ہوناور میں دو دوستوں کے بیچ مالی لین دین کا تنازعہ -تیسرا بےقصور شخص مارا گیا

Source: S.O. News Service | By I.G. Bhatkali | Published on 30th November 2023, 12:21 PM | ساحلی خبریں |

ہوناور 30 / نومبر (ایس او نیوز) ہوناور تعلقہ کے آرے انگڈی گاوں میں دو دوستوں کے بیچ مالی لین دین کا جھگڑا قتل کی واردات میں بدل گیا جس میں ایک تیسرے غیر متعلق شخص کی جان چلی گئی ۔

بتایا جاتا ہے کہ آرے انگڈی کے ونائیک بھٹ ، جناردھن کیشو نائک اور وسنت نائک گہرے دوست تھے ۔ جناردھن کیشو نائک اور ونائیک بھٹ کے درمیان منگل کے دن دوپہر سے رات تک 25 ہزار روپے کے معاملے پر جھگڑا ہوا ۔ رات 9.30 بجے جب جھگڑا ہوا تو وسنت نائک اور جناردھن نائک نے اولوین نامی شخص کا آٹو رکشہ کرایے پر لے کر آرے انگڈی کی طرف چلے گئے ۔ 

اس دوران مشتعل ونائیک بھٹ نے رات 11 بجے کے قریب وسنت اور جناردھن نائک کو جان سے مارنے کی نیت سے انہیں اپنے ٹیپّر سے کچلنے کا فیصلہ کیا اور ایک جگہ پارک کیے ہوئے اولوین کے آٹو رکشہ پر اپنا ٹیپّر چڑھا دیا ۔ چونکہ جناردھن اور وسنت دونوں رکشہ سے باہر نکل کر ایک طرف کھڑے آپس میں بات چیت میں مصروف تھے اس وجہ سے وہ دونوں صرف زخمی ہوگئے ، جبکہ آٹو میں بیٹھا ہوا ڈرائیور اولوین موقع پر ہی فوت ہوگیا ۔ اس طرح دو افراد کے جھگڑے میں تیسرا بے قصور اپنی جان گنوا بیٹھا ۔

ٹیپّر کے حملے میں شدید زخمی ہوئے جناردھن کو اڈپی کے نجی اسپتال میں داخل کیا گیا ہے جبکہ وسنت نائک کا علاج ہوناور اسپتال میں کیا جا رہا ہے ۔ ملزم ونائیک بھٹ فرار ہوگیا ہے ۔ 
    وسنت نائک کی شکایت پر ہوناور پولیس نے کیس درج کیا ہے ۔ واردات کے اطلاع ملنے پر ضلع پولیس سپرنٹنڈنٹ وشنو وردھن نے  موقعہء واردات پر پہنچ کر معائنہ کیا ۔ ملزم کی گرفتاری کے لئے پولیس سرگرم ہوگئی ہے ۔ 
    اس واردات کے پیچھے ریت کے غیر قانونی کاروبار سے متعلق تنازعہ ہونے کی بھی بات سننے میں آ رہی ہے کیونکہ ملزم ونائیک بھٹ بھی مبینہ طور پر ریت کے غیر قانونی کاروبار میں شامل ہے ۔ جس ٹیپّر سے قاتلانہ حملہ کرکے ایک بے قصور رکشہ ڈرائیور کی جان لی گئی ہے اس ٹیپّر پر بھی جگہ جگہ ریت چپکی ہوئی موجود ہے ، جس کی وجہ سے سمجھا جا رہا ہے کہ ملزم نے رات کے اندھیرے میں شائد ریت سپلائی کرکے لوٹتے وقت یہ قاتلانہ واردات انجام دی تھی ۔ اس کے علاوہ پولیس کے رویے پر شکوک ظاہر کیے جا رہے ہیں کیونکہ ملزم اپنا ٹیپّر پولیس اسٹیشن کے احاطے میں چھوڑ کر فرار ہوا ہے ۔ 

ایک نظر اس پر بھی

کاروار کے سمندر میں لگا ہوا 'رڈار' بھی چوروں کے ہاتھ سے بچ نہ سکا !

زمین پر سے قیمتی مشینیں چرانے والوں نے اب سمندر میں اپنے ہاتھ کی صفائی دکھانا شروع کیا ہے جس کی تازہ ترین مثال ماحولیاتی تبدیلیوں کے سگنل فراہم کرنے کے لئے کاروار کے علاقے میں بحیرہ عرب میں لگائے گئے 'رڈار' کی چوری ہے ۔

کمٹہ کے سمندر میں چینی جہاز کا معاملہ - کوسٹ گارڈ نے کہا : ہندوستانی حدود کی خلاف ورزی نہیں ہوئی

دو دن قبل کمٹہ کے قریب ہندوستانی سمندری سرحد میں چینی جہاز کی موجودگی اور اس سے ساحلی سیکیوریٹی کو درپیش خطرے کے تعلق سے جو خبریں عام ہوئی تھیں اس پر کوسٹ گارڈ نے بتایا ہے کہ یہ ایک جھوٹی خبر تھی اور چینی جہاز ہندوستانی سرحد میں داخل نہیں ہوا تھا ۔

ہوناور کاسرکوڈ میں ماہی گیروں پر زیادتیوں کے خلاف حقوق انسانی کمیشن سے کی گئی شکایت

ہوناور کے کاسرکوڈ ٹونکا میں مجوزہ تجارتی بندرگاہ کی تعمیر کے خلاف احتجاج کرنے والے مقامی ماہی گیروں  پر پولیس کی طرف سے لاٹھی، خواتین سمیت کئی لوگوں کی گرفتاریاں ، جھوٹے مقدمات کی شکل میں جو زیادتیاں ہوئی تھیں، اس کے تعلق سے حقوق انسانی کمیشن سے شکایت کی گئی ہے ۔

بھٹکل میں 'ریت مافیا' کا دربار - تعلقہ انتظامیہ خاموش - عوام بے بس اور لاچار

بھٹکل میں تعلقہ انتظامیہ کی خاموشی کی وجہ سے تعلقہ کے گورٹے، بیلکے، جالی، مُنڈلی نستار، بئیلور جیسے علاقوں میں ساحل سے ریت جیسی سمندری دولت لوٹنے کا کام 'ریت مافیا' کی طرف سے بلا روک ٹوک جاری ہے اور مقامی عوام پریشانی اور بے بسی و لاچاری سے یہ سب دیکھنے پر مجبور ہوگئے ہیں ۔