سابقہ حکومت کی نجکاری پالیسی پر کانگریس نے وزارتِ اسٹیل کے نئے وزیر ایچ ڈی کمار سوامی سے پوچھے 5 سوالات

Source: S.O. News Service | Published on 12th June 2024, 5:32 PM | ریاستی خبریں | ملکی خبریں |

نئی دہلی، 12/ جون (ایس او نیوز /ایجنسی) نئی تشکیل شدہ این ڈی اے حکومت میں ایچ ڈی کمار سوامی کو اسٹیل کی وزارت دی گئی ہے۔ ان کے اس عہدے پر فائز ہونے کے بعد کانگریس نے ان سے اس وزارت سے متعلق 5 سوالات پوچھے ہیں۔ کانگریس جنرل سکریٹری جے رام رمیش نے سوشل میڈیا پلیٹ فارم ’ایکس‘ کے اپنے اکاؤنٹ پر ایچ ڈی کمار سوامی سے یہ سوال کنّڑ، انگریزی اور ہندی تینوں زبانوں میں کیے ہیں۔

کانگریس کے جنرل سکریٹری نے کہا ہے کہ ایچ ڈی کمارسوامی اس زنگ آلود حکومت میں اسٹیل کے نئے وزیر ہیں، ان سے یہ 5 سوالات پوچھے جا رہے ہیں۔

1۔ ایک تہائی وزیر اعظم کی سابقہ انتظامیہ نے راشٹریہ اسپات نگم لمیٹڈ (آر آئی این ایل)، جسے عام طور پر ’ویزاگ اسٹیل پلانٹ‘ کہا جاتا ہے، وزیر اعظم کے دوستوں کو فروخت کرنے کی تجویز پیش کی ہے۔ 1 لاکھ سے زیادہ افراد اپنی روزی روٹی کے لیے ویزاگ اسٹیل پلانٹ پر انحصار کرتے ہیں۔ جنوری 2021 میں اقتصادی امور کی کابینہ کمیٹی کے ذریعے آر آئی این ایل  اور اس کے مشترکہ منصوبوں و ذیلی اداروں کی 100 فیصد نجکاری کی منظوری کے بعد آر آئی این ایل یونین تین سالوں سے پرامن احتجاج کر رہی ہیں۔ اسٹیل پلانٹ کے کارکنان کی رپورٹ ہے کہ جان بوجھ کر حکومتی لاپرواہی کے ذریعے ایک ایسے اسٹیل پلانٹ کو بڑھتے خسارے میں ڈھکیلا جا رہا ہے جو ایک وقت میں مستحکم ہوا کرتا تھا۔ کیا جناب کمارسوامی تحریری وعدہ کریں گے کہ وہ ویزاگ اسٹیل پلانٹ کو ایک تہائی وزیر اعظم کے صنعتکار دوستوں کو نہیں بیچیں گے؟

2۔  2019 میں ایک تہائی وزیر اعظم کی سابقہ ​​انتظامیہ نے سیلم اسٹیل پلانٹ میں سرمایہ کاری کرنے کا فیصلہ کیا تھا۔ جلد ہی تقریباً 2000 لوگوں کی ایک بڑی ریلی اس مخصوص اسٹیل یونٹ کی نجکاری کے خلاف احتجاج کے لیے سڑکوں پر اتر آئی۔ ریلی میں مزدور، ان کے خاندان کے افراد اور بہت سے کسان شامل تھے جنہوں نے پلانٹ کی تعمیر کے لیے اپنی زمینیں قربان کر دی تھیں۔ پلانٹ تقریباً 25 دیہاتوں پر محیط ہے جن میں سے 18 یا 19 یونٹ تعمیر کے بعد سے بند ہوگیا ہے۔ مزدوروں نے الزام لگایا کہ پلانٹ کو جان بوجھ کر بدانتظامی کا نشانہ بنایا جا رہا ہے اور اسٹیل اتھارٹی آف انڈیا لمیٹڈ کی قیادت حکمراں پارٹی کے ترجمان تک محدود ہوگیا ہے۔ مرکز اب تک یونٹ کو فروخت کرنے میں ناکام رہا ہے۔ کیا جناب کمارسوامی اس یونٹ کی نجکاری کو آگے بڑھائیں گے؟

