بھٹکل: وینکٹاپور ندی میں مچھلیوں کے شکار کے لئے بچھائے گئے جال سے مچھلیوں کی چوری

Source: S.O. News Service | By I.G. Bhatkali | Published on 24th November 2022, 8:11 PM | ساحلی خبریں |

بھٹکل 24 نومبر (ایس او نیوز)بھٹکل تعلقہ کے وینکٹاپور ندی میں مچھلیوں کے شکار کے لئے بچھائے گئے جال کو  کاٹ کر مچھلیوں کی چوری کی واردات پیش آئی ہے۔ بتایا گیا ہے کہ کم و بیش ڈیڑھ لاکھ مالیت کی مچھلیوں کو چرایا گیا ہے، ساتھ ساتھ بچھائی گئی جال کو بھی کاٹ کر نقصان پہنچایا گیا ہے۔

تینگنگونڈی کے رہنے والے  لنگیّا موگیر نے بھٹکل مضافاتی پولس تھانہ میں درج اپنی شکایت میں کہا ہے کہ  ہمیشہ کی طرح اس نے وینکٹاپور ندی میں مچھلیوں کے شکار کے لئے جال بچھایا تھا، مگر  آج بچھائے گئے جال کو ہی کسی نے کاٹ کر جال میں پھنسنے والی مچھلیوں کو بھی چرالیا ہے۔ 

پولس نے اس تعلق سے معاملہ درج کیا ہے، اور چھان بین جاری ہے۔

ایک نظر اس پر بھی

کاروار کے سمندر میں لگا ہوا 'رڈار' بھی چوروں کے ہاتھ سے بچ نہ سکا !

زمین پر سے قیمتی مشینیں چرانے والوں نے اب سمندر میں اپنے ہاتھ کی صفائی دکھانا شروع کیا ہے جس کی تازہ ترین مثال ماحولیاتی تبدیلیوں کے سگنل فراہم کرنے کے لئے کاروار کے علاقے میں بحیرہ عرب میں لگائے گئے 'رڈار' کی چوری ہے ۔

کمٹہ کے سمندر میں چینی جہاز کا معاملہ - کوسٹ گارڈ نے کہا : ہندوستانی حدود کی خلاف ورزی نہیں ہوئی

دو دن قبل کمٹہ کے قریب ہندوستانی سمندری سرحد میں چینی جہاز کی موجودگی اور اس سے ساحلی سیکیوریٹی کو درپیش خطرے کے تعلق سے جو خبریں عام ہوئی تھیں اس پر کوسٹ گارڈ نے بتایا ہے کہ یہ ایک جھوٹی خبر تھی اور چینی جہاز ہندوستانی سرحد میں داخل نہیں ہوا تھا ۔

ہوناور کاسرکوڈ میں ماہی گیروں پر زیادتیوں کے خلاف حقوق انسانی کمیشن سے کی گئی شکایت

ہوناور کے کاسرکوڈ ٹونکا میں مجوزہ تجارتی بندرگاہ کی تعمیر کے خلاف احتجاج کرنے والے مقامی ماہی گیروں  پر پولیس کی طرف سے لاٹھی، خواتین سمیت کئی لوگوں کی گرفتاریاں ، جھوٹے مقدمات کی شکل میں جو زیادتیاں ہوئی تھیں، اس کے تعلق سے حقوق انسانی کمیشن سے شکایت کی گئی ہے ۔

بھٹکل میں 'ریت مافیا' کا دربار - تعلقہ انتظامیہ خاموش - عوام بے بس اور لاچار

بھٹکل میں تعلقہ انتظامیہ کی خاموشی کی وجہ سے تعلقہ کے گورٹے، بیلکے، جالی، مُنڈلی نستار، بئیلور جیسے علاقوں میں ساحل سے ریت جیسی سمندری دولت لوٹنے کا کام 'ریت مافیا' کی طرف سے بلا روک ٹوک جاری ہے اور مقامی عوام پریشانی اور بے بسی و لاچاری سے یہ سب دیکھنے پر مجبور ہوگئے ہیں ۔