ہلدوانی تشدد: ریاستی حکومت کی اپنی ناکامیاں چھپانے کے لیے فرقہ وارانہ ماحول خراب کرنے کی کوشش

Source: S.O. News Service | Published on 11th February 2024, 9:49 PM | ملکی خبریں |

دہرادون،11/فروری (ایس او نیوز/ایجنسی) اتراکھنڈ کے نینی تال ضلع میں ہلدوانی کے بن بھول پورہ علاقے میں 8 فروری کو پیش آئے تشدد کے واقعہ پر کانگریس نے ریاستی حکومت پر حملہ کیا ہے۔ کانگریس کے ریاستی صدر کرن مہارا نے کابینی وزیر گنیش جوشی کے ایک بیان پر جوابی حملہ بولتے ہوئے واقعہ کے لئے ریاست کی بھارتیہ جنتا پارٹی حکومت کو ذمہ دار ٹھہرایا۔ انہوں نے اسے فرقہ وارانہ رنگ دینے کی سوچی سمجھی حکمت عملی قرار دیا۔

کرن مہارا نے حکومت کے سینئر وزیر گنیش جوشی پر ہلدوانی معاملہ کے حوالہ سے سیاست کرنے کا الزام لگانے پر سخت ردعمل کا اظہار کیا۔ انہوں نے کہا کہ ریاستی حکومت اپنی ناکامیوں کو چھپانے کے لیے ریاست کے فرقہ وارانہ ماحول کو خراب کرنے کی کوشش کر رہی ہے۔ جوشی کو چیلنج کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ بی جے پی کی ملک میں فرقہ وارانہ ماحول کو خراب کرنے کی تاریخ رہی ہے اور یہی کام کر کے بی جے پی اتراکھنڈ کے پرامن ماحول کو خراب کر رہی ہے۔

انہوں نے ہلدوانی کیس کی ہائی کورٹ کے موجودہ جج سے جانچ کرانے کا مطالبہ کرتے ہوئے کہا کہ جب عدالت نے 14 فروری کی آخری تاریخ مقرر کی تھی تو پھر ریاستی حکومت کی کیا مجبوری تھی کہ سات دن پہلے شام کو ہی انہدام کر دیا۔ کارروائی کی گئی؟

کانگریس صدر نے کہا کہ انہوں نے خود جائے حادثہ کا دورہ کیا ہے اور وہاں کے مقامی لوگوں سے بات چیت میں حکومت اور مقامی انتظامیہ کی ناکامی واضح طور پر سامنے آئی ہے۔ انہوں نے کہا کہ کارروائی سے قبل انتظامیہ کی جانب سے کوئی سروے نہیں کیا گیا اور نہ ہی مقامی انٹیلی جنس کی جانب سے حکومت کو جائے وقوعہ کی صحیح صورتحال سے آگاہ کیا گیا۔ انہوں نے کہا کہ ہندو مسلم نام کی کوئی چیز نہیں ہے۔ یہ واقعہ صرف ایک برادری کے مذہبی مقام کو گرانے کے انتظامیہ کی کارروائی کے خلاف احتجاج تھا۔

انہوں نے اسے صرف حکومت اور انتظامیہ کی ناکامی قرار دیا اور کہا کہ بی جے پی حکومت کے وزراء اسے فرقہ وارانہ رنگ دینے کی کوشش کر رہے ہیں۔ انہوں نے واقعے میں جاں بحق ہونے والوں کے اہل خانہ سے تعزیت کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ واقعے میں جاں بحق ہونے والوں کے لواحقین اور زخمی ہونے والے صحافیوں اور دیگر افراد کو مناسب معاوضہ دیا جائے۔

ایک نظر اس پر بھی

اُترپردیش کے کاس گنج میں ٹریکٹر ٹرالی تالاب میں اُلٹ گئی؛ 24 افراد ہلاک؛ کئی شدید زخمی