3۔ ایک تہائی وزیر اعظم نے ڈاکٹر منموہن سنگھ کی حکومت کے ذریعے شروع کیے گئے نگرنار اسٹیل پلانٹ کو اکتوبر 2023 میں بڑے دھوم دھام سے عوام کو منسوب کیا تھا۔ بَستر کے لوگوں کو امید تھی کہ 23,800 کروڑ روپے کی لاگت سے تعمیر ہونے والا یہ عظیم الشان پلانٹ بَستر کی ترقی میں تیزی لائے گا اور مقامی نوجوانوں کے لیے روزگار کے ہزاروں مواقع پیدا کرے گا۔ سچائی یہ ہے کہ ایک تہائی وزیر اعظم 2020 سے اس پلانٹ کی نجکاری کا منصوبہ بنا رہے ہیں، جب انہوں نے اپنے ساتھیوں کو 50.79 فیصد کی اکثریتی حصے داری فروخت کرنے کا فیصلہ کیا۔ گزشتہ سال اسمبلی انتخابات سے پہلے وزیر داخلہ امت شاہ بَستر آئے اور وعدہ کیا کہ پلانٹ کی نجکاری نہیں کی جائے گی۔ کیا جناب کمارسوامی اس وعدے پر پورا اتریں گے یا وہ اس اسٹیل پلانٹ کو ایک تہائی وزیر اعظم کے قریبی دوستوں اور فنانسروں کو بیچ دیں گے؟

4۔ اکتوبر 2022 سے ایک تہائی وزیر اعظم کی سابقہ ​​انتظامیہ نے ہمارے باہمی آبائی ریاست کرناٹک کے بھدراوتی میں ’سیل‘ کے ویشویشریا آئرن اینڈ اسٹیل پلانٹ کو بند کرنے کا آغاز کیا۔ اس کے بعد حکومت نے پارلیمنٹ میں یہ عذر پیش کیا کہ پلانٹ کے پاس کرناٹک میں لوہے کا کوئی ذریعہ نہیں ہے - یہ ایک بڑا جھوٹ ہے کیونکہ بھدراوتی بلاری سے 250 کلومیٹر سے بھی کم فاصلے پر ہے۔ دراصل اکتوبر 2011 میں ’سیل‘ کو کان کنی کی لیز الاٹ کی گئی تھی۔ کیا جناب کمارسوامی پلانٹ کو بند کرنے کی کوشش کرنے کے بجائے اسے بحال کرنے کے لیے فوری قدم اٹھائیں گے؟

5۔ ایک تہائی وزیر اعظم کی سابقہ ​​انتظامیہ نے درگاپور میں الائے اسٹیل پلانٹ کو فروخت کرنے کی کوشش کی تھی۔ اس کے بعد سے ایسا لگتا ہے کہ یہ ملتوی ہو گیا ہے لیکن ایک تہائی وزیر اعظم کے ذریعے بار بار کیے گئے الٹ پھیر کی وجہ سے درگاپور کے لوگوں کو اس پروجیکٹ کے مستقبل کے لیے حکومت کے منصوبوں پر بہت کم اعتماد ہے۔ کیا جناب کمارسوامی درگاپور اور مغربی بنگال کے لوگوں کو یقین دلاسکتے ہیں کہ وہ اسٹیل پلانٹس کی نجکاری کی نگرانی نہیں کریں گے؟

ایک نظر اس پر بھی

بینگلورو: دھوتی میں ملبوس کسان کو داخلہ نہ دینے کا معاملہ : حکومت نے دیا سات دن کے لئے مال بند کرنے کا حکم 

دو دن قبل بینگلورو کے ایک مال میں ایک عمر رسیدہ کسان اور اس کے اہل خانہ  کو اس وجہ سے داخلہ دینے سے انکار کیا گیا تھا کہ وہ کسان دھوتی میں ملبوس تھا ۔ اس واقعے کی ویڈیو کلپ وائرل ہونے کے بعد اس کے خلاف آوازیں اٹھنے لگی تھیں اور مال کے خلاف کارروائی کا مطالبہ کیا جا رہا تھا ۔ 

کرناٹک پرائیویٹ فرموں میں کناڈیگاس کے لیے 100فیصد کوٹہ لازمی کرنے والا بل منظور

کرناٹک کی کابینہ نے ایک بل کو منظور کیا ہے جس میں کننڈیگاس کو گروپ سی اور ڈی کے عہدوں کے لیے نجی شعبے میں 100 فیصد ریزرویشن لازمی قرار دیا گیا ہے،  وزیر اعلیٰ سدرامیا نے کہا۔یہ فیصلہ پیر کو ہونے والے کابینہ کے اجلاس میں کیا گیا۔

