گجرات فساد پر بی بی سی کی دستاویزی فلم پر پابندی بی جے پی کی بوکھلاہٹ کامظہر:رحمن خان

Source: S.O. News Service | Published on 23rd January 2023, 11:34 AM | ریاستی خبریں | ملکی خبریں |

بنگلورو، 23؍ جنوری (ایس او نیوز؍ایجنسی) 2002 کے گجرات فسادات میں موجودہ وزیراعظم نریندرمودی کے رول پر مشتمل بی بی سی کی طرف سے تیار کی گئی ایک دستاویزی فلم اور اس سے جڑے سوشیل میڈیا مواد پر حکومت ہند کی طرف سے پابندی لگانے کے اقدام پر اپنا رد عمل ظاہر کرتے ہوئے سابق مرکزی وزیر اورسینئر کانگریس رہنما ڈاکٹر کے رحمن خان نے کہا ہے کہ اس اقدام سے صاف ظاہر ہوتا ہے کہ اس ملک میں جمہوریت کس قدر خطرے میں ہے- یہ بھی ثابت ہوتا ہے کہ اس فلم کے سامنے آنے سے حکمران پارٹی کس حد تک بوکھلاہٹ کا شکار ہوچکی ہے-

نمائندے سے خصوصی گفتگو کے دوران انہوں نے کہاکہ جیسے ہی عالمی درجے کے خبر رساں ادارے بی بی سی کی طرف سے تقریباً ایک گھنٹے پر مشتمل یہ دستاویزی فلم منظر عام پر آئی جس طرح ملک کی برسراقتدار سیاسی پارٹی چراغ پا نظر آرہی ہے، اس سے صاف ظاہر ہوتا ہے کہ گجرات فسادات سے متعلق اس دستاویزی فلم میں جو دکھایا گیا ہے وہ ممکن ہے سچ ہو-

ڈاکٹر رحمن خان نے کہا کہ انہوں نے یہ فلم نہیں دیکھی ہے، صرف خبروں میں اس کے بارے میں جانکاری ملی ہے - لیکن جس طرح کا ردعمل مرکزی حکومت کی طرف سے ظاہر کیا جارہا ہے، اس سے عالمی سطح پر ہندوستان کی شبیہ مجروح ہوگی- انہوں نے کہاکہ ہندوستان میں اس فلم اوراس سے جڑے سوشیل میڈیا کے مواد پر پابندی لگادینے سے کیا ساری دنیا اسے نہیں دیکھ سکے گی اور کیا سچائی کو سامنے آنے سے روکا جاسکتا ہے -اس سوال پر کہ کیا اس فلم پر پابندی آزادیئ اظہار کے حق پر حملہ نہیں ہے، ڈاکٹر رحمن خان نے کہاکہ اس ملک میں کس موضوع پر آزادیئ اظہار کا حق مجروح نہیں ہورہا ہے،پہلے یہ طے ہوجانا چاہئے -کہیں راست اورکہیں درپردہ، یہ کوشش مسلسل ہوتی رہی ہے کہ آزادیئ اظہار پر حملہ کیا جائے، اسی سلسلے کی یہ ایک کڑی ہے -

کانگریس رہنما راہل گاندھی کی طرف سے جاری ”بھارت جوڑو یاترا“ کو روک دینے کیلئے مرکز میں حکمران پارٹی کے بعض حلقوں کی کوششوں کے بارے میں ایک سوال کے جواب میں ڈاکٹر رحمن خان نے کہاکہ راہل گاندھی نے جب بھارت جوڑو یاترا کنیاکماری سے شروع کی تھی تو پہلے ہی کلو میٹر پر ان کو روکنے کی کوشش کی گئی اوریاترا کے ہر مرحلے پر ان کو کسی نہ کسی طرح سے ستایا گیا، اس کے باوجود کافی دلیری سے راہل گاندھی نے اپنی یاترا کے 3000 کلو میٹر کا سفر پورا کرلیا ہے -ملک کے عوام کو راہل گاندھی نے جو پیغام دینا تھا وہ دے چکے ہیں، اب روک کر کیا کریں گے -

