بھٹکل؛ اتر کنڑا میں کانگریسی امیدوار کی جیت کے لئے ایک ہوگئے سابق اور موجودہ وزراء

Source: S.O. News Service | Published on 2nd April 2024, 4:40 PM | ساحلی خبریں |

بھٹکل، 2 / اپریل (ایس او نیوز) پارلیمانی الیکشن میں اتر کنڑا حلقے سے کانگریسی امیدوار ڈاکٹر انجلی نمبالکر کو جیت سے ہمکنار کرنے کے لئے سابق وزیر آر وی دیشپانڈے اور موجودہ وزیر منکال وئیدیا نے ہاتھ ملالیا ہے جسے کانگریسی پارٹی کے لئے اچھی علامت سمجھا جا رہا ہے۔
    
سیاسی حلقے میں یہ بات مشہور ہے کہ اس بار اسمبلی الیکشن کے بعد کانگریس نے جب اقتدار سنبھالا تو پارٹی نے ضلع کے سینئر ترین لیڈر دیشپانڈے کو وزارتی قلمدان سے دور رکھتے ہوئے منکال وئیدیا کو کابینہ میں شامل کر لیا جس کی وجہ سے دیشپانڈے ناراض ہوگئے اور پارٹی کی سرگرمیوں سے کچھ دوری اختیار کر لی۔ دوسری طرف منکال وئیدیا نے بھی وزارتی قلمدان سنبھالنے کے بعد اب تک دیشپانڈے کے حلقے ہلیال اور ڈانڈیلی سے اپنے آپ کو دور ہی رکھا تھا۔
    
سمجھا جاتا ہے کہ وزیر اعلیٰ سدارامیا نے دیشپانڈے کو اور نائب وزیر اعلیٰ ڈی کے شیوا کمار نے منکال وئیدیا کو ضلع اتر کنڑا سے کانگریسی امیدوار کو کسی بھی قیمت پر جیت دلانے کا ٹارگیٹ دے رکھا ہے جسے پورا کرنے کے لئے اب یہ دونوں لیڈران یکجا ہوئے ہیں اور پارٹی امیدوار کے حق میں تشہیری مہم کے لئے میدان میں اتر گئے ہیں۔
    
اطلاع کے مطابق آر وی دیشپانڈے اور منکال وئیدیا نے پارٹی کی امیدوار ڈاکٹر انجلی نمبالکر کے ساتھ ہلیال، جوئیڈا اور ڈانڈیلی تعلقہ جات میں تشہیری مہم چلائی اور تینوں ایک ہی کار میں سفر کرتے ہوئے بھی نظر آئے جس کا مطلب یہ ہے کہ پارٹی کی جانب سے دیا گیا چیلینج قبول کرتے ہوئے ان دونوں لیڈروں نے آپسی دوری اور اندرونی رنجش کو ختم کیا ہے اور ہر حال میں پارٹی امیدوار کو جیت دلانے کے مقصد سے سرگرم ہوگئے ہیں۔ 
    
معلوم ہوا ہے کہ دیشپانڈے نے ایک عرصے بعد خانہ پور علاقے کا بھی دورہ کیا جہاں مراہٹی بولنے والوں کی اکثریت ہے اور یہ دیشپانڈے کے کٹر حامیوں کا علاقہ سمجھا جاتا ہے۔ اس علاقے میں دیشپانڈے کی طرف سے تشہیری مہم میں حصہ لینا کانگریسی امیدوار کے حق میں اچھے نتائج کا سبب بن سکتا ہے۔
    
اب جبکہ گزشتہ کئی برسوں سے اتر کنڑا پارلیمانی حلقے کی سیٹ کو اپنی گرفت میں رکھنے والے اننت کمار ہیگڑے کو بی جے پی نے میدان سے ہٹا دیا ہے اور وشویشورا ہیگڑے کاگیری کو ٹکٹ دے کر مقابلے کے لئے اتارا ہے، جس کے بعد اننت کمار ہیگڑے نے ناراض ہو کر تشہیری مہم سے کنارہ کشی کر لی ہے تو دیشپانڈے کا پوری طرح سرگرم ہوجانا اور منکال کے ساتھ دوری ختم کرتے ہوئے مشترکہ طور پر جد و جہد کے لئے آگے بڑھنا کانگریس پارٹی اور اس کی امیدوار کے لئے جیت کا راستہ آسان کر سکتا ہے ۔  

