سابق اُترکنڑا ایم پی اننت کمار ہیگڑے نے خود اپنے پیر پر ماری کلہاڑی - ایک زمانے کا ہیرو اب بن گیا زیرو !

Source: S.O. News Service | By I.G. Bhatkali | Published on 7th June 2024, 10:11 PM | ساحلی خبریں |

بھٹکل7 / جون (ایس او نیوز)  آج کل ضلع شمالی کینرا کی سیاسی گلیاروں میں ہر کوئی یہ محسوس کر رہا ہے کہ سابق ایم پی اننت کمار ہیگڑے نے اپنے غرور اور تکبر کی لہروں میں بہتے ہوئے خود اپنے ہی پیر پر کلہاڑی مارنے کا کام کیا ہے ۔ 

    اب یہ کوئی ڈھکی چھپی بات نہیں رہی  کہ حالیہ لوک سبھا الیکشن میں ٹکٹ نہ ملنے کی وجہ سے اننت کمار ہیگڑے نے اپنی پارٹی کے امیدوار وشویشورا ہیگڑے کاگیری کی تشہیری مہم کے ساتھ دور  رہنے اور انہیں شکست سے دوچار کرنے کی کوشش کی اور اس کے باوجود وشویشور ہیگڈے کاگیری  نے  شاندار جیت درج کی  جس  کے بعد اب ضلع بی جے پی کے لئے ایک زمانے تک ہیرو بنے رہنے والے اننت کمار ہیگڑے کی حیثیت زیرو ہوگئی ہے ۔ 

    اننت کمار ہیگڑے کے دماغ میں یہ سنک بیٹھ گئی تھی کہ ضلع میں اسی کی وجہ سے بی جے پی کا  بھرم باقی ہے ۔ جو کچھ بھی سیاسی استحکام پارٹی کو ملا ہے وہ بس اسی کی وجہ سے ہے  اس لئے وہ پارٹی کو اپنی انگلیوں پر نچاتا رہے گا اور پارٹی ہر طرح اس کو برداشت کرتی رہے گی ۔ 

    اسی خر دماغی اور اپنی بالا دستی بنائے رکھنے کے زعم میں اس نے پارٹی کے اندر کسی دوسرے لیڈر کو ابھرنے بھی نہیں دیا ۔ اننت کمار ہیگڑے کی اس سوچ کا شکار ہونے والوں میں بھٹکل اسمبلی حلقے کے سابق ایم ایل اے اور وزیر شیوانند نائک، یلاپور حلقے کے وی ایس پاٹل، کاروار کے گنگا دھر بھٹ، کمٹہ کے ششی بھوشن ہیگڑے کے نام گنائے جا سکتے ہیں ۔ ان تمام لیڈروں نے جب دوسری مرتبہ انتخاب میں ٹکٹ حاصل کیا تو اننت کمار ہیگڑے نے ہاتھ پر ہاتھ دھرے گھر میں بیٹھتے  ہوئے کسی کے لئے بھی تشہیری مہم یا انہیں جیت دلانے کی مشقت نہیں کی، جس کی وجہ سے یہ امیدوار الیکشن ہار گئے تھے ۔ اسی پس منظر میں اننت کمار پر اپنی ہی پارٹی کے لیڈروں کو خود سے آگے نکلنے سے روکنے کے لئے مخالفین سے ہاتھ ملانے کے  الزامات بھی لگتے رہے ۔

    یہ بھی درست ہے کہ اننت کمار ہیگڑے نے  انکولہ حلقے سے سرسی حلقے میں آنے والے وشویشورا ہیگڑے کاگیری کی ہمیشہ مخالفت کی تھی ۔ گزشتہ اسمبلی الیکشن میں سرسی اسمبلی حلقہ میں  کاگیری کی ہار کا ایک سبب یہ بھی ہو سکتا ہے ۔ مگر اس بار اننت کمار کے داو پیچ کام نہیں آئے اور کاگیری کی جیت نے اننت کمار کی دھجیاں بکھیر دیں ۔

