پرفل پٹیل کے خلاف بدعنوانی کا مقدمہ بند کیے جانے پر کانگریس نے مودی حکومت کو کٹہرے میں کھڑا کیا

Source: S.O. News Service | Published on 31st March 2024, 12:54 PM | ملکی خبریں |

نئی دہلی، 31/ مارچ (ایس او نیوز /ایجنسی)  سی بی آئی کے ذریعہ این سی پی لیڈر پرفل پٹیل کے خلاف بدعنوانی کا مقدمہ بند کرنے کو لے کر کانگریس نے مودی حکومت کو کٹہرے میں کھڑا کر دیا ہے۔ کانگریس لیڈر پون کھیڑا نے آج ایک بیان میں کہا کہ بی جے پی جن لیڈروں پر کروڑوں کے گھوٹالے کا الزام لگاتی ہے، انھیں بی جے پی یا این ڈی اے اتحاد میں شامل کرانے کے بعد گھوٹالے کا مقدمہ واپس لے لیے جاتے ہیں۔ انھوں نے مزید کہا کہ بی جے پی نے ہی پرفل پٹیل پر ایئر انڈیا گھوٹالہ کا الزام عائد کیا تھا اور اب جبکہ پٹیل این ڈی اے میں شامل ہو گئے ہیں تو گھوٹالے کا معاملہ بند کر دیا گیا۔

پون کھیڑا نے یہ بیان نئی دہلی واقع کانگریس ہیڈکوارٹر میں پریس کانفرنس کے دوران دیا۔ اس موقع پر انھوں نے ٹیبل پر واشنگ مشین بھی رکھی، جس پر ’بی جے پی واشنگ مشین‘ لکھا ہوا تھا۔ انھوں نے ’مودی واشنگ پاؤڈر‘ لکھا ہوا پمفلٹ بھی دکھایا۔ اس دوران انھوں نے طنز کستے ہوئے بی جے پی واشنگ مشین کی قیمت 8552 کروڑ روپے بتائی اور کہا کہ بی جے پی کو الیکٹورل بانڈ کے ذریعہ یہ مشین ملی ہے۔

میڈیا سے مخاطب ہوتے ہوئے پون کھیڑا نے کہا کہ بی جے پی کے پاس ایسی واشنگ مشین ہے جس میں 10 سال پرانا کیس بھی ڈالو تو ملزم بے داغ نکلتا ہے۔ مشین کے ساتھ ساتھ یہ کمال مودی واشنگ پاؤڈر کا بھی ہے۔ این سی پی لیڈر پرفل پٹیل اس کے زندہ جاوید مثال ہیں۔ بی جے پی نے ان پر ایئر انڈیا گھوٹالہ کا الزام لگایا تھا۔ کانگریس-یو پی اے حکومت کے خلاف بی جے پی نے 2014 لوک سبھا انتخاب کے وقت یہ الزام عائد کیا تھا اور کہا تھا کہ یہ پورا گھوٹالہ تقریباً 30 ہزار کروڑ روپے کا ہے۔ اس وقت کے سی اے جی ونود رائے نے بھی عجیب و غریب تبصرے کیے تھے۔ اس سلسلے میں سی بی آئی نے پرفل پٹیل کے خلاف 2017 میں بدعنوانی کا مقدمہ بھی درج کیا تھا۔ اتنا ہی نہیں، 2019 میں بی جے پی نے پرفل پٹیل کے خلاف کچھ گھناؤنے الزامات لگاتے ہوئے دعویٰ کیا تھا کہ وہ 1993 کے ممبئی بم دھماکوں کے ملزم اقبال مرچی کے ساتھ ایک ملکیت ڈیل میں شامل تھے۔ اب جبکہ کچھ ماہ قبل پرفل پٹیل این سی پی کو توڑ کر مہاراشٹر میں بی جے پی اتحاد میں شامل ہوئے تو ان کے سبھی داغ صاف ہو گئے۔ اب پرفل پٹیل کے خلاف 2017 میں درج ہوئے بدعنوانی کے مقدمے کو سی بی آئی نے بند کر دیا۔

پون کھیڑا نے کہا کہ یہ محض ایک نام نہیں ہے،بلکہ ایسی 21 مثالیں ہیں جنھیں بی جے پی کے ذریعہ ان کے خلاف بدعنوانی اور غیر قانونی عمل کرنے کے الزام لگانے کے بعد پاک صاف کر دیا گیا ہے۔ اس کی وجہ صاف ہے کہ یا تو وہ بی جے پی میں شامل ہو گئے یا وہ این ڈی اے اتحاد میں شامل ہو گئے۔ ان میں ہیمنت بسوا سرما، نارائن رانے، اجیت پوار، حسن مشرف، چھگن بھجبل، اشوک چوہان سمیت کئی دیگر لیڈران شامل ہیں۔