اگر میرے بیٹے نے کوئی جرم کیا ہے تو پھانسی دے دو ؛پرجول ریونا کے والد ایچ ڈی ریونا کا بیان

جے ڈی ایس ایم ایل اے اور سابق وزیر ایچ ڈی۔ ریونا نے کہا ہے کہ ان کے بیٹے پرجول ریوانا، جو کئی خواتین کے ساتھ جنسی زیادتی کے الزامات کا سامنا کر رہے ہیں، اگر اس نے کوئی جرم کیا ہے تو اسے پھانسی دی جانی چاہیے۔

کووڈ میں شرح اموات ظاہر کرنے والی رپورٹس غیر مصدقہ اور گمراہ کن

صحت اور خاندانی بہبود کی مرکزی وزارت نے کہا ہے کہ سائنس جریدے سائنس ایڈوانسز میں شائع مطالعہ سے کووڈ کی مدت کے دوران 2020 میں سب سے زیادہ اموات کو ظاہر کرنے والی رپورٹ غیر مصدقہ اور ناقابل قبول اندازوں پر مبنی ہیں۔

علاقائی سیاسی پارٹیوں کمائی اور خرچ کی رپورٹ جاری

ایسوسی ایشن فار ڈیموکریٹک ریفارمز نے اپنی حالیہ جاری کردہ رپورٹ میں ملک کی 57 علاقائی جماعتوں میں سے 39 علاقائی جماعتوں کی آمدنی اور اخراجات کی رپورٹ جاری کی ہے۔ رپورٹ میں بتایا گیا ہے کہ سال 2022-23 کی آمدنی اور اخراجات کے لحاظ سے کون سی پارٹی اوپر اور نیچے ہے۔ کس نے کتنا عطیہ وصول ...

جیتن سہنی قتل کے سلسلے میں مزید 3 ملزمان گرفتار، ایس ایس پی کے مطابق جائے وقوعہ سے اہم دستاویزات برآمد

  وکاسشیل انسان پارٹی (وی آئی پی) کے سربراہ مکیش سہنی کے والد کے قتل کیس میں پولیس نے مزید 3 ملزمان کو گرفتار کیا ہے۔ یہ گرفتاری کلیدی ملزم کاظم انصاری کی نشان دہی پر کی گئی ہے۔ دربھنگہ کے سینئر سپرنٹنڈنٹ آف پولیس جگوناتھ ریڈی نے یہ اطلاع دی۔

آئی اے ایس پوجا کھیڈکر تنازعہ کے درمیان یو پی ایس سی کے چیئرمین منوج سونی عہدے سے مستعفی

  یونین پبلک سروس کمیشن (یو پی ایس سی) کے چیئرمین منوج سونی نے اپنے عہدے سے استعفیٰ دے دیا ہے۔ دلچسپ بات یہ ہے کہ انہوں نے اپنی مدت ملازمت پوری ہونے سے قبل ہی اپنا استعفی صدر کو ارسال کر دیا ہے۔

کیجریوال جان بوجھ کر کم کیلوری والا کھانا لے رہے ہیں، ایل جی کا الزام، عآپ کا شدید ردعمل

عام آدمی پارٹی کے رکن پارلیمنٹ سنجے سنگھ نے دہلی کے وزیر اعلی اروند کیجریوال کی صحت سے متعلق لیفٹیننٹ گورنر ونے سکسینہ کے چیف سکریٹری کو لکھے گئے خط پر ردعمل ظاہر کیا ہے۔ ایل جی کو نشانہ بناتے ہوئے سنجے سنگھ نے کہا کہ ایل جی یہ کیا مذاق کر رہے ہیں؟ کیا کوئی آدمی رات کو شوگر کم ...

نیٹ پر سپریم کورٹ کے حکم کے بعد این ٹی اے نے آن لائن اپ لوڈ کئے مرکز اور شہر وار نتائج

نیٹ پر سپریم کورٹ کے حکم کے بعد این ٹی اے نے نیٹ یو جی طلباء کے مرکز اور شہر وار نتائج کو آن لائن اپ لوڈ کر دیا ہے۔ نتائج اپلوڈ کرنے کے لئے ہفتہ کی دوپہر 12 بجے تک کا وقت دیا گیا تھا۔ تاہم، سی جے آئی ڈی وائی چندرچوڑ، جسٹس جے بی پاردیوالا اور جسٹس منوج مشرا کی بنچ نے واضح کیا تھا کہ ان ...