کسانوں کے احتجاج کے پیش نظر ہائی الرٹ پر دہلی پولیس، سیکورٹی سسٹم کو مضبوط کیا گیا

Source: S.O. News Service | Published on 11th February 2024, 9:53 PM | ملکی خبریں |

نئی دہلی،11/فروری (ایس او نیوز/ایجنسی) دہلی پولیس 13 فروری کو منعقد ہونے والے 'دہلی چلو مارچ' کے پیش نظر ہائی الرٹ موڈ میں آ گئی ہے۔ ہریانہ اور پنجاب کے کسان دہلی کی طرف بڑھ رہے ہیں اور دہلی میں ایک بار پھر مارچ کی تیاری کر رہے ہیں۔ اس صورتحال میں دہلی پولیس نے بھی اپنی کمر کس لی ہے۔ دہلی پولیس کی کوشش ہے کہ وہ ہزاروں کی تعداد میں آنے والے کسانوں کو دہلی کی سرحد پر داخل ہونے سے پہلے ہی روک دے۔

اس کے لیے پولیس نے باڑ لگانے، کنٹینرز اور کرین کے ذریعے اپنی تیاری شروع کر دی ہے۔ اگر کسان کسی طرح سے ہریانہ اور پنجاب کو پار کر کے دہلی کی سرحد میں داخل ہونے کی کوشش کرتے ہیں تو پولیس کرین اور کنٹینرز سے سرحد کو مہربند کرکے انہیں وہیں روکنے کی کوشش کرے گی۔ احتجاج کے لیے 15 سے 20 ہزار کسان 2000 سے 2500 ٹریکٹروں کے ساتھ دہلی آ سکتے ہیں۔ احتجاج کے لیے دہلی میں پنجاب، ہریانہ، راجستھان، اتر پردیش، کیرالہ اور کرناٹک سے کسان آ سکتے ہیں۔

دہلی جانے کے مارچ کے سلسلے میں کسان تنظیموں نے 100 سے زائد میٹنگز کی ہیں۔ اس کے ساتھ ہی، کچھ مخالف پارٹیاں بھی احتجاج میں شرکت کر سکتی ہیں۔ ایسی صورتحال میں، غیر سماجی عناصر بھی احتجاج میں شامل ہو کر قانونی و انتظامی نظام کو خراب کر سکتے ہیں۔ کسان کار، موٹر سائیکل، میٹرو، ٹرین یا بس کے ذریعے دہلی پہنچ سکتے ہیں۔

یہی نہیں، بلکہ بعض کسان خفیہ طور پر آ کر وزیر اعظم، وزیر داخلہ، وزیر زراعت اور بی جے پی کے سینئر رہنماؤں کے گھروں کے باہر جمع ہو کر مظاہرہ بھی کر سکتے ہیں۔ دہلی میں داخل ہونے کے لئے کسان بچوں اور خواتین کا سہارا لے سکتے ہیں۔ یہ بھی قابل ذکر ہے کہ پچھلی بار کسان تحریک 26 نومبر 2020 سے 9 دسمبر 2021 تک جاری رہی تھی۔

دہلی پولیس 13 فروری کو ہونے والے کسان احتجاج کے پیش نظر اپنی تیاری مکمل کر رہی ہے۔ اس دوران پولیس کی جانب سے موک ڈرل بھی کی جا رہی ہے۔ دراصل، پولیس کے جوان ایک قطار میں کھڑے ہو کر فائرنگ کی مشق کر رہے ہیں۔ دہلی پولیس، کسانوں کو روکنے کے لیے اپنی کمر کس چکی ہے اور اپنی تیاریوں کو پورا کر رہی ہے۔ پولیس کی اس مشق سے لوگوں کو کچھ مشکلات کا سامنا بھی کرنا پڑ رہا ہے، آنسو گیس کے گولوں کی وجہ سے آس پاس پھیلے دھوئیں سے لوگوں کی آنکھوں میں جلن جیسی شکایات آ رہی ہیں۔

ایک نظر اس پر بھی

مہاراشٹرا کے طلبہ توجہ دیں؛ بارہویں سائنس کے بعدڈائریکٹ سیکنڈ ایئر انجیئنرنگ ڈپلومہ کورسس میں داخلے

بارہویں سائنس میں کامیاب طلباء و طالبات کو یہ اطلاع دیجاتی ہے کہ ریاست مہاراشٹرا کی تمام پولی ٹیکنک کالجوں میں ڈائریکٹ سیکنڈ ایئر انجینئرنگ ڈپلومہ کورسیس (پولی ٹیکنیک) میں داخلہ کے لئے رجسٹریشن کا آغاز ہو چکا ہے

سابق ایم ایل سی محمد اقبال کے1097 کروڑ روپے کے اثاثوں کوای ڈی نے ضبط کیا

انفورسمنٹ ڈائریکٹوریٹ (ای ڈی) نے سہارنپور میں غیر قانونی کانکنی کے معاملے میں بڑی کارروائی کی ہے۔ ای ڈی نے بی ایس پی کے سابق ایم ایل سی محمد اقبال کی گلوکل یونیورسٹی کی 121 ایکڑ زمین اور تمام عمارتوں کو ضبط کر لیا ہے۔ بی ایس پی کے سابق ایم ایل سی محمد اقبال کی ضبط کی گئی جائیداد کی ...

لوک سبھا اسپیکر الیکشن کے لئے انڈیا الائنس کی حکمت عملی

لوک سبھا انتخابات کے بعد ایک بار پھر مرکز میں مودی حکومت بن گئی ہے۔ اب لوک سبھا کے اسپیکر کے لیے انتخابات ہونے ہیں، اس کو لے کر سیاست شروع ہو گئی ہے۔ ذرائع کے مطابق اپوزیشن جماعت اسپیکر کے انتخاب کے لیے اپنا امیدوار کھڑا کرسکتی ہے۔ اگر ڈپٹی اسپیکر کا عہدہ اپوزیشن کو دیا گیا تو ...

طلبا تنظیم این ایس یو آئی نے نیٹ کا امتحان دوبارہ کرانے کا کیا مطالبہ، این ٹی اے پر فوری پابندی لگانے کی اپیل

این ایس یو آئی (نیشنل اسٹوڈنٹس یونین آف انڈیا) کے قومی صدر ورون چودھری کی قیادت میں آج یونین دفتر سے جنتر منتر تک پرامن مشعل مارچ منعقد کیا گیا۔ اس مارچ کا مقصد حال ہی میں ہوئے این ٹی اے اور نیٹ امتحان گھوٹالہ کے خلاف بیداری پیدا کرنا اور احتجاج درج کرنا تھا، جس نے پورے ملک ...

نیٹ پرچہ سوالات افشاء کیس، امتحان سے ایک دن پہلے پیپر ملنے کا انکشاف

بہار پولیس کے معاشی جرائم یونٹ (ای او یو) نے جو نیشنل ایلجبلیٹی کم انٹرنس ٹسٹ (نیٹ۔ یوجی) 2024ء میں پرچہئ سوالات کے افشاء کی تحقیقات کررہی ہے، ہفتہ کے روز 11 امیدواروں کو نوٹسیں روانہ کی ہیں، جن پر اس جرم میں ملوث ہونے کا شبہ ہے۔