میرا پوتا مجرم ہے تو کارروائی ضرور ہونی چاہئے، پرجول ریونا معاملہ پر سابق وزیر اعظم دیوے گوڑا کا بیان

Source: S.O. News Service | Published on 18th May 2024, 5:27 PM | ریاستی خبریں |

بنگلورو،  18/مئی (ایس او نیوز /ایجنسی )جے ڈی ایس کے رکن پارلیمنٹ پرجول ریونا کے خلاف جنسی ہراسانی کے الزامات پر اپنی خاموشی توڑتے ہوئے پارٹی کے سپریمو اور سابق وزیر اعظم ایچ ڈی دیوے گوڈا نے ہفتہ کو کہا کہ اگر قصوروار پایا جاتا ہے تو انہیں اپنے پوتے کے خلاف کارروائی پر کوئی اعتراض نہیں ہے۔ پی ٹی آئی کی رپورٹ کے مطابق، انہوں نے یہ بھی کہا کہ ایک خاتون کے جنسی استحصال اور اغوا کے الزامات کا سامنا کرنے والے ان کے بیٹے اور جے ڈی (ایس) کے ایم ایل اے ایچ ڈی ریونا کے خلاف فرضی اور من گھڑت مقدمات درج کرائے گئے تھے۔ انہوں نے مزید تبصرہ کرنے سے گریز کیا کیونکہ کیس عدالت میں زیر سماعت ہے۔

نامہ نگاروں سے خطاب کرتے ہوئے ایچ ڈی دیوے گوڑا (92) نے کہا، ’’میں ریونا کے حوالے سے عدالت میں چل رہی چیزوں پر تبصرہ نہیں کرنا چاہتا۔ پرجول ریونا بیرون ملک چلے گئے ہیں، اس سلسلے میں کمارسوامی (گوڑا کے دوسرے بیٹے اور کرناٹک کے سابق وزیر اعلیٰ) نے ہمارے خاندان کی جانب سے کہا ہے کہ ملک کے قانون کے مطابق کارروائی کرنا حکومت کا فرض ہے۔ اس (جنسی استحصال کیس) میں بہت سے لوگ ملوث ہیں، میں کسی کا نام نہیں لینا چاہتا۔ کمارسوامی نے کہا ہے کہ اس معاملے میں ملوث تمام لوگوں کے خلاف کارروائی ہونی چاہیے اور متاثرہ خواتین کے ساتھ انصاف ہونا چاہیے اور انھیں معاوضہ ملنا چاہیے۔

ایچ ڈی دیوے گوڑا نے حال ہی میں اپنی سالگرہ نہ منانے کے اپنے فیصلے کا اعلان کیا تھا اور اپنے خیر خواہوں اور پارٹی کارکنوں سے درخواست کی تھی کہ وہ جہاں بھی ہوں انہیں مبارکبادیں بھیجیں۔ پرجول ریونا (33) کو خواتین کے جنسی استحصال کے کئی الزامات کا سامنا ہے۔ اس معاملے نے سیاسی طوفان کھڑا کر دیا ہے۔ حکمراں کانگریس اور بی جے پی-جے ڈی (ایس) کے درمیان الزامات اور جوابی الزامات کا دور جاری ہے۔ پرجول مبینہ طور پر 27 اپریل کو جرمنی کے لیے روانہ ہوا تھا اور ابھی تک مفرور ہے۔ ان کے خلاف انٹرپول بلیو کارنر نوٹس جاری کر دیا گیا ہے۔

وہ ہاسن لوک سبھا حلقہ سے بی جے پی-جے ڈی (ایس) اتحاد کے مشترکہ امیدوار تھا، جہاں 26 اپریل کو ووٹ ڈالے گئے تھے۔ یہ پوچھے جانے پر کہ کیا ان کے خاندان کو بدنام کرنے اور سیاسی طور پر بدنام کرنے کی کوئی سازش تھی، دیوے گوڈا نے کہا، ’’یہ سچ ہے۔ جو کچھ بھی ہوا، اس میں بہت سے لوگ ملوث ہیں، میں نام نہیں لوں گا۔ کمارسوامی بتائیں گے کہ کیا کارروائی کی ضرورت ہے۔‘‘