کانگریس لیڈر کا کہنا ہے کہ مودی حکومت نے ای ڈی، آئی ٹی، سی بی آئی سمیت سبھی نام نہاد خود مختار اداروں کا استعمال اپنے سیاسی فوائد کے لیے ایک اسلحہ کی شکل میں کیا ہے۔ چاہے وہ فرموں سے الیکٹورل بانڈ کی وصولی کے لیے ای ڈی کا غلط استعمال ہو، یا پھر 30 سال پرانے نوٹس کے ذریعہ سے اہم اپوزیشن پارٹیوں کو پریشان کرنے کے لیے انکم ٹیکس محکمہ کا استعمال ہو۔ بی جے پی اداروں کو کمزور کرنے میں عادتاً مجرم بن گئی ہے۔

ایک نظر اس پر بھی

بی جے پی نے الیکٹورل بانڈ کے ذریعے دنیا کا سب سے بڑا گھوٹالہ کیا، وزیر اعظم بدعنوانی کے چیمپین ہیں! راہل گاندھی

راہل گاندھی نے کانگریس اور سماجوادی پارٹی کی مشترکہ پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے وزیر اعظم نریندر مودی کو بدعنوانی کا چیمپین قرار دیا۔ انہوں نے کہا کہ بی جے پی نے الیکٹورل بانڈ کے ذریعے بھتہ خوری کی اور دنیا کا سب سے بڑا گھوٹالہ انجام دیا۔ راہل گاندھی نے سوال کیا کہ اگر ...

بی جے پی اپنی ناکامیوں سے توجہ بھٹکانے کے لیے مذہب کی سیاست کر رہی، سچن پائلٹ نے الیکشن کمیشن پر بھی اٹھائے سوال

کانگریس لیڈر سچن پائلٹ نے جموں و کشمیر میں آج انتخابی تشہیر کے دوران بی جے پی حکومت کو تو تنقید کا نشانہ بنایا ہی، الیکشن کمیشن کو بھی کٹہرے میں کھڑا کر دیا۔ انھوں نے منگل کے روز ایک ریلی سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ جب اپوزیشن پارٹیوں کے اکاؤنٹس پر لین دین سے متعلق روک لگائی گئی ...

بی جے پی و آر ایس ایس آئین کو تباہ کرنا چاہتی ہیں جبکہ کانگریس اسے بچانے کی کوشش کر رہی ہے: راہل گاندھی

کیرالہ کے وائناڈ میں کانگریس کے لیڈر راہل گاندھی نے بی جے پی پر سخت حملہ کرتے ہوئے کہا کہ بی جے پی و آر ایس ایس ملک کے آئین کو ختم کرنے کی کوشش کر رہی ہیں جبکہ کانگریس اسے بچانے کی کوشش میں مصروف ہے۔ یہ بیان راہل گاندھی روڈ شو کے دوران دیا جس کو سن کر عوام پورے جوش میں دکھائی دی ...

لوک سبھا انتخابات 2024: کانگریس نے امیدواروں کی نئی فہرست جاری

کانگریس نے لوک سبھا انتخاب کے پیش نظر اپنے امیدواروں کی ایک نئی فہرست جاری کر دی ہے۔ اس فہرست میں جھارکھنڈ کی تین لوک سبھا سیٹوں پر امیدواروں کے ناموں کا اعلان کیا گیا ہے۔ جاری فہرست کے مطابق گوڈا سے دیپکا پانڈے سنگھ، چترا سے کرشنانند ترپاٹھی اور دھنباد سے انوپما سنگھ کو ...

مرکزی وزارت داخلہ کی دوسری منزل پر آتش زدگی، زیروکس مشین، کمپیوٹر اور دیگر دستاویزات خاکستر

آگ لگنے کے واقعات یوں تو ہوتے ہی رہتے ہیں مگر جب حکومت کے دفاتر میں آگ لگنے لگے تو معاملہ کچھ زیادہ ہی سنگین ہو جاتا ہے۔ آتش زدگی کا ایسا ہی ایک واقعہ دہلی میں مرکزی وزارت داخلہ کے دفتر میں پیش آیا ہے۔ اس حادثے میں کسی شخص کے متاثر ہونے کی تو کوئی خبر نہیں ہے البتہ زیروکس ...

تیجسوی یادو کا وزیراعظم پر سخت حملہ؛ 10 سالوں میں مودی جی نے صرف غریبی، بے روزگاری، مہنگائی اور جملہ دیا

لوک سبھا انتخاب سے قبل بیان بازیوں نے رفتار پکڑ لی ہے۔ برسراقتدار طبقہ اپنی خوبیاں بیان کر رہا ہے اور اپوزیشن لیڈران حکومت کی ناکامیوں و عوام مخالف پالیسیوں کو عوام کے سامنے رکھ رہے ہیں۔ اس درمیان تیجسوی یادو نے پٹنہ میں مرکز کی مودی حکومت پر آج زبردست حملہ کیا۔