چامراج نگرمیں راحت رسانی کے کام تیزی کے ساتھ مکمل کئے جائیں ،ضلعی سطح کے جائزہ اجلاس میں ضلع نگران کار وزیر سومنا کی افسروں کو ہدایت

Source: S.O. News Service | Published on 4th September 2022, 11:48 AM | ریاستی خبریں |

چامراج نگر،4؍ستمبر(ایس او نیوز)ضلع میں بارش اور سیلاب سے ہوئے نقصانات کیلئے معاوضے کی فراہمی اور باز آبادکاری کے کام کو تیزی کے ساتھ آگے بڑھانے افسروں کو پوری ذمہ داری کے ساتھ کام کرناہوگا۔یہ ہدایت ریاستی وزیر برائے امکنہ وضلع نگران کار وی سومنانے دی۔

انہوں نے یہاں ضلع پنچایت میٹنگ ہال میں گزشتہ رو ز منعقدہ افسروں کے اجلاس کی صدارت کرتے ہوئے کہاکہ ضلع میں بارش اور سیلاب کی وجہ سے بڑے پیمانے پر تباہی مچی ہوئی ہے،سیلاب سے کئی افراد مشکل میں پھنسے ہوئے ہیں۔کسانوں کا بھی کافی نقصان ہواہے،اسکولی عمارتوں اور دیگر بنیادی سہولتوں سے بھی عوام کو محروم ہوناپڑاہے۔بارش سے ہوئے نقصانات کے تعلق سے تفصیلی جائزہ لے کر اعداد وشمار کے ساتھ تفصیلی رپورٹ پیش کی جائے۔جن کسانوں کی فصلیں تباہ ہوئی ہیں اور جن لوگوں کے گھروں کو نقصان پہنچاہے انہیں معاوضہ فراہم کیاجائے،اس معاملے میں کسی بھی طرح کی لاپروائی ہرگز نہ برتی جائے۔

وزیرموصوف نے کہاکہ پنچایت ڈیولپمنٹ آفیسرس کو متعلقہ علاقوں میں ہوئی تباہی کے بارے میں زیادہ معلومات رہتی ہیں،مختلف محکموں کے افسروں کے ساتھ کوآرڈی نیشن قائم کرکے تفصیلی جانکاری حاصل کی جائے اور مستحقین تک معاوضہ پہنچانے کی کوشش کی جائے۔سومنانے مزید کہاکہ تمام نالوں کی صفائی کی جائے،بقیہ تمام تعمیری کاموں کو تیزی کے ساتھ مکمل کرنے کیلئے ضروری اقدامات کئے جائیں۔ تالابوں میں اگے غیرضروری پودوں کو نکالنے تالابوں کی زمین پر ہوئے قبضوں کو ہٹانے کیلئے پولیس کی مدد حاصل کرکے ٹھوس اقدامات کئے جائیں۔ جن آنگن واڑی مراکز،اسپتالوں،اسکولوں،پرائمری ہیلتھ سنٹرس،ہاسٹل کی عمارتوں کو نقصان پہنچاہے،ان کی مرمت کیلئے بھی فوری اقدامات کئے جائیں۔ضلع اسپتال میں طبی سہولت فراہم کرنے کا ٹھیک طریقے سے انتظام کیاجائے۔میڈیکل کالج کے اسپتال میں مریضوں کیلئے 24X7علاج کی سہولت فراہم کی جائے۔مقامی بلدیاتی اداروں کے افسروں کو چاہئے کہ مقامی منتخب نمائندوں کا تعاون حاصل کرکے وارڈوں کا تفصیلی معائنہ کریں۔