    دیش پریم اور ہندوتوا کا جھنڈا اٹھائے رکھنے والے اننت کمار ہیگڑے پر نظر رکھنے والوں کا کہنا ہے کہ وہ ایڈجسٹ منٹ پالیٹکس کا گیم کھیلنے میں بھی ماہر ہے ۔ گزشتہ کئی انتخابات میں اننت کمار ہیگڑے کا یہ چہرا بھی جانکاروں نے صاف دیکھا ہے ۔ بعض سیاسی تجزیہ کار کہتے ہیں کہ اننت کمار نے اسی ایڈجسٹ منٹ پالیٹکس کے تحت بھٹکل میں اپنی پارٹی کے شیوانند نائک کو ہرانے کے لئے کانگریس کے جے ڈی نائک کو، کمٹہ میں ششی بھوشن کو شکست دینے کے لئے دینکر شیٹی کو، ہلیال میں سنیل ہیگڑے کے مقابلے میں دیشپانڈے کے ساتھ ساز باز کی تھی اور انہیں جیت درج کرنے کے لئے سہولت پہنچائی تھی ۔کہا جاتا ہے کہ اس سے اننت کمار ہیگڑے  نے دو طرح کے فائدے حاصل کیے ۔ پہلا یہ کہ دوسرے مرحلے کی قیادت کو ابھرنے کا موقع نہیں ملا ۔ دوسرا یہ کہ اسمبلی الیکشن میں کانگریسی امیدواروں کو فائدہ پہنچا کر پارلیمانی الیکشن میں ان لیڈروں سے اپنے لئے حمایت کو یقینی بنا لیا ۔ بتایاجاتا ہے کہ  2024 کے لوک سبھا الیکشن میں اپنی جیت کو یقینی بنانے کے لئے 2023  کے اسمبلی الیکشن میں بھی اننت کمار ہیگڑے نے یہی چال چلی تھی ، مگر اننت کمار کی بدقسمتی کہیں کہ وشویشورا ہیگڑے کاگیری کے ستارے عروج پر تھے اور وہ زبردست جیت سے ہمکنار ہوگئے ۔ 
    لوگوں کو یہ بھی کہتے ہوئے سنا گیا ہے کہ اننت کمار ہیگڑے نے 2023 کے اسمبلی الیکشن میں پارٹی کے جن امیدواروں کو نقصان پہنچایا تھا اور رکن پارلیمان کی کرسی حاصل کرنے کے لئے کسی کے اندر دم نہ ہونے کا جو چیلنج کیا تھا اس سے تلملائے ہوئے پارٹی کے لیڈروں اور کارکنان نے اس مرتبہ لوک سبھا انتخابات میں کاگیری کی جیت کی شکل میں اننت کمار کو ہی سبق سکھا دیا ۔ 

ایک نظر اس پر بھی

اتر کنڑا میں نیشنل ہائی وے پر حادثے میں موت ہونے پر افسران کے خلاف درج ہوگا مقدمہ - نومنتخب رکن پارلیمان کاگیری نے دی وارننگ

نومنتخب رکن پارلیمان وشویشورا ہیگڑے کاگیری نے محکمہ جاتی افسران کے ساتھ منعقدہ اپنی پہلی میٹنگ میں ضلع پولیس سپرنٹنڈنٹ کو سخت ہدایت دیتے ہوئے کہا کہ اگر ضلع اتر کنڑا میں غیر سائنٹفک انداز میں کیے گئے نیشنل ہائی وے کے تعمیراتی کام کی وجہ سے حادثہ رونما ہوتا ہے اور اس میں عام ...

بھٹکل تعلقہ ہاسپٹل رکھشا سمیتی کی میٹنگ میں وزیر منکال وئیدیا نے دیا تیقن : 250 بستروں والا اسپتال جلد ہوگا منظور

بھٹکل تعلقہ ہاسپٹل کے ہال میں ایڈمنسٹریٹیو میڈیکل آفیسر ڈاکٹر سویتا کامت کی صدارت میں منعقدہ ہاسپٹل رکھشا سمیتی کی میٹنگ میں ضلع انچارج وزیر منکال وئیدیا نے تیقن دیا کہ یہاں 250 بستروں والا ہاسپٹل جلد ہی منظور ہو جائے گا

بھٹکل پولیس گراونڈ میں راستے پر لگے بیریکیڈس - اسسٹنٹ کمشنر نے دیا 'جوں کی توں حالت' برقرار رکھنے کا حکم

پولیس میدان سے گزرنے والے عام پیدل راستے پر پولیس کی طرف سے لگائی گئی رکاوٹوں کے سلسلے میں بھٹکل اسسٹنٹ کمشنر ڈاکٹر نئینا نے اس زمین کا سروے مکمل ہونے تک جوں کی توں حالت برقرار رکھنے کے احکام جاری کیے

منگلورو میں طلباء کے والدین کو دھمکی والے فون کالس - پولیس کمشنر نے کہا : پولینڈ اور پاکستان کے کوڈ کا ہوا ہے استعمال

منگلورو شہر کے علاوہ سورتکل میں 11 اور 12 جون کو کالجوں میں زیر تعلیم طلباء کے والدین کو ان کے بچوں کے اغوا یا سنگین جرائم میں گرفتاری کی بات کہتے ہوئے تاوان کی رقم طلب کرنے کے  جو دھمکی والے فون کالس آئے تھے اس کے سلسلے میں پولیس کمشنر نے انوپم اگروال نے بتایا کہ فریب کاروں نے فون ...

بھٹکل میں وزیر منکال وئیدیا نے افسران سے کہا : کام کرنا ہے تو رہیں ورنہ دوسری جگہ چلے جائیں 

اسسٹنٹ کمشنر کے دفتر میں مانسون اور قدرتی آفات سے متعقلہ معاملات سے نمٹنے کے اقدامات کا جائزہ لینے کے لئے کل جو میٹنگ منعقد ہوئی تھی اس میں افسران سے خطاب کرتے ہوئے ضلع انچارج وزیر منکال وئیدیا نے کہا جن لوگوں کو کام کرنے میں دلچسپی ہے وہ لوگ یہاں رہیں اور جنہیں دلچسپی نہیں ہے ...

منگلورو : بی جے پی کارکنان کے خلاف کیس داخل کرنے میں کانگریس کا ہاتھ ہے ۔ کیپٹن چوتا کا الزام

دکشن کنڑا حلقے سے بی جے پی کے نومنتخب رکن پارلیمان کیپٹن برجیش چوتا نے کانگریس پر الزام لگایا کہ اس کے دباو کی وجہ سے بولیار چاقو زنی معاملے میں پولیس نے بی جے پی کارکنان پر کیس داخل کیا ہے ۔