی، الیکشن کمیشن کو بھی کٹہرے میں کھڑا کر دیا۔ انھوں نے منگل کے روز ایک ریلی سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ جب اپوزیشن پارٹیوں کے اکاؤنٹس پر لین دین سے متعلق روک لگائی گئی ...

بی جے پی و آر ایس ایس آئین کو تباہ کرنا چاہتی ہیں جبکہ کانگریس اسے بچانے کی کوشش کر رہی ہے: راہل گاندھی

کیرالہ کے وائناڈ میں کانگریس کے لیڈر راہل گاندھی نے بی جے پی پر سخت حملہ کرتے ہوئے کہا کہ بی جے پی و آر ایس ایس ملک کے آئین کو ختم کرنے کی کوشش کر رہی ہیں جبکہ کانگریس اسے بچانے کی کوشش میں مصروف ہے۔ یہ بیان راہل گاندھی روڈ شو کے دوران دیا جس کو سن کر عوام پورے جوش میں دکھائی دی ...

لوک سبھا انتخابات 2024: کانگریس نے امیدواروں کی نئی فہرست جاری

کانگریس نے لوک سبھا انتخاب کے پیش نظر اپنے امیدواروں کی ایک نئی فہرست جاری کر دی ہے۔ اس فہرست میں جھارکھنڈ کی تین لوک سبھا سیٹوں پر امیدواروں کے ناموں کا اعلان کیا گیا ہے۔ جاری فہرست کے مطابق گوڈا سے دیپکا پانڈے سنگھ، چترا سے کرشنانند ترپاٹھی اور دھنباد سے انوپما سنگھ کو ...

مرکزی وزارت داخلہ کی دوسری منزل پر آتش زدگی، زیروکس مشین، کمپیوٹر اور دیگر دستاویزات خاکستر

آگ لگنے کے واقعات یوں تو ہوتے ہی رہتے ہیں مگر جب حکومت کے دفاتر میں آگ لگنے لگے تو معاملہ کچھ زیادہ ہی سنگین ہو جاتا ہے۔ آتش زدگی کا ایسا ہی ایک واقعہ دہلی میں مرکزی وزارت داخلہ کے دفتر میں پیش آیا ہے۔ اس حادثے میں کسی شخص کے متاثر ہونے کی تو کوئی خبر نہیں ہے البتہ زیروکس ...

تیجسوی یادو کا وزیراعظم پر سخت حملہ؛ 10 سالوں میں مودی جی نے صرف غریبی، بے روزگاری، مہنگائی اور جملہ دیا

لوک سبھا انتخاب سے قبل بیان بازیوں نے رفتار پکڑ لی ہے۔ برسراقتدار طبقہ اپنی خوبیاں بیان کر رہا ہے اور اپوزیشن لیڈران حکومت کی ناکامیوں و عوام مخالف پالیسیوں کو عوام کے سامنے رکھ رہے ہیں۔ اس درمیان تیجسوی یادو نے پٹنہ میں مرکز کی مودی حکومت پر آج زبردست حملہ کیا۔