رکن اسمبلی سی پٹارنگاشیٹی نے کہاکہ مسلسل ہوئی بارش اور سورناوتی،چکاہولے آبی ذخیرے بھرجانے کی وجہ سے پانی بہہ گیا اور کئی فصلیں تباہ ہوگئیں۔متعلقہ افسروں کو چاہئے کہ فصلوں کی تباہی کا مکمل سروے کریں اور فوراً معاوضے کی رقم جاری کریں۔رکن اسمبلی آر نریندرا نے کہا کہ بارش کی وجہ سے ان کے علاقے میں گنے،آلواور دیگر کی فصلیں تباہ ہوگئی ہیں اور زیادہ لوڈ والی لاریوں کی آمدورفت کی وجہ سے ساری سڑکیں تباہ ہوچکی ہیں۔رکن اسمبلی این مہیش نے کہاکہ بارش کی وجہ سے سب سے زیادہ نقصان ضلع کے کولیگال تعلقہ میں ہواہے۔یہاں کے سارے تالاب تباہ ہوچکے ہیں،بازآباد کاری کیلئے ٹھوس اقدامات کئے جانے کی ضرورت ہے۔رکن اسمبلی سی ایس نرنجن کمار نے کہاکہ گنڈل پیٹ تعلقہ میں بھی کپاس اور پیاز کی فصلوں کو نقصان ہواہے۔

اس اجلاس میں ڈپٹی کمشنر چارولتا سومل،ضلع پنچایت کی چیف ایگزی کیٹیو آفیسر کے ایم گائتری،سپرنٹنڈنٹ آف پولیس ٹی پی شیوکمار، اڈیشنل ڈپٹی کمشنر ایس کیتیائنی دیوی،اے ایس پی کے ایس سندر راج،اے سی گیتا اور دیگر موجود تھے۔

ایک نظر اس پر بھی

بجٹ 2023: ’کوئی امید نہیں، بجٹ ایک بار پھر ادھورے وعدوں سے بھرا ہوگا‘، سدارمیا کا اظہارِ خیال

یکم فروری کو مرکز کی مودی حکومت رواں مدت کار کا آخری مکمل بجٹ پیش کرنے والی ہے۔ مرکزی وزیر مالیات نرملا سیتارمن کے ذریعہ بجٹ پیش کیے جانے سے قبل بجٹ 2023 کو لے کر کانگریس کے کچھ لیڈران نے اپنے خیالات ظاہر کیے ہیں۔

کرناٹک ہائی کورٹ کی وارننگ، کہا: چیف سکریٹری دو ہفتوں میں لاگو کرائیں حکم

کرناٹک ہائی کورٹ نے منگل کو انتباہ دیا کہ اگر ریاستی حکومت دو ہفتوں کے اندر سبھی گاؤں اور قصبوں میں قبرستان کے لئے زمین فراہم کرانے کے اس کے حکم پر عمل درآمد کرنے میں ناکام رہتی ہے تو وہ چیف سکریٹری کے خلاف توہین عدالت کی کارروائی شروع کرنے پر مجبور ہوجائے گا ۔

منگلورو: محمد فاضل قتل میں ہندوتوا عناصر ملوث ہونے کا دعویٰ - اپوزیشن پارٹیوں نےکیا کیس کی دوبارہ جانچ کامطالبہ 

بی جے پی یووا مورچہ لیڈر پروین نیٹارو قتل کے بدلے میں عناصر کی طرف سے سورتکل میں محمد فاضل کو قتل کرنے کا کھلے عام دعویٰ کرنے والے وی ایچ پی اور بجرنگ دل لیڈر شرن پمپ ویل کے خلاف کانگریس ، جے ڈی ایس اور ایس ڈی پی آئی جیسی اپوزیشن پارٹیوں نے اس قتل کیس کی ازسر نو جانچ کا مطالبہ کیا ...

ٹمکورو میں اشتعال انگیز بیان دینے والے شرن پمپ ویل سمیت دیگر ہندوتوا لیڈروں کے خلاف قانونی کارروائی کا مطالبہ لے کر اے پی سی آر نے ایس پی کو دیا میمورنڈم

حال ہی میں ریاست کرناٹک کے  ٹمکور میں  منعقدہ شوریہ یاترا کے دوران وی ایچ پی لیڈر شرن پمپ ویل نے جو متنازع اور اشتعال انگیز بیان دیا  تھا ، اس پر کٹھن کارروائی کرتے ہوئے اسے گرفتارکرنے کا مطالبہ لے کر  ایسوسی ایشن فار پروٹیکشن آف سوِل رائٹس (اے پی سی آر) کے  ایک وفد نے ٹمکورو ...