اُترپردیش کے کاس گنج میں ٹریکٹر ٹرالی تالاب میں الٹنے کے نتیجے میں ٹرالی میں سوار54 تالاب میں گر گئے تھے جسمیں سے اب تک 24 لوگوں کی موت واقع ہونے کی اطلاعات ہیں جبکہ بچائے گئے دیگرلوگوں میں کئی لوگوں کی حالت نازک بنی ہوئی ہے۔

سات مطالبات لے کر ایس ڈی پی آئی کیرالہ نے کاسرگوڈ سے ترویندرم تک نکالی احتجاجی ریلی

سوشیل ڈیموکریٹک پارٹی آف انڈیا (SDPI) کیرلا کی جانب سے سات مطالبات لیکر پارٹی کے ریاستی صدر اشرف مولوی کی قیادت میں "جنا مُنیٹّا یاترا " کا آغاز گزشتہ 14فروری کو کاسر گوڈ ضلع کے اپالا شہر سے کیا گیا تھا،یہ یاترا یکم مارچ تک جاری رہے گی اورتریویندرم پہنچ کر اختتام کو پہنچے گی۔

25 لاکھ کا قلم اور 15 لاکھ کا سوٹ استعمال کرنے والے پی ایم مودی غریب ہونے کا ڈرامہ کرتے ہیں! سنجے راؤت

’’بی جے پی کے قومی صدر جے پی نڈا نے اپنے کارکنوں کو مشورہ دیا ہے کہ وہ عام لوگوں کے درمیان جاتے ہوئے سادگی اپنائیں۔ مہنگی گھڑیوں اور کاروں کا استعمال نہ کریں۔ لیکن جے پی نڈا کا یہ مشورہ وزیر اعظم مودی پر لاگو نہیں ہوتا ہے۔ پی ایم مودی اپنے جیب میں جو قلم رکھتے ہیں اس کی قیمت 25 ...

اروند کیجریوال کو ای ڈی کی جانب سے ساتواں سمن جاری، 26 فروری کو حاضر ہونے کی ہدایت

 دہلی کے وزیراعلیٰ اروند کیجریوال کو ای ڈی کی جانب سے ساتواں سمن موصول ہوا ہے۔ ای ڈی نے جمعرات 22 بائیس فروری کو انہیں سمن ارسال کرتے ہوئے پیر کو پوچھ گچھ کے لیے طلب کیا ہے۔ اس سے قبل اروند کیجریوال کو پیر 19 فروری 2024 کو ای ڈی کے سامنے پیش ہونا تھا لیکن وہ حاضر نہیں ہوئے۔ دہلی کے ...

ستیہ پال ملک کے گھر اور دفتر پر سی بی آئی کا چھاپہ، جموں و کشمیر کے بھی 30 مقامات پر چھاپہ ماری

 سی بی آئی نے جموں و کشمیر کے کیرو ہائیڈرو الیکٹرک پروجیکٹ سے متعلق بدعنوانی کے معاملے میں جمعرات کی صبح دہلی میں سابق گورنر ستیہ پال ملک کی رہائش گاہ اور دفتر کی تلاشی لی۔ نیوز پورٹل ’آج تک‘ کی رپورٹ کے مطابق مرکزی ایجنسی نے جموں و کشمیر میں 30 مقامات پر بھی چھاپے مارے۔

آنسو گیس کے گولوں سے کسان رہنما جگجیت سنگھ ڈلیوال کی طبیعت خراب، اسپتال کے ایمرجنسی وارڈ میں داخل

 کسان تحریک کے دوسرے مرحلے کے دوران اہم رہنما کے طور پر ابھرنے والے بھارتیہ کسان یونین لیڈر جگجیت سنگھ ڈلیوال کی طبیعت بدھ کی شام اچانک بگڑ گئی۔ انہیں پٹیالہ کے راجندرا اسپتال کے ایمرجنسی وارڈ میں داخل کرایا گیا ہے۔