ایچ ڈی دیوے گوڑا نے کہا، ’’ہم نے میڈیا میں دیکھا ہے کہ دیوراجے گوڑا نے کیا کہا ہے۔ کمارسوامی، پارٹی کے ریاستی صدر کے طور پر، اس سب پر سرگرم ردعمل ظاہر کر رہے ہیں، وہ بولیں گے، میں اس وقت نہیں بولوں گا۔ میں نے لوک سبھا انتخابات کے لیے مہم چلائی ہے اور 4 جون کو نتائج کے اعلان کے بعد میں آپ (میڈیا) سے ملوں گا۔‘‘

دیوے گوڑا نے اپنے گھر کے قریب ڈیرے ڈالے ہوئے میڈیا والوں سے بھی نکل جانے کی درخواست کی۔ انہوں نے کہا، ’’میں اس سلسلے میں آپ کے مالکان (میڈیا کمپنیوں کے مالکان) سے بھی اپیل کرتا ہوں۔‘‘

ایک نظر اس پر بھی

کرناٹک کے سابق وزیر اعلیٰ یڈ یورپا کے خلاف غیر ضمانتی گرفتاری وارنٹ جاری

کرناٹک کی ایک عدالت نے جمعرات کو سابق وزیر اعلی اور سینئر بی جے پی لیڈر بی ایس یڈیورپا کے خلاف POCSO کیس میں ناقابل ضمانت گرفتاری وارنٹ جاری کیا۔ یدی یورپا کے خلاف بچوں کے تحفظ سے متعلق جنسی جرائم ایکٹ (POCSO) کیس کی جانچ کر رہے کرمنل انویسٹی گیشن ڈیپارٹمنٹ (سی آئی ڈی) نے پہلے انہیں ...

کرناٹک کے سابق وزیر اعلیٰ یڈی یورپا کو سی آئی ڈی کا نوٹس، پوسکو معاملے میں تفتیش کے لیے طلب

سی آئی ڈی نے بی جے پی کے سینئر لیڈر اور کرناٹک کے سابق وزیر اعلیٰ بی ایس یڈ ی یورپا کو ان کے خلاف درج پروٹیکشن آف چلڈرن فرام سیکسوئل افینس ایکٹ (پوسکو) کیس میں تفتیش کے لیے طلب کیا ہے۔

سابقہ حکومت کی نجکاری پالیسی پر کانگریس نے وزارتِ اسٹیل کے نئے وزیر ایچ ڈی کمار سوامی سے پوچھے 5 سوالات

نئی تشکیل شدہ این ڈی اے حکومت میں ایچ ڈی کمار سوامی کو اسٹیل کی وزارت دی گئی ہے۔ ان کے اس عہدے پر فائز ہونے کے بعد کانگریس نے ان سے اس وزارت سے متعلق 5 سوالات پوچھے ہیں۔ کانگریس جنرل سکریٹری جے رام رمیش نے سوشل میڈیا پلیٹ فارم ’ایکس‘ کے اپنے اکاؤنٹ پر ایچ ڈی کمار سوامی سے یہ ...

کرناٹک میں کانگریس کی کارکردگی میں مزید بہتری کی ضرورت: ڈی کے شیوکمار

کانگریس کے زیر اقتدار کرناٹک کے نائب وزیر اعلیٰ ڈی کے شیوکمار نے کرناٹک میں کانگریس کی کارکردگی پر عدم اطمینان کا اظہار کیا ہے۔ انہوں نے کہا کہ کرناٹک میں انتخابی نتائج خطرے کی گھنٹی ہیں اور اس میں بہتری کی ضرورت ہے۔ خیال رہے کہ کرناٹک میں کانگریس کو 28 میں سے محض 9 سیٹیں ہی حاصل ...

جنسی استحصال و فحش ویڈیو معاملہ: عدالت نے پرجول ریونا کو 14 دنوں کے لیے عدالتی حراست میں بھیجا

کرناٹک کے فحش ویڈیو معاملے میں پھنسے جنتا دل سیکولر کے معطل لیڈر پرجول ریونا کو 42ویں اے سی ایم ایم کورٹ نے آج 14 دنوں کی عدالتی حراست میں بھیج دیا۔ یعنی اب وہ 24 جون تک جیل میں رہیں گے۔ اس معاملے کی جانچ کر رہی ایس آئی ٹی نے پیر کی صبح پرجول ریوناسے اپنی پوچھ تاچھ مکمل کر لی، اس ...