ایک نظر اس پر بھی

بھٹکل میں موسلادھار بارش کا سلسلہ جاری؛ عیدگاہ میں نہیں ہوگی نماز عیدالاضحیٰ؛ جامع مساجد میں صبح سات اور سوا سات بجے ہوگی عید کی دوگانہ

بھٹکل  سمیت ساحلی کرناٹکا میں گذشتہ ایک ہفتہ سے موسلادھار بارش کا سلسلہ جاری ہے جس کو دیکھتے ہوئے بھٹکل میں عیدگاہ کمیٹی نے عیدالاضحیٰ کی نماز  شہر کی تمام جامع مساجد میں ادا کرنے کا فیصلہ کیا ہے۔

بھٹکل میں عدالت کے تعمیری منصوبے کے لئے 12 کروڑ روپے کی منظوری - بار ایسو سی ایشن نے کی وزیر منکال وئیدیا کی تہنیت

بھٹکل میں عدالت کی نئی عمارت تعمیر کرنے کے لئے بھٹکل کے ایم ایل اے اور وزیر منکال وئیدیا کی خصوصی دلچسپی اور کوششوں سے حکومت کی طرف سے 12 کروڑ روپے کا فنڈ منظور کیا گیا ہے ۔

جوئیڈا کے رام نگر میں خود سوزی کی وجہ سے نوجوان کی موت - پولیس پر ہراسانی کا الزام - کُونبی سماج کا احتجاج 

تعلقہ کے رام نگر پولیس تھانے کے افسران کی طرف سے ہراسانی کا الزام لگاتے ہوئے کُونبی سماج کے جس نوجوان نے پولیس اسٹیشن کے احاطے میں اپنے جسم پر پٹرول چھڑک کر خود سوزی کی تھی ، اس نے بیلگام کے اسپتال میں دم توڑ دیا ۔ جس کے بعد قصوروار پی ایس آئی اور عملے کے خلاف کارروائی کا مطالبہ ...

تجارتی اور تعلیمی میدان کی ایک نامور شخصیت : منگلورو یونیورسٹی سے اعزازی ڈاکٹریٹ کی ڈگری پانے والے تُمبے محی الدین کی خدمات پر ایک نظر

منگلورو یونیورسٹی سے اعزازی ڈاکٹریٹ کی ڈگری پانے والے  ڈاکٹر تُمبے محی الدین صاحب کی شخصیت کا جائزہ لیا جائے تو پتہ چلتا ہے کہ آج خلیجی ممالک میں تجارتی اور تعلیمی میدان ایک بڑی شخصیت کے طور پر پہنچانے جا رہے تمبے محی الدین صاحب نے 21 سال کی عمر میں ہی تجارتی دنیا میں قدم رکھا ...

منگلورو یونیورسٹی کی جانب سے ڈاکٹر تُمبے محی الدین ، ڈاکٹر رونالڈ کولاسو اور کے پرکاش کو تفویض کی گئی اعزازی ڈاکٹریٹ کی ڈگری

مشہور و معروف غیر مقیم ہندوستانی تاجر ڈاکٹر تُمبے محی الدین، ڈاکٹر رونالڈ کولاسو اور پرکاش شیٹی کو منگلورو یونیورسٹی کی جانب سے اعزازی ڈاکٹریٹ (پی ایچ ڈی) کی ڈگری تفویض کی گئی ۔  

بولیار مسجد کے سامنے اشتعال انگیزی کی طرح خاطیوں پر حملہ بھی غلط، سوشیل میڈیا پر جعلی پیغامات وائرل کرنے والوں پر بھی کارروائی : یوٹی قادر

ریاستی قانون ساز  اسمبلی کے اسپیکر یوٹی قادر نے کہا کہ منگلور و اسمبلی حلقہ کا   بولیار گرام ہم آہنگی کی ایک مثال ہے، جہاں مقامی لوگ اور  پولیس حالیہ واقعہ سے متعلق معاملے کو حل کرنے جا رہے  ہیں۔ یوٹی  قادر نے کہا کہ اگر باہر کے لوگ اپنا منہ بند رکھیں  تو یہ ملک سے حقیقی دیش ...