کرناٹک اسمبلی انتخابات میں کانگریس کے امکانات سے متعلق ایک سوال پر انہوں نے کہاکہ بحیثیت کانگریسی ان کی یہی خواہش ہے کہ پارٹی پوری اکثریت کے ساتھ برسراقتدار آئے- اس کے علاوہ حیدرآباد کی ایک غیرجانبدار ایجنسی کا تازہ سروے اس بات کی طرف اشارہ کرتا ہے کہ کرناٹک میں کانگریس کو اکثریت مل رہی ہے، اس سے خوش آئند بات اور کیا ہوسکتی ہے -

ایک نظر اس پر بھی

پاکستان زندہ با د نعرہ کا معاملہ؛ بی جے پی شکست کی مایوسی میں توڑ مروڑ کر پیش کر رہی ہے: ڈی کے شیو کمار

ریاستی نائب وزیر اعلیٰ ڈی کے شیو کمار نے کہا کہ ودھان سودھا میں کسی نے پاکستان زندہ باد کا نعرہ نہیں لگایا۔ اگر وہ پاکستان کی حمایت میں نعرہ بازی کرتے ہوئے چیختے ہیں تو پولیس انہیں لات مار کر اندر ڈال دے گی۔

سائنسی طور پر تصدیق ہوئی تو مجرم کے خلاف قانونی کارروائی کی جائے گی، پاکستان ، یانصیرصاب زندہ باد: ایف ایس ایل سے تحقیق: پرمیشور

ریاستی وزیر داخلہ جی پرمیشور نے کہا کہ ودھان سودھا میں پاکستان زندہ بعد نعرہ بازی کے معاملہ میں پولیس نے از خود شکایت درج کرتے ہوئے کارروائی کی ہے۔ایف ایس ایل کی جانب سے سائنسی بنیاد پر تفتیش کی جارہی ہے۔

ملک کے نازک حالات میں مسلمان پاکستان زندہ کا نعرہ لگانے کی جرأت نہیں کرسکتا!یہ سب گودی میڈیا کی کارستانی ہے،دونوں ایوانوں میں ہنگامے

راجیہ سبھا انتخاب کا نتیجہ ظاہر ہونے کے بعد و دھان سودھا کے لاؤنج میں راجیہ سبھا کے لئے منتخب ہونے والے کانگریس امیدوار ڈاکٹر سید نصیر حسین کے حامیوں نے جشن منایا۔

یلاپور ایم ایل اے ہیبار نے دیا بی جے پی کو شاک ؛ کیا ہیبّار کانگریس میں شامل ہوں گے ؟

پچھلے کچھ دنوں سے یلاپور حلقہ کے ایم ایل اے شیو رام ہیبار کے تعلق سے افواہیں چل رہی تھیں کہ وہ بی جے پی سے واپس کانگریس میں لوٹنے کے لئے پر تول رہے ہیں ۔ اب شیورام ہیبار نے راجیہ سبھا کے لئے اراکین کے انتخاب کے موقع پر اسمبلی سے غیر حاضر رہتے ہوئے بی جے پی کو براہ راست شاک دے دیا ہے ...

ٹمکور ومیں سرجری کے بعد تین خواتین کی موت کا معاملہ ۔ گائنا کالوجسٹ سمیت تین افراد ملازمت سے برطرف

علاج میں کو تاہی کی پاداش میں محکمہ صحت کی کارروائی بروز منگل ایک گائنا کالوجسٹ اور عملے کے دو ارکان کو پاؤ گڑھ ٹاؤن کے ماں اور بچے کے اسپتال میں زیر علاج تین زچہ خواتین کی موت کے معاملہ میں ملازمت سے برخاست کرنے کا حکم دیا گیا۔

راجیو گاندھی قتل معاملہ کے مجرم سنتھان کی دورۂ قلب سے موت، راجیو گاندھی جنرل اسپتال میں لی آخری سانس

راجیو گاندھی قتل معاملے میں مجرم قرار دیے گئے ٹی ستھیندر راجہ عرف سنتھان کا بدھ کے روز ایک اسپتال میں انتقال ہو گیا۔ میڈیا رپورٹس کے مطابق طبیعت کی ناسازی کے سبب اسے تمل ناڈو کے چنئی واقع راجیو گاندھی جنرل اسپتال میں داخل کرایا گیا تھا۔ اسپتال کے ڈین ای تھیرانی راجن کا کہنا ہے ...

ای ڈی کسی کو بھی سمن جاری کر سکتی ہے، طلب کرنے پر حاضر ہونا ہوگا، سپریم کورٹ کا حکم

سپریم کورٹ نے انسداد منی لانڈرنگ قانون (پی ایم ایل اے) سے متعلق ایک ایسا تبصرہ کیا ہے جو کئی سیاسی لیڈران کی مصیبتیں بڑھانے والا ہے۔ منگل کے روز ایک معاملے کی سماعت کے دوران عدالت عظمیٰ نے کہا کہ منی لانڈرنگ کے معاملے میں اگر کوئی جانچ بیٹھتی ہے اور ای ڈی کسی کو سمن جاری کرتی ہے ...

ای ڈی کی کارروائی کے خلاف ہیمنت سورین کی درخواست پر سماعت مکمل، جھارکھنڈ ہائی کورٹ نے فیصلہ محفوظ رکھا

 سابق وزیر اعلیٰ ہیمنت سورین کی ای ڈی کی کارروائی اور ان کی گرفتاری کو چیلنج کرنے والی درخواست پر بدھ کو جھارکھنڈ ہائی کورٹ میں سماعت مکمل ہو گئی۔ قائم مقام چیف جسٹس ایس جسٹس چندر شیکھر اور جسٹس نونیت کمار کی بنچ نے سماعت کے بعد فیصلہ محفوظ رکھا ہے۔

مدھیہ پردیش میں بارش سے فصلوں کو بھاری نقصان، کانگریس کا معاوضے کا مطالبہ

مدھیہ پردیش میں بارش اور اولے گرنے کی وجہ سے فصلوں کو کافی نقصان پہنچا ہے۔ ریاست کے وزیرِ اعلیٰ ڈاکٹر موہن یادو نے نقصانات کے سروے کا حکم دیا ہے، جبکہ کانگریس نے متاثرہ کسانوں کو فوری طور پر معاوضہ دینے کا مطالبہ کیا ہے۔ کانگریس نے کہا کہ جب تک سروے کی حتمی رپورٹ آئے گی بہت دیر ...

لوک سبھا انتخابات سے قبل بی ایس پی کو ایک اور جھٹکا! گڈو جمالی سماجوادی پارٹی میں شامل

لوک سبھا انتخابات سے پہلے بہوجن سماج پارٹی کو بڑا جھٹکا لگا ہے۔ بی ایس پی لیڈر اور اعظم گڑھ سے لوک سبھا انتخابات کے امیدوار رہے شاہ عالم عرف گڈو جمالی سماج وادی پارٹی میں شامل ہو گئے۔ جمالی کے ایس پی میں شامل ہونے پر سماج وادی پارٹی کے سربراہ اکھلیش یادو نے ان کا خیرمقدم کیا۔

حکومت فوج میں تقسیم پیدا کر رہی ہے، اگنی پتھ اسکیم کے حوالے سے ادھیر رنجن کا بی جے پی پر سخت حملہ

کانگریس کے رکن پارلیمنٹ ادھیر رنجن چودھری نے اگنی پتھ اسکیم کے حوالے سے مرکزی حکومت پر سخت حملہ کیا ہے۔ انہوں نے کہا ہے کہ سابق آرمی چیف ایم ایم نروانے کی کتاب 'فور اسٹارس آف ڈیسٹینی' پر پابندی لگا دی گئی ہے۔ یہ کتاب اب بازار میں دستیاب نہیں ہے۔ سابق آرمی چیف نروانے نے اپنی کتاب ...